Chapter: 3: سُوۡرَةُ آل عمران


الٓـمٓ .١

  • Alif: The First Letter, not consonant, of Arabic alphabet ( أبجدية عربية‎): it has no speech sound and is not conjoined with the succeeding consonants of a word or with the following word;

  • Laa'm and Mee'm: Two consonants of Arabic alphabet conjoined/stitched together and both have above them ancillary glyph  -prolongation sign called "Madda" which means and extends - stretches the sound value of the consonant to which it is added. The prolongation mark [Madda] reflects that the following joined letter is still causing pause as consonant لـ ends with still resulting in natural pause in its pronunciation "Laa'm". Likewise, the consonant has the prolongation sign suggesting to pronounce it with stretched sound to make the last still letter vivid in sound ending in natural pause "Mee'm-ميم ". Prolongation sign will also appear when the following consonant with vowel is delicate "Hamza, ء" which can distinctly and audibly pronounced only when the preceding letter is pronounced elongated. Arabic language equally cares for the convenience of the speaker and the listener. Please remember that the prolongation sign is not the equivalent to nor it represents a hamza followed by Alif.

  • عربی زبان کے حروف ھجاء [تہجی،ابجد] الف،لام اور میم ۔لام اور میم کو یکجا کر کے اُن دونوں پر مدّا [طوالت]کا نشان
    [اِن سے یہ اظہارہوتا ہے کہ اِس کتاب کی عربی زبان کی تحریر حروف اور نشانوں پر مشتمل ہے اور یہ کہ عربی حروف کو یکجا کر کے ضبط تحریرکیا جاتا ہے(cursive)]

   So called myth of letters and consonants

تشریح

ٱللَّهُ لَآ إِلَٟهَ إِلَّا هُوَ

  • Realize and recognize it about Allah the ExaltedNone at all in miscellany of iela'aha: godheads - deities that are uncritically admired, adorned and worshiped is alive or organizes, administers or sustains others except He the Exalted.

  • اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت جان لو—ان تمام کے تمام میں جنہیں معبود تصور کیا جاتا ہے کوئی ذی حیات نہیں،سوائے ان (اللہ تعالیٰ) کے۔

Word by word analysis [English - Urdu]  Thesis statement of Qur’ān

ٱلْحَـىُّ ٱلْقَيُّومُ .3:02٢

  • He the Exalted alone is the ever Living; the Absolute; never ever to die; the Sustainer and the Organizer of all that exists; the Sovereign Administrator [Refer 25:58]. [3:02]

  • (اللہ تعالیٰ کامل حیات ہیں،اوروہ تمام نظام کو سنبھالنے اورقائم رکھنے والے مقتدر اعلیٰ ہیں۔(آلِ عمران۔۲

نَزَّلَ عَلَيْكَ ٱلْـكِـتَٟبَ بِٱلْحَقِّ

  • He the Exalted has intermittently sent upon you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] the Book (Qur’ān) containing miscellany of infallible facts.

  • انہوں نے بتدریج مخصوص کتاب (قرء ان) کو آپ(ﷺ)پر نازل فرمایا ہے،مبنی بر بیان حقیقت اور موقع محل کی مناسبت سے۔

مُصَدِّقٙا لِّمَا بَيْـنَ يَدَيْهِ

  • It (Qur’ān) is the Affirmer-Certifier-Sanctifier for that which was sent in front of it (previous communication through Books).

  • یہ بتدریج نازل کردہ(قرء ان)تصدیق کرنے/حقیقت قرار دینے والا ہے اس کو جو اِس سے قبل زمان و مکان میں (کتاب خاص ۔ام الکتاب میں سے،حوالہ ۵:۴۸)نازل کیا گیا تھا۔

وَأَنزَلَ ٱلتَّوْرَىٰةَ وَٱلْإِنجِيلَ .3:03٣

  • And He the Exalted had sent in one go the Tor'aat and In'jeel [3:03]

  • اور انہوں نے مجتمع انداز میں یکبارگی تورات اور انجیل کو نازل فرمایا تھا،۔۔

مِن قَبْلُ هُدٙى لِّلنَّاسِ

  • Early on. They served as a guide for the people.

  • اس سے قبل کے ادوار میں،ان کا مقصد لوگوں کے لئے ہدایت مہیا کرنا تھا۔

وَأَنزَلَ ٱلْفُرْقَانَۗ

  • And He the Exalted has compositely sent Al-Furqau'n - the Criterion.

  • اور انہوں نے زمان ومکان میں مجتمع انداز میں کھوٹے کھرے،حقیقت اور باطل کو متمیز کر دینے والا پیمانہ اور کسوٹی نازل فرمایا ہے۔

إِنَّ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ لَـهُـمْ عَذَابٚ شَدِيدٚۗ

  • Authentic information about those who have refused to accept the Aa'ya'at of Allah the Exalted: Verbal passages is that a severe corporeal punishment is in wait for them.

  • ان لوگوں کے انجام کے متعلق جنہوں نے اللہ تعالیٰ کی آیات(نازل کردہ کتاب میں مندرجات)کا انکار کیا ہے حقیقت یہ ہے۔۔ایک شدید جسمانی سزا ان کے لیےتیار اور منتظر ہے۔

وَٱللَّهُ عَزِيزٚ ذُو ٱنتِقَامٛ .3:04٤

  • And be cognizant, Allah the Exalted is the Dominant, the holder of authority to award due punishment to criminals. [3:04]

  • خبردار رہو،اللہ تعالیٰ مطلق العنان حکمران ہیں۔وہ جرم کی پاداش میں سزا دینے کا مطلق اختیار رکھتے ہیں۔


إِنَّ ٱللَّهَ لَا يَخْفَىٰ عَلَيْهِ شَـىْءٚ فِـى ٱلۡأَرْضِ وَلَا فِـى ٱلسَّمَآءِ .3:05٥

  • Know the fact about Allah the Exalted neither any thing existing within the Earth nor that which exists in the Sky can ever be in hidden state from Him the Exalted. [3:05]

  • اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت جان لو؛کوئی بھی شئے جو زمین میں موجود ہے اور نہ کوئی شئے جوآسمان میں موجود ہے اس کا ان جناب پر  مخفی حالت میں رہنا کبھی بھی ممکن نہیں۔

هُوَ ٱلَّذِى يُصَوِّرُكُمْ فِـى ٱلۡأَرْحَامِ كَيْفَ يَشَآءُۚ

  • He the Exalted is the One Who gives you the unique facial identity while lodged within the wombs, whatever features He the Exalted decides.

  • وہ جناب ہی ہیں جو تم لوگوں کوماؤں کے رحم میں موجودگی کے دنوں میں انوکھی صورت کا حامل بناتے ہیں,جس طرح کےچہرے کے خدوخال وہ چاہتے ہیں۔

لَآ إِلَٟهَ إِلَّا هُوَ

  • Realize it about miscellany of iela'aha: deities that are uncritically admired, adorned and worshipped none of them is alive; none of them organizes, administers or sustains others except He (Allah the Exalted).

  • اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت جان لو—ان تمام کے تمام میں جنہیں معبود تصور کیا جاتا ہے کوئی ذی حیات نہیں،سوائے ان (اللہ تعالیٰ) کے۔

ٱلْعَزِيزُ ٱلْحَكِيـمُ .3:06٦

  • He the Exalted is Pervasively dominant and the Infinitely Just Supreme Administrator of the created realm, visible and invisible. [3:06]

  • وہ جناب  دائمی،ہر لمحہ،ہرمقام پرحتماً غالب ہیں۔ اوربدرجہ اتم انصاف پسند تمام موجود کائنات کے فرمانروا اور تمام پنہاں کو جاننے والے ہیں


هُوَ ٱلَّذِىٓ أَنزَلَ عَلَيْكَ ٱلْـكِـتَٟبَ

  • He the Exalted is the One Who has since sent to you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] the Book, compositely

  • وہ جناب ہیں جنہوں نے مجتمع انداز میں کتاب خاص (قرء ان مجید)کو آپ (ﷺ)پر نازل فرمایا ہے۔

مِنْهُ ءَايَٟتٚ مُّحْكَـمَٟتٌ

  • Verbal Passages having adjectival specification "permanently established statute" containing inviolate, unassailable, indissoluble and clenching commands, directions, injunctions, decisions, and writ are a subset of it (Qur’ān)

  • آئین حیات کے متعلق احکامات کو متعین کر دینے والی آیات اُس(قرء ان)کا ایک جزو ہیں۔

Miscellany of Grand Qur’ān: and

هُنَّ أُمُّ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • These are the MotherEssenceMain Purpose of the Book

  • وہ (آیات محکمات)کتاب کی اساس۔بنیادی مقصد ہے(قاری کی حیات کو اس کا پابند بنانے کے لئے)۔

وَأُخَرُ مُتَشَٟبِـهَٟتٚۖ

  • And other subset of verbal Passages of it (Qur’ān) are those which perform act of mirroring invisible realities and facts through metaphorical presentation.

  • اور اُن (آیات محکمات)کے علاوہ ایسی آیات اِس کتابِ خاص کے مجموعہ کا جزو ہیں جو تشبیہات کے ذریعے پنہاں کے متعلق بیان کردہ معلومات و علم کو عیاں کر دینے کا فعل سرانجام دیتی رہیں گی۔

فَأَمَّا الَّذِينَ فِـى قُلُوبِـهِـمْ زَيْغٚ

  • Thereby, as for that group of scholars is concernedAtilt- deflection is dominant in their heartslocus of passion and intellect, their attitude is:

  • بسبب اس تقسیم،جہاںتک اس قسم کے صاحبان علم کا تعلق ہے،ایک خود ساختہ کجی ان کے قلوب میں رچ بس چکی ہے،۔۔

فَيَتَّبِعُونَ مَا تَشَٟبَهَ مِنْهُ

  • For that reason of personality disorder, they purposely pursue that from it (Qur’ān) which could be pretended as confusing

  • اس کجی کے سبب یہ لوگ دانستہ ایک مقصد کے تحت اُس(قرآن مجید)میں سے اس  کا پیچھا کرتے ہیں جوکسی کو مبہم لگے،۔۔

ٱبْتِغَآءَ ٱلْفِتْنَةِ وَٱبْتِغَآءَ تَأْوِيلِهِۦۗ

  • Their objective is to endeavour achieving disharmony, perplexity, perturbation in society. And another objective is expounding self deduced interpretations of it (Qur’ān).

  • ایسا کرنے کا مقصد معاشرے میں بے آہنگی ، الجھن و اضطراب،انتشار پیدا کرنے کی جستجو ہے۔اور یہ جستجو کرنا ہے کہ اس(مذکر)حدیث کی تاویل کیا ہے۔

وَمَا يَعْلَمُ تَأْوِيلَهُۥٓ إِلَّا ٱللَّهُۗ وَٱلرَّٟسِخُونَ فِـى ٱلْعِلْمِ

  • But except Allah the Exalted and the true believers who attain the in-depth knowledge, they (the tilted heart scholars) know not the upshot - logical conclusive interpretation of it (Qur’ān).

  • وہ ایسا اس حال میں کرتے ہیں کہ اس حدیث (بات)کی تاویل سوائے اللہ تعالیٰ اور متعلقہ علم میں گہرائی اور گیرائی حاصل کرنے والوں کے دوسرے نہیں جانتے۔

يَقُولُونَ ءَامَنَّا بِهِۦ كُلّٚ مِّنْ عِندِ رَبِّنَاۗ

  • They (who attain the in-depth knowledge) in this state of knowledge tell people, "We have wholeheartedly believed in it (Qur’ān). In its entirety it (Qur’ān) is the best discourse communicated by our Sustainer Lord in easy to comprehend composition."

  • یہ متعلقہ علم میں سیرحاصل معلومات رکھنے والے کہتے ہیں’’ہم اس(قرآن مجید)پر صدق دل سے ایمان لائے ہیں۔یہ تمام کا تمام  احسن حدیث ہے،ہمارے رب کی جانب سےآسان فہم انداز میں نازل کردہ‘‘۔

وَمَا يَذَّكَّرُ إِلَّآ أُو۟لُوا۟ ٱلۡأَلْبَٟبِ .3:07٧

  • -- And the circumstantial fact is thatexcept the Men of Understanding; those who objectively reflect without overlapping emotions, prejudices and biasespeople do not self grasp and take lesson --. [3:07]

  • ۔۔ان لوگوں کی بات سچ ہے مگر عمومی طور پر سوائے ایسے لوگوں کے جو دانا وبینا ہیں(جو روایات،تعصبات،جذبات،خواہشات،مفادات سے بلند ہو کر کتاب کو سنتے اور پڑھتے ہیں)دوسرے ازخودنہ یاد رکھتے ہیں نہ نصیحت لیتے ہیں۔۔

رَبَّنَا لَا تُزِغْ قُلُوبَنَا بَعْدَ إِذْ هَدَيْتَنَا

  • [reverting from parenthetic, to their response] "Our Sustainer Lord, let not our hearts become eccentric-atilt-oblique after You the Exalted have guided us [through this Book].

  • وہ(راسخ العلم دعا کرتے ہیں)ہمارے رب!ہمارے قلوب میں کجی پیدا نہ ہونے دیں بعد اس کے کہ آپ جناب نے ہمیں ہدایت عطا فرما دی ہے۔

وَهَبْ لَنَا مِن لَّدُنكَ رَحْـمَةٙۚ

  • And do bestow upon us mercy-grace from Your Highness.

  • اور آپ جناب ہمارے لئے اپنی جانب سے رحمت کو مختص فرمائیں۔

إِنَّكَ أَنتَ ٱلْوَهَّابُ .3:08٨

  • Undeniably, You the Exalted are certainly the magnificent Benefactor-the One Who bestows. [3:08]

  • آپ کے متعلق یہ حقیقت ہے،آپ منبع عنایات ہیں۔

رَبَّنَآ إِنَّكَ جَامِعُ ٱلنَّاسِ لِيَوْمٛ لَّا رَيْبَ فِيهِۚ

  • Our Sustainer Lord! You the Exalted are certainly the gatherer of the people together for the promised day. Not at all perplexity-confusion-delusion-uncertainty lies in the gathering of people in it.

  • اے ہمارے رب!یقیناً آپ لوگوں کو جمع کرنے والے ہیں ایک ایسے دن کے لئے جس کے وجود پذیر ہونے کے متعلق قطعاًکس بھی قسم کا الجھاؤ،،تذبذب نہیں ہے‘‘۔

إِنَّ ٱللَّهَ لَا يُخْلِفُ ٱلْمِيعَادَ .3:09٩

  • The fact remains that Allah the Exalted never betrays the promise." [3:09]

  • یہ حقیقت ہے ،اللہ تعالیٰ دئیے ہوئے وعدے کی خلاف ورزی نہیں فرماتے۔


إِنَّ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟

  • Be informed about those who have refused to accept Qur’ān - the Divine Discourse:

  • ایسے لوگوں کے متعلق حقیقت جان لیں جنہوں نےقرآن مجید کو ماننے سے انکار کیا ہے:۔

لَن تُغْنِىَ عَنْـهُـمْ أَمْوَٟلُـهُـمْ وَلَآ أَوْلَٟدُهُـم مِّنَ ٱللَّهِ شَيْئٙاۖ

  • Neither their Wealth nor their Progeny would avail to fetch them tangible laxity and relaxation from the grace of Allah the Exalted.

  • ان کے مال و دولت اور نہ ان لوگوں کی اولادانہیں  اللہ تعالیٰ کی جانب سےکسی قسم کی رعایت وآزادی دلا سکے گی۔

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ هُـمْ وَقُودُ ٱلنَّارِ .3:10١٠

  • Be aware that they are the people who will be the charred-affected-fuel of the Heated Hell-Prison. [3:10]

  • اور یہ ہیں وہ لوگ جوآگ کے ایندھن کی مانند سلگتے رہیں گے جہنم میں۔

كَدَأْبِ ءَالِ فِرْعَوْنَ وَٱلَّذِينَ مِن قَبْلِـهِـمْۚ

  • Their Wealth and their Progeny might never avail like the pattern of end of Pharaoh-folk and those people who lived in times before them

  • ان کے روئیے اور عادت کی رفاقت فرعون کے پیروکاروں  سے مماثلت کی حامل ہے اور ان لوگوں سے جو ان سے قبل کے زمانے میں گزر گئے تھے۔

Root: د ء ب

كَذَّبُوا۟ بِـٔ​َايَـٟتِنَا فَأَخَذَهُـمُ ٱللَّهُ بِذُنُوبِـهِـمْۗ

  • They all had publicly belied Our Aa'ya'at: unprecedented displays-miraculous demonstrations (and verbal messages). Thereby, for reason of their persistent slanders and crimes, Allah the Exalted seized them [but their wealth and sons could not save them].

  • انہوں نے برسرعام ہم جناب کی عینی مشاہدہ  کے لئے انہیں دکھائی گئی  ایسی شہادتوں(آیات/معجزات )کو جھٹلا دیا      جوان کےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں۔جس کے بعد اللہ تعالیٰ نے ان کے جرائم کی پاداش میں انہیں گرفت میں لے لیا۔

Root: ذ ن ب

وَٱللَّهُ شَدِيدُ ٱلْعِقَابِ .3:11١١

  • The fact remains that Allah the Exalted examines matters minutely to conclusion/Allah the Exalted is stern in dispensing justice-awarding due punishment to criminals. [3:11]

  • متنبہ رہو؛ اللہ تعالیٰ معاملات کا سختی سے تکمیل تک پیچھا کرنے والے ہیں/مجرمین کو مبنی بر انصاف سزا دینے والے ہیں۔

قُل لِّلَّذِينَ كَفَـرُوا۟ سَتُغْلَبُونَ وَتُحْشَـرُونَ إِلَـىٰ جَهَنَّـمَۚ

  • O you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce for those people who have refused to accept [the revelation-Qur’ān]; "You people will be overpowered in time to come [on resurrection Angels will first arrest and chain them] and you will be pushed-gathered towards the Hell-Prison.

  • آپ(ﷺ)ان لوگوں کو جنہوں نے آپ کو رسول اللہ اور قرءان کو ماننے سے انکار کر دیا ہے یہ کہہ کر خبردار کر دیں’’عنقریب تم لوگ مغلوب ہو جاؤ گے اور تمہیں جہنم کی جانب لے جانے کے لئے ٹولیوں کی صورت جمع کیا جائے گا ۔

وَبِئْسَ ٱلْمِهَادُ .3:12١٢

  • Beware, how vile is the abode-dwelling to land in."  [3:12]

  • اور اس جہنم کی حقیقت یہ ہے کہ وہ کیا ہی برا ٹھکانہ ہے رہائش کے لئے‘‘۔

قَدْ كَانَ لَـكُـمْ ءَايَةٚ فِـى فِئَتَيْـنِ ٱلْتَقَتَاۖ

  • Indeed, a sign to ponder was there for you people (believers), evidently surfaced, in the two hostile parties who confronted each other on the battlefield [Badder]

  • اے مدعیان ایمان؛ایک حقیقت کی جانب رہنمائی کرنے والا نکتہ تم لوگوں کے غوروفکر کے لئے ان دو ٹولیوں میں موجود ہے جب وہ  میدان جنگ میں آمنے سامنے ہوئی تھیں     ۔

فِئَةٚ تُقَٟتِلُ فِـى سَبِيلِ ٱللَّهِ

  • One of them was fighting back in the way of Allah the Exalted

  • میدان جنگ میں پہلے پہنچنے والی اہل ایمان کی ٹولی اللہ تعالیٰ کی مقرر کردہ راہ کی حفاظت کے لئے جنگ کر رہی تھی

وَأُخْـرَىٰ كَافِرَةٚ يَرَوْنَـهُـم مِّثْلَيْـهِـمْ رَأْىَ ٱلْعَيْـنِۚ

  • And the other were a disbelieving party. They, the troops of unbelieving army, were perceiving them-rival party of believers as twice their own number; it was their eye observation; interpret the surrounding environment by processing information that is contained in visible light.

  • اور بعد میں پہنچنے والی ٹولی قرءان کو ماننے سے انکار کرنے والی تھی۔وہ افرادپہنچتے وقت انہیں(اہل ایمان کو)اپنے سے دگنا دیکھ رہے تھے،آنکھوں سے دیکھ کر اندازہ لگانے کے انداز میں۔

وَٱللَّهُ يُؤَيِّدُ بِنَصْرِهِۦ مَن يَشَآءُۗ

  • And Allah the Exalted strengthens one with His help about whomever He the Exalted so decides.

  • مطلع رہو؛اللہ تعالیٰ اپنی مدد سے جس کسی کے لئے ایسا چاہتے ہیں  برتری قوت کا حامل بنا دیتے ہیں۔

إِنَّ فِـى ذَٟلِكَ لَعِبْـرَةٙ لِّأُو۟لِـى ٱلۡأَبْصَٟرِ .3:13١٣

  • Indeed an enlightenment enabling insight is certainly mirrored in it (battle of Badder) for men of vision and wisdom. [3:13]

  • یقیناً اور بلاشبہ حقیقت کے کنارے لے جانے والا نکتہ اس واقعہ میں موجود ہے ان لوگوں کے لئے جو نگاہ عبرت رکھتے ہیں


زُيِّنَ لِلنَّاسِ حُبُّ ٱلشَّهَوَٟتِ مِنَ ٱلنِّسَآءِ

  • Know it; the love of erotic predilections - stimulators has become alluring for the people (Men), fetish from the women

  • جان لو؛شہوانی جذبات کوابھارنے والے  اشاروں سے  گہرے تعلق رغبت کو،جوبعض عورتوں کے بعض جسمانی اعضاء کے مشاہدہ سے  بعض کے لئےپیدا ہوتا ہے، لوگوں(مردوں)کے لئے باعث کشش بنا دیا گیا ہے۔

Grand Qur’ān teaches the subject of Human Sexuality   Root: ز ى ن; ش ھ و

وَٱلْبَنِيـنَ

  • And liking for having sons has become a longing for people

  • اور بیٹوں  سے گہرے تعلق رغبت کو لوگوں کے لئے خوشنما بنا دیا گیا ہے۔

وَٱلْقَنَٟطِيـرِ ٱلْمُقَنطَرَةِ مِنَ ٱلذَّهَبِ وَٱلْفِضَّةِ

  • So has become the desire to have a state of hoarded abundance of Gold and Silver

  • اور اسی طرح سونے اور چاندی سے بنی اشیاء کوتجوریوں میں بند کر کے رکھنے کی الفت و رغبت کولوگوں کے لئے خوشنما جذبہ بنا دیا گیا

Root: ق ن ط ر

وَٱلْخَيْلِ ٱلْمُسَوَّمَةِ وَٱلۡأَنْعَٟمِ وَٱلْحَرْثِۗ

  • And the marked-pedigree horses [top of the line products], and abundance of herbivore-mammals/livestock, and for plenty of harvesting lands.

  • اور نشان زدہ اعلیٰ نسل کے گھوڑوں؛اوربکثرت چوپایوں اور زرعی زمین کی ملکیت کو ۔

Root: خ ى ل;  س و م

ذَٟلِكَ مَتَٟعُ ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَاۖ

  • (But know in Allah's perspective) This is the wealth-sustenance-provision of the transitory worldly life.

  • لیکن (یاد رہے اللہ تعالیٰ کے نقطہ نظر سے)مذکورہ اشیا؍ء محض  دنیاوی زندگی کا سامان زیست ہے۔

وَٱللَّهُ عِندَهُۥ حُسْنُ ٱلْمَـٔ​َابِ .3:14١٤

  • Mind it that Allah the Exalted grants the most appropriate return and abode by His Grace. [3:14]

  • مطلع رہو؛یہ اللہ تعالیٰ ہیں،بہترین حسن و خوشنمائی کا حامل ٹھکانہ اور جائے واپسی ان جناب کی جانب سے عنایت ہو گا۔

قُلْ أَؤُنَبِّئُكُـم بِخَيْـرٛ مِّن ذَٟلـِكُـمْۚ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] tell them; "May I inform you people about a better thing than this stated sustenance-provision?

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’کیا میں تم لوگوں کواس کے متعلق خبر پہنچا دوں جو تمہارے لئے ان مذکورہ سے کہیں بہتر ہے؟

لِلَّذِينَ ٱتَّقَوْا۟ عِندَ رَبِّـهِـمْ جَنَّٟتٚ

  • Gardens are prepared and are in wait by the grace of Allah the Exalted for those who endeavoured to attain salvation

  • باغات ان لوگوں کے لئے  ان کے رب کی جانب سے تیار اور منتظر ہیں  جو دنیاوی زندگی میں تندہی سے محتاط رہتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے پناہ کے خواستگار رہے۔

تَجْـرِى مِن تَحْتِـهَا ٱلۡأََنْـهَٟرُ

  • The peculiar feature of those gardens is that the canals of water flow by their side

  • ایسے باغات  جن کی خاص بات یہ ہے کہ نہریں ان کے پائیں بہتی ہیں۔

خَٟلِدِينَ فِيـهَا

  • They will be residing therein permanently-indefinitely.

  • یہ لوگ ان میں ہمیشہ آباد رہیں گے۔

وَأَزْوَٟجٚ مُّطَهَّرَةٚ

  • And that spouses of purified- clean heart as companions-mates are assured for them therein [see 2:25].

    • اور ازواج مطھرۃ؍/ہر ناپسندیدہ پہلو سے منزہ ،پاکیزہ تصورات کے حامل ازدواجی ساتھی اُن(باغات) میں ان کیلئے  جیون ساتھی بنانے کا وعدہ ہے۔

    Root: ز و ج; ط ھ ر

وَرِضْوَٟنٚ مِّنَ ٱللَّهِۗ

  • And above all the appreciations and approvals of Allah the Exalted is their life time achievement."

  • اوراللہ تعالیٰ کی جانب سے پذیرائی  اور قدردانی ان کے لئے  زندگی بھر کی محنت کا سب سے بڑا ایوارڈ ہو گا۔(سورۃ التوبہ کی آیت ۷۲ سے ملا کر پڑھیں)

وَٱللَّهُ بَصِيـرُۢ بِٱلْعِبَادِ .3:15١٥

  • And remain mindful; Allah the Exalted is ever observant in close association with certain allegiants.  [3:15]

  • اور متنبہ رہو؛ اللہ تعالیٰ ہر لمحے  خصوصی صفات کے حامل بندوں کا اپنا ہونے کے ناطے مشاہدہ فرماتے ہیں۔

ٱلَّذِينَ يَقُولُونَ رَبَّنَآ إِنَّنَآ ءَامَنَّا

  • They are the allegiants who keep praying; "Our Sustainer Lord! Indeed we have accepted/ believed

  • یہ وہ بندے ہیں جو کہتے ہیں’’ہمارے رب!یقیناًہم داعی اللہ اور قرءان مجید پر ایمان لے آئے ہیں(منادی کی بات کو غور سے سن کر۔ءال عمران۔۱۹۳)۔

فَٱغْفِرْ لَنَا ذُنُوبَنَا

  • Therefore, You the Exalted kindly overlook for us, forgiving our past misdoings/crimes/slanders.

  • اس لئے ہمارے لئے  سابقہ جرائم کی پردہ پوشی فرماتے ہوئے آپ جناب ہمیں معاف فرمائیں۔

Root: ذ ن ب

وَقِنَا عَذَابَ ٱلنَّارِ .3:16١٦

  • And You the Exalted do save us from the torment of scorching Hell-prison". [3:16]

  • اور آپ ہمیں دوزخ کے عذاب سے محفوظ رکھیں‘‘۔

ٱلصَّٟبـِـرِينَ وَٱلصَّٟدِقِيـنَ وَٱلْقَـٟنِتِيـنَ وَٱلْمُنفِقِيـنَ

  • They are coolly perseverant, truthful in their speech and conduct, and they firmly stand for Allah the Exalted like devoted servants and they are the ones who spend seeking approval and appreciation of Allah the Exalted

  • یہ لوگ ہر طرح کے حالات میں مستقل مزاجی سے  تحمل و بردداشت کا مظاہرہ کرنے والے ہیں،ہر موقعے پر سچ بولنے والے ہیں؛اور(صلوٰۃ کی ادائیگی کے وقت) اللہ تعالیٰ کے حضور باادب  عاجز بندوں کے انداز میں کھڑے ہوتے ہیں؛اور دوسروں کی فلاح و بہبود پر خرچ کرنے والے ہیں؛

وَٱلْمُسْتَغْفِرِينَ بِٱلۡأَسْحَارِ .3:17١٧

  • And they are the seekers of forgiveness in the moments between end part of nights and true dawns. [3:17]

    • اور راتوں میں سحر کے وقت اللہ تعالیٰ سے پردہ پوشی اورمغفرت کے طلبگار ہوتے ہیں‘‘۔

    Root: س ح ر


شَهِدَ ٱللَّهُ

  • Allah the Exalted has testified:

  • اللہ تعالیٰ اس پر گواہ ہیں

أَنَّهُۥ لَآ إِلَٟهَ إِلَّا هُوَ

  • That the certain fact about Him the Exalted is: in the miscellany of iela'aha: deities that are uncritically admired, adorned and worshipped; none of them is alive; none of them organizes, administers or sustains others except He the Alone Sustainer Lord

  • کہ ان جناب کے متعلق حقیقت ہے کہ ان تمام کے تمام میں جنہیں معبود تصور کیا جاتا ہے کوئی ذی حیات نہیں،سوائے ان (اللہ تعالیٰ) کے۔

It is Thesis statement of Qur’ān

وَٱلْمَلَٟٓئِكَـةُ وَأُو۟لُوا۟ ٱلْعِلْمِ

  • Similarly the Angels and the Men of Knowledge did testify to that effect

  • اور ملائکہ اور صاحبان علم اس حقیقت پر گواہ ہیں۔

قَآئِمََاۢبِٱلْقِسْطِۚ

  • He the Exalted is the firm upholder of created realm with justice and equity.

  • وہ جناب ہر لمحہ انصاف کے تقاضوں کو پورا کرتے ہوئے نظام کائنات کو برقرار رکھتے ہیں۔

لَآ إِلَٟهَ إِلَّا هُوَ

  • Realize it about miscellany of iela'aha: deities that are uncritically admired, adorned and worshipped none of them is alive; none of them organizes, administers or sustains others except He (Allah the Exalted).

  • اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت جان لو—ان تمام کے تمام میں جنہیں معبود تصور کیا جاتا ہے کوئی ذی حیات نہیں،سوائے ان (اللہ تعالیٰ) کے۔

ٱلْعَزِيزُ ٱلْحَكِيـمُ .3:18١٨

  • He the Exalted is Pervasively dominant and the Infinitely Just Supreme Administrator of the created realm, visible and invisible. [3:18]

  • وہ جناب  دائمی،ہر لمحہ،ہرمقام پرحتماً غالب ہیں۔ اوربدرجہ اتم انصاف پسند تمام موجود کائنات کے فرمانروا اور تمام پنہاں کو جاننے والے ہیں


إِنَّ ٱلدِّينَ عِندَ ٱللَّهِ ٱلْإِسْلَٟمُۗ

  • Know the certain fact; Ad-Deen: Universal Constitution: Code of Conduct prescribed by Allah the Exalted is Islam: a name signifying a state and activity according to the discipline establishing orderly state of peace, security, tranquillity, harmony and dynamic balance for all.

  • یہ حقیقت ہے کہ ا للہ تعالیٰ کی جانب سے حیات و کائنات کیلئے وضع اورمقررکردہ  دستور اورنظام صرف اسلام ہے۔

وَمَا ٱخْتَلَفَ ٱلَّذِينَ أُوتُوا۟ ٱلْـكِـتَٟبَ إِلَّا مِنۢ بَعْدِ مَا جَآءَهُـمُ ٱلْعِلْمُ بَغْيَاۢ بَيْنَـهُـمْۗ

  • Be aware, the people who were given the Book earlier have purposely differed for no reason except groupings/vested interest amongst them after that which the knowledge [the Book of Allah the Exalted] had exposed to them.

  • جان لو؛ان لوگوں نے،جنہیں کلام اللہ پر مشتمل کتاب سے نوازا گیا تھا،رسول کریم سے اختلاف اس کے بعد کیا جومبنی بر حقیقت علم(قرءان مجید)نے ان پر افشاں کر دیا تھا،بوجوہ ان(بنی اسماعیل اور بنی اسرائیل)کے مابین غبارخاطر کا ماحول تھا۔

وَمَن يَكْـفُـرْ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • And if someone refracts-denies adhering to the Aa'ya'at; unitary verbal passages of Qur’ān, he should know:

  • جان لو؛جو کوئی اللہ تعالیٰ کی آیات(قرءان مجید میں مندرجات)کا انکار کرے گا۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ سَرِيعُ ٱلْحِسَابِ .3:19١٩

  • Thereat, Allah the Exalted is indeed swift in evaluating, reckoning and judging. [3:19]

  • تومتنبہ رہے، یقیناً اللہ تعالیٰ حساب کتاب  انتہائی سرعت سے کرتے ہیں  ۔

Root: س ر ع

فَإِنْ حَآجُّوكَ فَقُلْ أَسْلَمْتُ وَجْهِىَ لِلَّهِ وَمَنِ ٱتَّبَعَنِۗ

  • [Since prescribed code is Islam] Therefore, in case they people argue and wrangle with you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam], thereat, merely tell them; "I have submitted my whole self exclusively and solely for Allah the Exalted. Moreover, whoever followed me, in letter and spirit, has submitted enthusiastically to the Code of Conduct prescribed by Allah the Exalted".

  • آپ(ﷺ)کے بتا دینے کے باوجود اگر وہ(اہل کتاب)آپ سے  بحث و تکرار میں الجھتے ہیں تو آپ کہہ دیں’’میں نے اپنی ذات کودستور حیات اسلام کا پابند کر دیا ہے،اللہ تعالیٰ کے حکم کی تعمیل کی خاطر،اور ہر اس شخص نے ایسا کیا ہےجس نے لگن و خلوص سے میری پیروی کی ہے‘‘ ۔

وَقُل لِّلَّذِينَ أُوتُوا۟ ٱلْـكِـتَٟبَ وَٱلۡأُمِّيِّــۧنَ ءَأَسْلَمْتُـمْۚ

  • And you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pose this question for those who were given the Book and also for those people who were earlier not given the Book; designated, and associated as : the Gentiles, "Have you people heartily submitted to the Prescribed Code of Conduct, Islam?"

  • اورآپ(ﷺ)ان لوگوں سے جنہیں کلام اللہ پر مشتمل کتاب سے نوازا گیا تھا اور ان سے جنہیں قبل ازیں کتاب اللہ سے نہیں نوازا گیا تھاپوچھیں’’کیا تم  اپنے آپ کودستور حیات اسلام کا پابند کرنے پر رضامند ہو؟‘‘

فَإِنْ أَسْلَمُوا۟ فَقَدِ ٱهْتَدَوا۟ۖ

  • Accordingly, if they have heartily submitted to the Code of Conduct: Islam, thereby, they have certainly guided themselves aright.

  • جواب میں اگر انہوں نے اپنے آپ کودستور حیات اسلام پرکاربندکر لیا تو یقیناً انہوں نے اپنے آپ کوہدایت یافتہ کر لیا۔

وَّإِن تَوَلَّوْا۟

  • However, if they have turned their backs and went away [then relax, need not be worrywart, they want to retain separate identity]

  • لیکن اگر وہ اظہار نفی کے انداز میں ازخود کچھ کہے بغیرپلٹ گئے۔

فَإِنَّمَا عَلَيْكَ ٱلْبَلَٟغُۗ

  • Thereat, you the Messenger have discharged the assignment since act of deliverance and conveyance of the message is the only responsibility upon you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam].

  • تو یہ آپ پر گراں نہیں ہونا چاہئے کیونکہ نازل کردہ پیغام کوصرف لوگوں کی سماعت اور بصارت تک پہنچانے کی ذمہ داری آپ پر ہے(چاہے کوئی مانے یا نہ مانے)۔

 

وَٱللَّهُ بَصِيـرُۢ بِٱلْعِبَادِ .3:20٢٠

  • And remain mindful; Allah the Exalted is ever observant in close association with certain allegiants. [3:20]

  • اور متنبہ رہو؛ اللہ تعالیٰ ہر لمحے  خصوصی صفات کے حامل بندوں کا اپنا ہونے کے ناطے مشاہدہ فرماتے ہیں۔


إِنَّ ٱلَّذِينَ يَكْـفُـرُونَ  بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • Indeed they who keep denying adhering to the Aa'ya'at: Verbal passages of Qur’ān communicated by Allah the Exalted

  • یقیناً وہ لوگ جو اللہ تعالیٰ کی آیات جو قرءان مجید کے ذریعے ان تک پہنچائی گئی ہیں مسلسل انکار کرتے ہیں۔

Root: ك ف ر

وَيَقْتُلُونَ ٱلنَّبِيِّــۦنَ بِغَيْـرِ حَقّٛ

  • And they who keep indulging in character assassination of: the Chosen and exalted Allegiant Subjects of Allah the Exalted by contrary to fact slanderous and libelous statements to distance-ill-repute them from people's reverence

  • اور جو لوگ اللہ تعالیٰ کے  تمام تخلیقات میں فوقیت اور تکریم دیئے  نبیوں کی  تضحیک و توہین و کردار کشی کرتے ہیں ان سے حقیقت کے منافی   اتہام اور قصے منسوب کر کے۔

Root: ق ت ل

وَيَقْتُلُونَ ٱلَّذِينَ يَأْمُـرُونَ بِٱلْقِسْطِ مِنَ ٱلنَّاسِ

  • And they who ill-repute and distance those people of society who bid for balanced and just conduct

  • اور ان لوگوں کوزچ اور بدنام کرتے ہیں جو معاشرے میں خود پر اصلاح کی ذمہ داری لیتے ہوئے     برابری اورانصاف کا رویہ اپنانے کی تلقین کرتے ہیں۔

Root: ق ت ل

فَـبَشِّـرْهُـم بِعَذَابٛ أَلِيـمٛ .3:21٢١

  • Accordingly, they indeed deserve recompense; therefore, you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] give them the "good news" of severe torment in wait for them. [3:21]

  • ایسے لوگ سزا کے مستوجب ہیں۔اس لئے آپ(ﷺ) انہیں خوشخبری دیں  سخت  ناگوار ایذا کے الصاق کی۔

أُو۟لَـٟٓئِكَ ٱلَّذِينَ حَبِطَتْ أَعْمَٟلُـهُـمْ فِـى ٱلدُّنْيَا وَٱلۡءَاخِـرَةِ

  • The aforementioned people are the people whose otherwise good acts have become voided, weightless froth, destructive in the worldly life and the Hereafter

  • متنبہ رہو؛یہ متذکرہ لوگ  درحقیقت وہ ہیں جن کے  اچھے اعمال   دنیا اور آخرت میں نتیجہ خیزی کے حوالے  سے بیکار ہو گئے۔

وَمَا لَـهُـم مِّن نَّـٟصِرِينَ .3:22٢٢

  • And none at all of the helpers will come forward for them. [3:22]

  • اور مددگاروں میں سے کوئی ایک بھی ان کی مدد کرنے کا خواہشمند نہیں ہو گا۔


أَ لَمْ تَرَ إِلَـى ٱلَّذِينَ أُوتُوا۟ نَصِيبٙا مِّنَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • Have you not marked the attitude of those who were given an earmarked share of the Mother/Principal Book?

  • کیا آپ نے ان لوگوں کے رویئے پر غور کیا ہے جنہیں ام الکتاب میں سے ان کے لئے مخصوص اور متعین کردہ جزو پہنچا دیا گیا تھا۔

Root: ن ص ب

ام الکتاب

يُدْعَوْنَ إِلَـىٰ كِتَٟبِ ٱللَّهِ لِيَحْكُـمَ بَيْنَـهُـمْ

  • They are invited towards the Book of Allah the Exalted (Qur’ān) so that it may resolve and decide issues between them.

  • انہیں ان کے مابین   اختلافات کا فیصلہ کرنے کے لئے کتاب اللہ (قرءان مجید)کی جانب آنے کی دعوت دی جاتی ہے۔

ثُـمَّ يَتَوَلَّـىٰ فَرِيقٚ مِّنْـهُـمْ وَهُـم مُّعْـرِضُونَ .3:23٢٣

  • Afterwards, having referred to it, a group: elite and intelligentsia of them consciously and purposely evade. And knowing the contents of the Book they consciously elude it. [3:23]

  • بعد ازاں کتاب اللہ کے مندرجات کو سمجھ لینے پر ان میں سے  صاحبان علم کی شناخت رکھنے والا طبقہ بے پرواہی سے پلٹ جاتا ہے،اس  ذہنی کیفیت میں کہ وہ دانستہ اعراض برتنے والے ہیں۔

ذَٟلِكَ بِأَنَّـهُـمْ قَالُوا۟ لَن تَمَسَّنَا ٱلنَّارُ إِلَّآ أَيَّامٙا مَّعْدُودَٟتٛۖ

  • This eluding from the Book (Qur’ān) they justify by proclaiming; "The Hell-Fire will certainly not touch us in the Hereafter except for a period of numbered days".

  • ان کا یہ رویہ اس وجہ سے ہے کہ انہوں نے اپنے لوگوں سے کہا ہوا ہے’’ہمیں جہنم کی آگ/تپش نہیں چھوئے گی سوائے  معدودے چند دنوں کے دوران‘‘۔

وَغَـرَّهُـمْ فِـى دِينِـهِـم مَّا كَانُوا۟۟ يَفْـتَـرُونَ .3:24٢٤

  • And such fascinating myths have caused them delusional understanding about their Prescribed Code of Conduct and Requital, which they kept fabricating. [3:24]

  • متنبہ رہو؛ان باتوں نے جو وہ زیر  مقصدکانٹ چھانٹ کر اختراع کرتے رہے ہیں انہیں  اپنے ضابطہ حیات/دین کے معاملات میں   جھوٹی خوش فہمیوں سے فریب دینے میں مبتلا کر دیا ہے۔

فَكَـيْفَ إِذَا جَـمَعْنَـٟهُـمْ لِيَوْمٛ لَّا رَيْبَ فِيهِ

  • Thereat,  how will they stand by their delusional stance [3:24] when We would have gathered them all together for the promised day. Not at all perplexity-confusion-delusion-uncertainty lies in the gathering of people in it.

  • مگر اس دن ان کے پاس کہنے کو کیا ہوگا جس دن ہم جناب انہیں  ایک جگہ جمع کر دیں گے،وہ دن جس کے  وقوع پذیر ہونے کےمتعلق انہیں بھی قطعاً کوئی تذبذب نہیں۔

وَوُفِّيَتْ كُلُّ نَفْسٛ مَّا كَسَبَتْ

  • And each of individuals would have been paid back that which he had earned/done.

  • اور ہر ایک شخص کووہ کمائی جو اس نے دنیا میں کمائی تھی پلٹائی جا چکی ہو گی۔

وَهُـمْ لَا يُظْلَمُونَ .3:25٢٥

  • While dispensing justice they would not be subjected to even an iota of disproportion. [3:25]

  • اور ان سے(جزا و سزا میں)بالکل کوئی زیادتی نہیں ہو گی۔


قُلِ ٱللَّهُـمَّ مَٟلِكَ ٱلْمُلْكِ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] tell people to pronounce, admitting: "O Allah the Exalted, You the absolute Sovereign of the entire Kingdom:

  • آپ(ﷺ)لوگوں سے کہیں کہ اللہ تعالیٰ کے حضور یہ اعتراف کریں’’اے اللہ!اے تمام سلطنت کے مطلق فرمانروا!

تُؤْتِـى ٱلْمُلْكَ مَن تَشَآءُ وَتَنزِعُ ٱلْمُلْكَ مِمَّن تَشَآءُ

  • You the Exalted bestow a certain kingdom to someone; he/she whom You decide to favour. And You the Exalted withdraw a certain kingdom from someone; he/she against whom You so decide. 

  • یہ آپ ہیں جو کسی خاص علاقے کی حکمرانی پر اسے فائزفرما دیتے ہیں جس کے متعلق یہ فیصلہ فرماتے ہیں؛اور اس  سے  اس کی سلطنت کی حکمرانی چھین لیتے ہیں جس کے متعلق یہ فیصلہ صادر کرتے ہیں۔ 

وَتُعِزُّ مَن تَشَآءُ وَتُذِلُّ مَن تَشَآءُۖ

  • And You the Exalted render him preponderant, dominant and powerful about whom You so decide. Likewise, You the Exalted render him ignominious about whom You so decide.

  • اور جس کے متعلق ایسا چاہتے ہیں اسے  بلند مقام وحیثیت،صاحب اقتدار، غلبہ و قوت کا حامل بنا دیتے ہیں،اور جس کسی کے متعلق چاہتے ہیں اسے پست  و بے توقیرکر دیتے ہیں۔

Root: ذ ل ل

بِيَدِكَ ٱلْخَيْـرُۖ

  • The dynamics of balance-tranquillity-absolute goodness is exclusive to the judgment and authority of You the Exalted.

  • بہترین  توازن اور بھلائی پر قائم نظام کو برقرار رکھنا صرف  آپ کی قوت فرمانروائی کا مرہون  منت ہے۔

إِنَّكَ عَلَـىٰ كُلِّ شَـىْءٛ قَدِيرٚ .3:26٢٦

  • It is certain that You the Exalted eternally have the command and control over all things, individually and collectively: set them right, fix them in measure and proportion. [3:26]

  • یقیناً آپ جناب ہر ایک شئے اور معاملے کو پیمانوں میں مقید کرنے پر ہمیشہ سے قادر ہیں۔

تُولِجُ ٱلَّيْلَ فِـى ٱلْنَّـهَارِ وَتُولِجُ ٱلنَّـهَارَ فِـى ٱلَّيْلِۖ

  • You the Exalted cause the Night of a place to enter into the Day, while simultaneously cause the Day to way into the Night.

  • آپ جناب   کسی مقام کی رات کودن کی حدود میں داخل کرتے رہتے ہیں اور ساتھ ہی،بیک وقت کسی مقام کے دن کو رات میں داخل فرماتے ہیں۔  

Root: و ل ج

وَتُخْرِجُ ٱلْحَـىَّ مِنَ ٱلْمَيِّتِ وَتُخْرِجُ ٱلَمَيِّتَ مِنَ ٱلْحَـىِّۖ

  • And You the Exalted cause the emergence of a living out of matter-dead, and cause the emergence of  matter-dead body void of life out of the living.

  • اور آپ کسی خاص مادہ کے جزو سے حیات کو نمو د دیتے ہیں؛جبکہ حیات میں سے  غیر حیات کے حامل مادے کو خارج کرتے ہیں۔

وَتَرْزُقُ مَن تَشَآءُ بِغَيْـرِ حِسَابٛ .3:27٢٧

  • And You the Exalted bestow worldly sustenance without measure, in abundance or for no apparent cause, to a certain person for whom You decide favourably." [3:27]

  • اور آپ جناب جس کسی کو چاہتے ہیں (آسودگی سے آزمانا)اسے   حساب وکتاب اورعلت و معلول سے ماوراءسامان زیست عنایت فرماتے ہیں‘‘۔


لَّا يَتَّخِذِ ٱلْمُؤْمِنُونَ ٱلْـكَـٟفِرِينَ أَوْلِيَآءَ مِن دُونِ ٱلْمُؤْمِنِيـنَۖ

  • The True Believers should not incline towards adopting co-dweller non-believers as their guardians-protectors-patrons, instead of the Believers.

  • صدق دل سے رسول کریم اور قرءان مجید پر ایمان لانے والوں کو چاہئیے کہ ان کا انکار کرنے والوں کودانستہ بطور سرپرست  اختیار نہ کریں جن کے ساتھ مومنین کے علاوہ ان کی راہ و رسم ہے۔

وَمَن يَفْعَلْ ذَٟلِكَ فَلَيْسَ مِنَ ٱللَّهِ فِـى شَـىْءٛ إِلَّآ أَن تَتَّقُوا۟ مِنْـهُـمْ تُقَىٰةٙۗ

  • Take note; if someone did adopt them as patrons; thereat, he has no patronage in any matter from the grace of Allah the Exalted. Except that they: true believers might protect themselves from them; to guard against the harm they could cause in future.

  • متنبہ رہو؛جو کوئی ایسا کرے گا تو اللہ تعالیٰ کی جانب سے کسی بھی شئے میں مدد نہیں ہو گی؛سوائے ان حالات میں کہ تمہارامقصد اپنے آپ کو ان سے محفوظ رکھنا ہو،حفاظتی تدبیر کے انداز میں۔

وَيُحَذِّرُكُمُ ٱللَّهُ نَفْسَهُۥۗ

  • And Allah the Exalted warns you to remain vigilant of His injunctions.

  • محتاط رہو؛اللہ تعالیٰ تم لوگوں میں اپنے احکام کے متعلق  سمجھداری سے محتاط رہنے کا رویہ پیدا فرماتے ہیں(ہر طرح کے معاملات اور حالات سے نمٹنے کی ہدایت دے کر)

وَإِلَـىٰ ٱللَّهِ ٱلْمَصِيـرُ .3:28٢٨

  • And be cognizant that the doctrine: the finality of issues is the exclusive prerogative of Allah the Exalted, is a fact. [3:28]

  • مطلع رہو؛۔یہ نظریہ کہ تمام امور کو منطقی انجام کے فیصلے کے لئے اللہ تعالیٰ کی جانب پلٹایا جاتا ہے حقیقت ہے۔

Root: ص ى ر

قُلْ إِن تُخْفُوا۟ مَا فِـى صُدُورِكُمْ أَوْ تُبْدُوهُ يَعْلَمْهُ ٱللَّهُۗ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] inform them: "Whether you people withhold that idea and intentions which emerge and rest in your chests or reveal - state it publicly; it makes no difference, Allah the Exalted knows it.

  • آپ(ﷺ)لوگوں کو خبردار فرمائیں’’چاہے جو کچھ تم لوگ اپنے سینوں میں پوشیدہ رکھتے ہو یا اسے عیاں کر دیتے ہو،اللہ تعالیٰ اس کے متعلق مکمل علم رکھتے ہیں

Root: ص د ر

وَيَعْلَمُ مَا فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَمَا فِـى ٱلۡأَرْضِۗ

  • And He the Exalted knows that which exists in the Skies that which exists in the Earth.

  • اور وہ جناب ہر اس شئے کو جوآسمانوں میں موجود ہے اور جو زمین میں موجود ہے مکمل طور پر جانتے ہیں۔

وَٱللَّهُ عَلَـىٰ كُلِّ شَـىْءٛ قَدِيرٚ .3:29٢٩

  • Remain cognizant: Allah the Exalted has eternally the power over each and all matters to keep them subjugated by measure and equations. [3:29]

  • اوریقیناًاللہ تعالیٰ ہر ایک شئے اور معاملے کو پیمانوں میں مقید کرنے پر ہمیشہ سے قادر ہیں‘‘۔

يَوْمَ تَجِدُ كُلُّ نَفْسٛ مَّا عَمِلَتْ مِنْ خَيْـرٛ مُّحْضَرٙا

  • Every one of human and Jinn species shall find the openly placed written record of deeds, whatever she had done of righteous import, during the day of accountability.

  • اس دن لوگوں کی نفسیاتی کیفیت جان لو جب ہر ایک ایک شخص ہر اس بھلائی کے عمل کو جو اس نے دنیاوی زندگی میں کیا تھا اپنی آنکھوں کے سامنے حاضر کیا ہوا پائے گا(کتاب میں لکھا دیکھ کرتوخوش ہو گا)۔

وَمَا عَمِلَتْ مِن سُوٓءٛ تَوَدُّ  لَوْ أَنَّ بَيْنَـهَا وَبَيْنَهُۥٓ أَمَدَاۢ بَعِيدٙاۗ

  • And on that day he who did conduct evil shall desire that in between him and that moment was a distant interval of time.

  • اور جوبرائی پر مبنی  عمل اس نے کیا تھا تواس کے متعلق خواہش کرے گا کہ کاش اس کے اور اس برائی کے لمحے کے مابین ایک طویل فاصلہ ہوتا(اس عمل کو نہ کر پایا ہوتا)۔

وَيُحَذِّرُكُمُ ٱللَّهُ نَفْسَهُۥۗ

  • And Allah the Exalted warns you to remain vigilant of His injunctions.

  • محتاط رہو؛اللہ تعالیٰ تم لوگوں میں اپنے احکام کے متعلق  سمجھداری سے محتاط رہنے کا رویہ پیدا فرماتے ہیں(ہر طرح کے معاملات اور حالات سے نمٹنے کی ہدایت دے کر)

وَٱللَّهُ رَءُوفُۢ بِٱلْعِبَادِ .3:30٣٠

  • And be sure that Allah the Exalted is Gracious-Protector-Gentle with/for His allegiants. [3:30]

  • یاد رہے؛ اللہ تعالیٰ بندوں کے ساتھ ہمیشہ نرمی،لطافت،شفقت فرمانے والے ہیں۔

Root: ر ء ف


قُلْ إِن كُنتُـمْ تُحِبُّونَ ٱللَّهَ

  • You the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "If you people have been loving Allah the Exalted

  • آپ(ﷺ مدعیان ایمان کو)واضح فرما دیں’’اگر تم لوگ اللہ تعالیٰ سے  لگن اور تعلق خاطرچاہتے رہے ہو۔

فَٱتَّبِعُونِـى

  • Then to demonstrate and prove it, you are instructed to heartily and diligently follow me in letter and spirit without in between there a third party intervention and influence.

  • تو اس کے حصول کے لئے تم لوگ صدق دل سے اس انداز میں میری پیروی کرو کہ میرے اور تمہارے درمیان تیسرا حائل نہ ہو۔

يُحْبِبْكُـمُ ٱللَّهُ

  • If you acted accordingly, Allah the Exalted will in response-reciprocally would love-appreciate and acknowledge you people

  • ایسا کرنے پر اللہ تعالیٰ تم سے لگن اور تعلق خاطرفرمائیں گے۔

وَيَغْفِرْ لَـكُـمْ ذُنُوبَكُـمْۗ

  • Moreover, He the Exalted would overlook and grant forgiveness for you people for your earlier wrong-doings.

  • اور وہ جناب تمہارا یہ طرز عمل اختیار کرنے پر تم لوگوں کی خاطر تمہارے ان  جرائم /مجرمانہ الزام تراشیوں سے جو تم کر چکے ہو پردہ پوشی فرماتے ہوئے معاف فرما دیں گے۔

Root: ذ ن ب

وَٱللَّهُ غَفُورٚ رَّحِـيـمٚ .3:31٣١

  • Remember, Allah the Exalted is the Forgiving-Overlooking and the Merciful". [3:31]

  • اور اللہ تعالیٰ کے متعلق یقین رکھو کہ درگزراور پردہ پوشی کرنے اوراکثر و بیشتر معاف فرمانے والے ہیں، منبع رحمت ہیں‘‘۔

قُلْ أَطِيعُوا۟ ٱللَّهَ وَٱلرَّسُولَۖ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "You people affectionately and wholeheartedly accept the word of Allah the Exalted and the word of the Messenger."

  • آپ(ﷺ)لوگوں سے کہیں’’تم لوگ اللہ تعالیٰ اور رسول(کریمﷺ)کے قول(قرءان مجید)کو صدق دل سے تسلیم کر کے اپنا لو‘‘۔

اطاعت اور اتباع میں فرق

فإِن تَوَلَّوْا۟

  • In response, if they people purposely about-faced without heeding it:

  • جواب میں اگر وہ اظہار نفی کے انداز میں ازخود کچھ کہے بغیرپلٹ گئے۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ لَا يُحِبُّ ٱلْـكَـٟفِرِينَ .3:32٣٢

  • Then remain cognizant of the fact that Allah the Exalted certainly not appreciates and approves for nearness and liking the disavowers. [3:32]

  • (توآپ کو پرملال ہونے کی ضرورت نہیں)کیونکہ اللہ تعالیٰ آپ کا اور قرءان مجید کا انکار کرنے والوں سے   یقیناًتعلق خاطر نہیں رکھتے۔


إِنَّ ٱللَّهَ ٱصْطَفَىٰٓ ءَادَمَ وَنُوحٙا

  • Indeed, Allah the Exalted had granted distinction and elevated stature to Adam [alai'his'slaam], and to Noah [alai'his'slaam]

  • برتری اور فوقیت دیئے جانے کی تاریخ سے مطلع رہو؛اللہ تعالیٰ نے آدم اور نوح(علیہ السلام)کوبرتری اور فوقیت کے لئے ازخود منتخب فرمایا تھا۔

Root: ص ف و

وَءَالَ إِبْرَٟهِيـمَ وَءَالَ عِمْرَٟنَ

  • And to the clan of Iebra'heim [alai'his'slaam] and the clan of Imr'aan; [Allah is pleased with him]

  • اورابراہیم(علیہ السلام)اور عمران سے تعلق رکھنے والے لوگوں کو

عَلَـى ٱلْعَٟلَمِيـنَ .3:33٣٣

  • This distinction and preference was over their contemporaries in the world. [3:33]

  • انہیں ان تمام پرجو موجود تھے(ملائکہ،جنات،انسان)فوقیت سے نوازا گیا۔ 

ذُرِّيَّةَۢ بَعْضُهَا مِنۢ بَعْضٛۗ

  • Those families were the progeny; some of them were the offspring of some other.

  • قبیلوں میں سے منتخب لوگوں کی حیثیت ذریت کی تھی۔ان میں  سے بعض  بعض کی ذریت تھے۔

Root: ذ ر ر

وَٱللَّهُ سَـمِيعٌ عَلِيـمٌ .3:34٣٤

  • Be mindful, Allah the Exalted is eternally the Listener, the Fountain of Knowledge - Setter of sciences. [3:34]

  • یہ حقیقت ذہن نشین رہے،اللہ تعالیٰ  ہر لمحہ ہر آواز کو سننے والے ہیں، منبع علم ہیں۔


إِذْ قَالَتِ ٱمْرَأَتُ عِمْرَٟنَ

  • Know the history: When the wife of Imr'aan said:

  • عیسیٰ (علیہ السلام)کی تاریخ سے  اس لمحے سےروشناس ہو جاؤ جب عمران کی بیوی نے کہا:

رَبِّ إِ نِّـى نَذَرْتُ لَكَ مَا فِـى بَطْنِى مُحَرَّرٙا فَتَقَبَّلْ مِنِّـىٓۖ

  • "My Sustainer Lord! I have dedicated him for You the Exalted who is developing in my belly, he is exclusively devoted. Therefore, kindly accept him in dedication from me for some special service.

  • ’’میرے رب!میں نے اسے جو میرے پیٹ میں پرورش پا رہا ہے آپ کے لئے وقف کر دیا ہے،مکمل طور پرآزاد کردہ انداز میں آپ کی  راہ میں خدمات بجا لانے کے لئے۔اس لئے آپ جناب میری جانب سے  اس نذر کو  اپنے کسی خاص کام کے لئےشرف قبولیت عطا فرمائیں۔

إِنَّكَ أَنتَ ٱلسَّمِيعُ ٱلْعَلِيـمُ .3:35٣٥

  • The fact remains that You the Exalted are certainly the Ever Listener, eternally and absolutely the Knowledgeable." [3:35]

  • آپ کے متعلق یہ حقیقت ہے،آپ ہر لمحہ ہر آواز کو سننے والے ہیں،آپ منبع علم ہیں‘‘۔

فَلَمَّا وَضَعَتْـهَا قَالَتْ رَبِّ إِ نِّـى وَضَعْتُـهَآ أُنثَىٰ

  • [contrary to her expectation of male child] Thereby, when she had delivered it (pregnancy), she said: "My Sustainer Lord! I have delivered her (pregnancy) a female".

    •  پھرمدت  مکمل ہونے پر جوں ہی اس نے اس حمل کو وضع کیا اس نے کہا’’یا رب!میں نے تو اس (نذر)کو مؤنث پیدا کر دیا ہے۔

    Root: و ض ع

وَٱللَّهُ أَعْلَمُ بِمَا وَضَعَتْ

  • -- And Allah the Exalted best knew about her that she had delivered --.

  • ۔۔(یہ بات ان کی سادگی اور مخلصانہ خواہش کی وجہ سے تھی)۔کیونکہ اللہ تعالیٰ کو تو اس کے متعلق بخوبی علم تھا جو اس نے جناتھا۔۔

وَلَيْسَ ٱلذَّكَرُ كَٱلۡأُنثَىٰۖ

  • -- And in any case the male is never like the female --.

  • ۔۔اور ویسے بھی کوئی بھی مذکر مؤنث کی مانند نہیں ہوتا(کہ اس کے متعلق بتانے کی ضرورت پڑے)۔۔

وَإِ نِّـى سَـمَّيْتُـهَا مَـرْيَـمَ

  • [reverting from parenthetic, she had further said] "And I have named her Maryem

  • اور میں نے اس کا نام مریم رکھا ہے۔

وِإِ نِّـىٓ أُعِيذُهَا بِكَ وَذُرِّيَّتَـهَا مِنَ ٱلشَّيْطَٟنِ ٱلرَّجِيـمِ .3:36٣٦

  • And I seek Your refuge for her and her (would be) offspring from the accursed Shai'atan [Satan]" [3:36]

  • اور میں نے اسے اور اس کی (ہونے والی)ذریت کو آپ جناب کی پناہ میں دے دیا ہے دھتکارے ہوئے شیطان سے حفاظت کے لئے‘‘۔

Root: ذ ر ر;  ر ج م;  ع و ذ

فَتَقَبَّلَـهَا رَبُّـهَا بِقَبُولٛ حَسَنٛ

  • Thereupon, her Sustainer Lord granted her a pleasant acceptance.

  • (اس بے لوث جذبے کی قدر فرماتے ہوئے)اس(مریم کی والدہ)کے رب نے اسے(مریم)اپنے خاص مقصد  کی تکمیل کے لئے قبول فرما لیا، یہ باوقار مستحق شرف قبولیت تھا۔

وَأَنۢبَتَـهَا نَبَاتٙا حَسَنٙا

  • And He the Exalted caused her (Maryan) rearing, in the style and manner of nicely reared plants.

  • اور ان جناب  نےاسے (مریم)کواس انداز میں پرورش پانے دیا جیسے توجہ سے خوبصورت پودوں کو پروان چڑھایا جاتا ہے،؛موزونیت اور وقار کی جانب بڑھتے ہوئے۔

وَكَفَّلَـهَا زَكَرِيَّاۖ

  • And He the Exalted assigned to Zakaria [alai'his'slaam] the responsibility of her guardianship.

  • اور ان جناب نے اسے(مریم) زکریا (علیہ السلام)کی ذمہ داری میں دیا تھا(اگرچہ کفیل بننے کے اور بھی خواہش مند تھے)۔

كُلَّمَا دَخَلَ عَلَيْـهَا زَكَرِيَّا ٱلْمِحْرَابَ وَجَدَ عِندَهَا رِزْقٙاۖ

  • Whenever Zakaria [alai'his'slaam] had entered the secluded chamber of the Mosque to meet her, he had always found by her side some eatables.

    • ہر بار جب زکریا (علیہ السلام)مخصوص حجرے میں ان سے ملاقات کے لئے داخل ہوئے انہوں نے ان کے پاس کھانے پینے کی اشیاء کو موجود پایا تھا۔

    Root: د خ ل

قَالَ يٟمَرْيَـمُ أَنَّـىٰ لَكِ هَـٰذَاۖ

  • [one day] He (Zakaria) asked; "O Maryam! how and from where this sustenance comes for you?"

  • (ایک دن)انہوں نے پوچھا’’اے مریم!یہ(خوردونوش کی جانب اشارہ کرتے ہوئے)کیسے اور کہاں سے آپ کے لئے آتا ہے؟‘‘

قَالَتْ هُوَ مِنْ عِندِ ٱللَّهِۖ

  • She (Maryam) replied: "That is supplied by the grace of Allah the Exalted.

  • اس(مریم)نے جواب دیا’’وہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے عنایت ہے۔

إِنَّ ٱللَّهَ يَرْزُقُ مَن يَشَآءُ بِغَيْـرِ حِسَابٛ .3:37٣٧

  • Indeed, Allah the Exalted provides sustenance for whomever He decides, without reckoning and causality." [3:37]

  • یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ جس کسی کے لئے  ایسا کرنا مناسب سمجھتے ہیں اسے   حساب وکتاب اورعلت و معلول سے ماوراءسامان زیست عنایت فرماتے ہیں‘‘۔

هُنَالِكَ دَعَا زَكَرِيَّا رَبَّهُۥۖ

  • [Maryem's reply clicked a reality against causality phenomenon] On hearing Maryam's reply, Zakaria [alai'his'slaam] there and then prayed to His Sustainer Lord

  • (باریک نکتے پر مبنی بات سن کر)وہیں کھڑے کھڑے زکریا (علیہ السلام)نے اپنے رب کوپکارا۔

قَالَ رَبِّ هَبْ لِـى مِن لَّدُنكَ ذُرِّيَّةٙ طَيِّبَةٙۖ

  • He said, "My Sustainer Lord! do grant for me a nice beneficial generation, in keeping with my circumstances a special grace.

  • انہوں نے کہا’’میرے رب!میرے لئے فائدہ مند، نفیس  سعادت مندنسل عنایت فرمائیں،میرے حالات کے پیش نظر آپ جناب کی جانب سے عنایت خاص۔

Root: ذ ر ر

إِنَّكَ سَـمِيعُ ٱلدُّعَآءِ .3:38٣٨

  • Indeed, You the Exalted are always the listener of the prayer". [3:38]

  • آپ کے متعلق یہ حقیقت ہے کہ آپ ضرورت پر مبنی دعا کو ضرور سنتے ہیں‘‘

فَنَادَتْهُ ٱلْمَلَٟٓئِكَـةُ وَهُوَ قَآئِمٚ يُصَلِّـى فِـى ٱلْمِحْرَابِ

  • His prayer was accepted whereby the Angels called upon him (Zakaria [alai'his'slaam]), while he was standing for As-sa'laat: Time Bound Protocol of Servitude and allegiance, in the Secluded Chamber

    • اللہ تعالیٰ کی جانب سے فوری  قبولیت پر ملائکہ نے انہیں یہ بتانے کے لئے پکارا،جب وہ صلوٰۃ کی ادائیگی کے لئے ابھی کھڑے ہوئے تھے۔

    Root: ص ل و

أَنَّ ٱللَّهَ يُبَشِّـرُكَ بِيَحْيَـىٰ

  • That, "Indeed, Allah the Exalted congratulates you with good news of Yahya

  • کہ’’اللہ تعالیٰ آپ کو خوشخبری دے رہے ہیں،یحییٰ کے پیدا ہونے کے متعلق۔

مُصَدِّقَـاۢ بِكَلِمَةٛ مِّنَ ٱللَّهِ

  •  He will be an affirmer and testifier; this news conveyed to you is with the word- promise of Allah the Exalted.

  • ان کی حیثیت تصدیق کرنے والے کی ہوگی(اس کی جو ان  سے قبل نازل ہوا)۔یہ خبر اللہ تعالیٰ کی جانب سے وعدہ ہے۔

وَسَيِّدٙا وَحَصُورٙا وَنَبِيّٙا مِّنَ ٱلصَّٟلِحِيـنَ .3:39٣٩

  • And he will be honoured as distinguished dignitary and encircled by people in attendance; and at birth would be Elevated-Chosen Servant [Nabi], one of the righteous". [3:39]

  • اور ان کا مقام و مرتبہ عظمت و قار کے حامل سردار کا ہو گا،اور لوگوں کے جھرمٹ میں رہیں گے،اور پیدا ہوتے ہی نبی کے درجے پر فائز ہوں گے،اصلاح پر کاربندگروہ کے ایک فرد۔

Root: س و د

قَالَ رَبِّ أَنَّـىٰ يَكُونُ لِـى غُلَٟمٚ وَقَدْ بَلَغَنِىَ ٱلْـكِـبَـرُ وَٱمْرَأَتِـى عَاقِرٚۖ

  • He [Zakaria alai'his'slaam] said: "My Sustainer Lord! I am curious to know how a boy- male child would take existence for me in circumstances while old age has already overtaken me to its extremity; and further my wife is infertile?"

  • انہوں(زکریا علیہ السلام)نے کہا’’میرے رب!ایک بیٹا میرے لئے کیسے وجود پذیر ہو گا ان حالات میں جبکہ میں انتہائی عمر رسیدہ ہو چکا ہوں اور میری بیوی بھی بانجھ ہے‘‘۔

Root: ع ق ر

قَالَ كَذَٟلِكَ ٱللَّهُ يَفْعَلُ مَا يَشَآءُ .3:40٤٠

  • He the Exalted conveyed; "Exactly in the same circumstances it will happen as promised. Allah the Exalted does innovatively- new and creativeunprecedented whatever that He desires and decides." [3:40] 

  • انہوں(اللہ تعالیٰ)نے جواب دیا’’مطمئن رہیں انہی حالات میں ایسا ہو گا؛اللہ تعالیٰ  ہر اس نئے فعل کو انجام دیتے ہیں جس کا وہ ارادہ کرتے ہیں‘‘۔

قَالَ رَبِّ ٱجْعَل لِّـىٓ ءَايَةٙۖ

  • He (Zakaria [alai'his'slaam]) said: "My Sustainer Lord! For occasion of it do disclose- appoint for me some mark- clue of cognition."

  • انہوں(زکریا علیہ السلام)نے کہا’’میرے رب!آپ کسی بات کومیرے سمجھ جانے کےلئے بطور اشارہ مقرر فرما دیں‘‘۔

قَالَ ءَايَتُكَ أَ لَّا تُكَلِّمَ ٱلنَّاسَ ثَلَٟثَـةَ أَيَّامٛ إِلَّا رَمْزٙاۗ

  • He the Exalted said: "Your cognition mark is the inability to verbally communicate with the people for three complete days [day and night, without being dumb-19:10], except by mime - gesture-language.

  • انہوں(اللہ تعالیٰ)نے جواب دیا’’آپ کے لئے اشارہ آپ کا  تین دن تک زبان اور ہونٹوں سے لوگوں سے گفتگو کی صلاحیت کا مفقود ہو جانا ہے، سوائے   اشاروں کی زبان کے آپ بات نہیں کر پائیں گے۔

وَٱذْكُر رَّبَّكَ كَثِيـرٙا

  • And remember Allah the Exalted, excessively - most of the time.

  • توجہ رکھیں؛اپنے رب کو یاد کرتے رہیں،بکثرت۔

وَسَبِّـحْ بِٱلْعَشِىِّ وَٱلْإِبْكَـٟرِ .3:41٤١

  • And repetitively describe the praises of Allah the Exalted at dusk and dawn". [3:41]

  • اور شام ڈھلتے ہوئے اور صبح کے اوقات میں  تسبیح کریں۔

Root: س ب ح; ع ش ى


وَإِذْ قَالَتِ ٱلْمَلَٟٓئِكَـةُ يٟمَرْيَـمُ

  • And know fact of the same period when the Angels said: "O Maryam

  • اور جب وہ بھرپور جوان ہو گئی تو اس وقت ملائکہ نے کہا’’اے مریم!

إِنَّ ٱللَّهَ ٱصْطَفَىٰكِ وَطَهَّرَكِ

  • Be informed, Allah the Exalted has specially selected you for a distinct recognition; and has caused you to remain in state of "purity"

  • یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ نے  آپ کومنفرد انداز میں  منتخب فرمایا ہے اور آپ کو ہروقت مطہررہنے کا وصف دے دیا ہے۔

Root: ص ف و; ط ھ ر

وَٱصْطَفَىٰكِ عَلَـىٰ نِسَآءِ ٱلْعَٟلَمِيـنَ .3:42٤٢

  • And He the Exalted has specially selected you over the women of the worlds-human race. [3:42]

  • اور انہوں نے دنیا کی تمام عورتوں   پرآپ کامنفرد انتخاب  خود اپنے لئے فرمایا ہے۔

Root: ص ف و

يٟمَرْيَـمُ ٱقْنُتِى لِرَبِّكِ وَٱسْجُدِى

  • O Mar'yam; devoutly stand for your Sustainer Lord and prostrate.

  • اے مریم!اپنے رب کے حضور بندگی کے لئے کھڑی ہوں اورسربسجود ہوں۔

Root: ق ن ت;  س ج د

وَٱرْكَعِى مَعَ ٱلرَّٟكِعِيـنَ .3:43٤٣

  • And you kneel together in the company of those who kneel” [3:43]

  • اور آپ رکوع کریں رکوع کرنے والوں کی معیت میں(صلوٰۃ باجماعت ادا کریں)‘‘۔

Root: ر ك ع

ذَٟلِكَ مِنْ أَنۢبَآءِ ٱلْغَيْبِ نُوحِيهِ إِلَيكَۚ

  • This episode is the part of the news of the history - happenings not seen and perceived by your visual faculty; Our Majesty are verbally communicating it to you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam].

  • یہ ماضی کے واقعات پر مبنی خبروں میں سے ہے جو ہم جناب آپ(ﷺ)کی جانب بذریعہ کلام بیان کر رہے ہیں۔

وَمَا كُنتَ لَدَيْـهِـمْ إِذْ يُلْقُون أَقْلَٟمَهُـمْ

  • (in the manner of eye witness account) Thouh you were not corporeally by their side watching when they were casting lots by throwing their quills: old fashioned pens made from feather shaft to decide:

  • (اس انداز میں کہ آنکھوں دیکھا منظر بن جائے)اگرچہ آپ بنفس نفیس ان کے قریب موجود نہیں تھے جب  وہ لوگ اپنے پر والے قلم  پھینک رہے تھے

أَيُّـهُـمْ يَكْـفُـلُ مَـرْيَـمَ

  • As to who of them would be the guardian of Maryam.

  •  یہ فیصلہ کرنے کے لئے ان خواشمندوں میں سے کون مریم کا کفیل بنے گا۔

وَمَا كُنتَ لَدَيْـهِـمْ إِذْ يَخْتَصِمُونَ .3:44٤٤

  • Nor earlier were you corporeally with them when they were arguing-contesting amongst themselves for taking responsibility-guardianship of Maryam. [3:44]

  • اور نہ آپ اس سے قبل بنفس نفیس ان کے قریب موجود تھے جب وہ لوگ آپس میں  دعویدار ہونے پر مباحثہ کر رہے تھے(آخر فیصلہ قرعہ سے کرنے پر ہوا)۔

Root: خ ص م

إِذْ قَالَتِ ٱلْمَلَٟٓئِكَـةُ

  • [Neither were you besides her] When, be aware of the true history, the Angels had told this to Mar'yam:

  • (آپ اس دور میں بھی موجود نہ تھے)جب ملائکہ نے یہ بتایا تھا:

يٟمَرْيَـمُ إِنَّ ٱللَّهَ يُبَشِّـرُكِ بِكَلِمَةٛ مِّنْهُ

  • "O Mar'yam! Allah the Exalted is conveying you the good news (of a son) this pleasing news is accompanied with the word - an unfailing promise by Him the Exalted

  • ’’اے مریم! اس حقیقت سے مطلع ہوں، اللہ تعالیٰ آپ کو خوشخبری دے رہے ہیں ان کی جانب سے ایک وعدے کے ساتھ جو طے شدہ امر واقعی ہے۔

 

ٱسْـمُهُ ٱلْمَسِيحُ عِيسَى ٱبْنُ مَـرْيَـمَ

  • He is given the name Al-Messiah, Easa, the son of Mar'yam

  • ان کا نام ہے،المسیح عیسیٰ ابن مریم

وَجِيـهٙا فِـى ٱلدُّنْيَا وَٱلۡءَاخِـرَةِ وَمِنَ ٱلْمُقَرَّبِيـنَ .3:45٤٥

  • That he will be enjoying respectable and honourable stature both in this world and the Hereafter. And that he will be amongst the near-ones of Allah the Exalted. [3:45]

  • یہ وعدہ ہے وہ دنیا اور آخرت میں   ہمیشہ  عزت و احترام سے مرکز توجہ ہوں گے۔اور انہیں اللہ تعالیٰ کے مقرب ہونے کا اعزاز ہے۔

وَيُكَلِّمُ ٱلنَّاسَ فِـى ٱلْمَهْدِ وَكَهْلٙا

  • And the word-promise is that he (your son) will verbally converse with people in state of milk-sucking baby in the cradle, and later as a man in the old age.

    • اور وہ  لوگوں سے گفتگو کریں گے اس حال میں کہ ابھی آپ کی گود میں ہوں گے اور جب  بڑھاپے کی عمر میں پہنچ چکے ہوں گے۔

    Root: ك ھ ل; م ھ د

وَمِنَ ٱلصَّٟلِحِيـنَ .3:46٤٦

  • And he will enjoy distinction amongst the righteous people." [3:46]

  • اور ان کا شمار اصلاح کرنے والوں میں  ممتاز ہو گا۔

قَالَتْ رَبِّ أَنَّـىٰ يَكُونُ لِـى وَلَـدٚ وَلَمْ يَـمْسَسْنِى بَشَـرٚۖ

  • She (Mar'yam) interrupting their talk, [under perception of cause and effect phenomenon] reacted saying: "O my Sustainer Lord! [what strange are they talking] How would a son take birth for me in the circumstances when no man has touched me?"

  • انہوں(سیدہ مریم ؛ملائکہ کی جاری گفتگو کاٹتے ہوئے)نے کہا’’اے میرے رب!ایک بیٹا میرے لئے کیسے وجود پذیر ہو گا اس حالت میں کہ مجھے کسی مرد نے نہیں  چھوا‘‘۔

قَالَ كَذَٟلِكِ ٱللَّهُ يَخْلُقُ مَا يَشَآءُۚ

  • He the Exalted said: "Mar'yam! Exactly in the same circumstances [virgin] it will happen as promised. Allah the Exalted creates whatever He desires and decides

  • انہوں(اللہ تعالیٰ)نے بتایا’’جان لے، ایسا اس حالت ہی میں ہو گا(تیری بات تیرے علم اور ادراک کے مطابق اپنی جگہ صحیح ہے لیکن بشر کے عدم چھونے پر بھی بیٹا   پیدہ ہونا اس بات کا مظہر ہو گا)اللہ تعالیٰ  جو چاہتے ہیں اسے تخلیق فرماتے ہیں

Unprecedented and unique asexual creation- sort of Parthenogenesis

إِذَا قَضَىٰٓ أَمْرٙا

  • Subject to He the Exalted has finalized- decided about any matter, individual event

  • جب وہ جناب کسی بھی امر/معاملے کو نبٹا دینے کا فیصلہ کر دیتے ہیں۔

فَإِنَّمَا يَقُولُ لَهُۥ كُنْ

  • Thereat, He the Exalted merely expresses verbally for that thing- matter - affair - person, saying: "You become in evident- tangibly existing state - physical realm.

  •  تو وہ جناب اُس(امر) کے لئے صرف اتنا کہہ دیتے ہیں ”تومادی دنیا میں وجود پذیر ہو جا“

فَيَكُونُ .3:47٤٧

  • In compliance thereof that (abstract but effected thing- matter - affair - person) takes existence in physical realm (which can be known- cognizable by others). [3:47]

  • تکمیل حکم میں وہ (امر؛شئے،ذی حیات،وقوعہ) مادی دنیا کے لئے وجود پذیر ہوجاتا ہے۔‘‘

وَيُعَلِّمُهُ ٱلْـكِـتَٟبَ وَٱلْحِكْمَةَ وَٱلتَّوْرَىٰةَ وَٱلْإِنجِيلَ .3:48٤٨

  •  [Continuing their message, the Angels added] "And He the Exalted will teach him the Mother/Principal Book and wisdom; and will teach him Tor'at and In'jeel. [3:48]

  • (مریم کی توجہ پا کر ملائکہ نے گفتگو کو جاری رکھتے ہوئے مزید کہا)’’وہ جناب انہیں   کتاب خاص اور علم کو بہترین انداز میں بروئے کار لانے کی تعلیم دیں گے،اور تورات اور انجیل کی تعلیم۔

وَرَسُولٙا إِلَـىٰ بَنِىٓ إِسْرَٟٓءِيلَ

  • And he is the Messenger designated for the posterity- the sons of Iesraa'eel."

  • اور بھرپور جوان ہو جانے پر انہیں منصب رسالت پر فائز کر کے بنی اسرائیل کی جانب رسول مقرر فرمائیں گے‘‘۔

أَنِّـى قَدْ جِئْتُكُـم بِـٔ​َايَةٛ مِّن رَّبِّكُـمْۖ

  • [On attaining manly maturity and appointed Allah's Messenger] Easa son of Maryam addressed Bani Iesraa'eel that; "Indeed, I have come to you people along with unprecedented display-miraculous demonstration which is irrefutable evidence from your Sustainer Lord.

  • (یوں منصب رسالت پر فائز ہو کر عیسیٰ علیہ السلام نے بنی اسرائیل کو مخاطب کر کے کہا)’’میں تم لوگوں کے پاس آیا ہوں       عینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادت(آیت/معجزہ )کے ساتھ       جوتمہارےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی  ہے  کہ تمہارے رب کی جانب سے  سند اور برھان ہے۔

أَنِـىٓ أَخْلُقُ لَـكُـم مِّنَ ٱلطِّيـنِ كَهَيْئَةِ ٱلطَّيْـرِ

  • The evidence is that I cast-sculpt bird-like models before you people using some part of muddy clay

  • کہ میں  گیلی  مٹی  سے  جسد بناؤں گاپرندے کی ہیئت کی مانند  ، تمہارے لئے (ایک معنی خیز مظاہرہ ہو گا) ۔

Root: ھ ى ء

فَأَنفُخُ فِيهِ

  • Thereat, I blow in it

  • اس کو سنوار لینے کے بعد میں اس جسد میں پھونکوں گا۔

Root: ن ف خ

فَيَكُونُ طَيْـرَاۢ بِإِذْنِ ٱللَّهِۖ

  • Thereby it takes existence as living bird by the explicit will of Allah the Exalted. 

  • جس پر وہ(پرندے کی ہیئت والا جسد) اللہ تعالیٰ کے اذن سے   ذی حیات پرندے کے طور وجود پذیر ہو جائے گا۔

وَأُبْرِىٔ​ُ ٱلۡأَكْمَهَ وٱلۡأَبْرَصَ

  • And with Allah's prior will, I relieve the blind by birth and victim of vitiligo: a skin disorder in which smooth whitish patches appear on the skin

  • اور میں مادرزاد اندھے اوربرص سے متاثر شخص کواس حالت سے مبراکر دوں گا۔

وَأُحْىِ ٱلْمَوْتَـىٰ بِإِذْنِ ٱللَّهِۖ

  • And restore to life the naturally-clinically dead.

  • اور  طبعی طور پرمردہ قرار دئیے شخص کو زندہ حالت میں کر دوں گا، اللہ تعالیٰ کے اذن سے۔

وَأُنَبِّئُكُـم بِمَا تَأْكُلُونَ

  • And I tell you that which you people eat

  • اور میں تمہیں اس کے متعلق بتاؤں گا جو تم نے کھایا ہو گا۔

وَمَا تَدَّخِرُونَ فِـى بُيُوتِكُـمْۚ

  • And about that which you carefully store at homes.

  • اور اس کے متعلق بتاؤں گا جو تم لوگ اپنے گھروں میں احتیاط سے ذخیرہ کرتے ہو۔

إِنَّ فِـى ذَٟلِكَ لَءَايَةٙ لَّـكُـمْ

  • Indeed, this unprecedented display is certainly a vivid evidence for you:

  • یقیناً   ایک بے مثال نشانی اس مظاہرے میں موجود ہے جو تم لوگوں کے لئے  میرےمسیح اور رسول ہونے پر دلالت کرتی ہے۔

إِن كُنتُـم مُّؤْمِنِيـنَ .3:49٤٩

  • If you people have truly been the believers [3:49]

  • اگر تم لوگ ایمان والے تھے۔

وَمُصَدِّقٙا لِّمَا بَيْـنَ يَدَىَّ مِنَ ٱلتَّوْرَىٰةِ

  • And I am affirmer-certifier-sanctifier of that which is present before me as part of Tor'aat

  • اور میں اس کی تصدیق کرنے والے کی حیثیت سے آیا ہوں  جوتورات  میں درج کردہ میں سے میرے سامنے موجود ہے۔

وَلِأُحِلَّ لَـكُـم بَعْضَ ٱلَّذِى حُرِّمَ عَلَيْكُـمْۚ

  • And that I may declare permissible some of that which was made prohibited for you.

  • اور اس لئے کہ میں اس میں سے بعض کو تمہارے لئے حلال قرار دے دوں جو تم پر حرام کر دیا گیا تھا۔

وَجِئْتُكُـم بِـٔ​َايَةٛ مِّن رَّبِّكُـمْ

  • And Indeed, I have come to you people along with unprecedented display-miraculous demonstration which is irrefutable evidence from your Sustainer Lord

  • اور میں تم لوگوں کے پاس آیا ہوں       عینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادت(آیت/معجزہ )کے ساتھ       جوتمہارےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی  ہے  کہ تمہارے رب کی جانب سے  سند اور برھان ہے۔

فَٱتَّقُوا۟ ٱللَّهَ

  • Therefore, you people sincerely endeavour to attain the protection from Allah the Exalted

  • اس لئے تم لوگ تندہی سے محتاط رہتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے پناہ کے خواستگار رہو۔

وَأَطِيعُونِ .3:50٥٠

  • And listen and accept my word. [3:50]

  • اور میرے کہے کو تم لوگ تسلیم کرو۔

إِنَّ ٱللَّهَ رَبِّـى وَرَبُّكُـمْ فَٱعْبُدُوهُۗ

  • Indeed Allah the Exalted is my Sustainer-Lord and the Sustainer Lord of you people. Therefore, be subservient and allegiant to Him alone.

  • یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ میرے رب ہیں اور تم لوگوں کے رب ہیں۔اس لئے  ان کی بااظہار بندگی کرو۔

هَـٰذَا صِرَٟطٚ مُّسْتَقِيـمٚ .3:51٥١

  • This exclusive servitude and allegiance is the High Road: that leads safely and stably to the destination of peace and tranquillity:" [3:51]

  • یہ اظہار بندگی  صراط مستقیم: منزل کی جانب رواں دواں رکھنے والا راستہ ہے‘‘۔


فَلَمَّآ أَحَسَّ عِيسَىٰ مِنْـهُـمُ ٱلْـكُـفْرَ

  • Thereby, when Easa [alai'his'slaam] had ascertained the clandestine blaspheming undertaken by a group of them (the Non-believers)

  • (ان تمام مظاہرکوان کی رسالت کا انکار کرنے والوں کی جانب سےطلسماتی شعبدہ بازی کا پراپگنڈہ کئے جانے کی بنا پر۔المائدہ۔۱۱۰)جوں ہی  عیسیٰ(علیہ السلام)نے ان کی جانب سے توہین رسالت کی سازش کا مکمل ادراک کر لیا  تو:

قَالَ مَنْ أَنصَارِىٓ إِلَـى ٱللَّهِۖ

  • He enquired from Al-Hawariyun: "Who of the supporters of mine will accompany [be migrant] towards Allah the Exalted?"

  • انہوں نے(حفظ ما تقدم کے طور)پوچھا’’میرے انصار/رفقا میں سے کون اللہ تعالیٰ کی جانب(ہجرت)میں میرے ساتھ ہو گا‘‘۔

قَالَ ٱلْحَوَارِيُّونَ نَـحْنُ أَنصَارُ ٱللَّهِ

  • Hawariyun as a group replied: "We all are the supporters of Allah the Exalted.

  • ایمان لانے والے گروہ حواریون نے یک زبان جواب دیا’’ہم اللہ تعالیٰ کے رفقا ہیں۔

ءَامَنَّا بِٱللَّهِ وَٱشْهَدْ بِأَنَّا مُسْلِمُونَ .3:52٥٢

  • We have believed in Allah the Exalted and you do witness that we keep conducting on Islam". [3:52]

  • اللہ تعالیٰ پر ہم ایمان لے آئے ہیں،اور آپ اس پر گواہ ہیں کہ ہم دین اسلام پر رضا و رغبت سے کاربند ہیں‘‘۔

رَبَّنَآ ءَامَنَّا بِمَآ أَنزَلْتَ وَ ٱتَّبَعْنَا ٱلرَّسُولَ

  • They addressed Allah the Exalted saying: "Our Sustainer Lord; We have believed in that which You the Exalted have compositely sent. And we have heartily acted moving immediately behind the Messenger

  • انہوں نے اللہ تعالیٰ سے مخاطب ہوتے ہو ئےکہا’’ہمارے رب!ہم اس پر جو آپ نے مجتمع انداز میں نازل فرمایا ہے(انجیل)ایمان لے آئے ہیں اور ہم نے  آپ کے رسول (عیسیٰ علیہ السلام)کی عملی طور پرپیروی کی ہے۔

فَٱكْتُبْنَا مَعَ ٱلشَّٟهِدِينَ .3:53٥٣

  • Therefore, You the Exalted do enlist us with the testators/those eligible to be witness upon people." [3:53]

  • اس لئے آپ جناب ہمیں بھی تحریری انداز میں ان لوگوں کے ساتھ شامل فرما دیں جنہیں شہادت دینے کا استحقاق ہے‘‘۔

وَمَكَـرُوا۟ وَمَكَـرَ ٱللَّهُۖ

  • Mind it, they (the other group of Bani Iesraa'eel) plotted. And Allah the Exalted devised a [rescue] plan----when---

  • جان لو(عیسیٰ علیہ السلام کاادراک مبنی بر حقیقت تھا)انہوں(بنی اسرائیل کے انکار کرنے والے گروہ کے عمائدین)نے عیسیٰ(علیہ السلام)کے خلاف ایک سازش تیار کی تھی اور اللہ تعالیٰ نے ان کے لئے حفاظتی تدبیر/پلان تیار کیا تھا۔۔(جب)۔

وَٱللَّهُ خَيْـرُ ٱلْمَٟكِـرِينَ .3:54٥٤

  • -- Remain mindful, Allah the Exalted is the par excellence amongst those who plan for betterment, maintaining balance and equilibrium --. [3:54]

  • ۔۔اس حقیقت سے باخبر رہو؛ اللہ تعالیٰ تمام کے تمام منصوبہ بازوں سے بہترین تدبیر فرمانے والے ہیں۔۔

إِذْ قَالَ ٱللَّهُ

  • [And Allah the Exalted devised a rescue plan] When Allah the Exalted had told him the plan:

  • جب(اس پلان کے متعلق انہیں اعتماد میں لیا تھا) اللہ تعالیٰ نے بتایا۔

يٟعِيسَىٰٓ إِ نِّـى مُتَوَفِّيكَ وَرَافِعُكَ إِلَـىَّ

  • "O Easa, I am about to get you segregated, and moving you to elevated place for My cause-elevated place, (safe abode-Refer 23:50]

  • ’’اے عیسیٰ!یہ حقیقت جان کر مطمئن رہیں میں کسی بھی لمحے آپ کو الگ کرنے لگا ہوں،اور آپ کواپنی جانب رفعت دینے لگا ہوں

وَمُطَهِّرُكَ مِنَ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟

  • And am about to render you disassociated well rid of impure company of those who have disavowed.

    • اور آپ کو ان لوگوں کی نجس معیت سے دور کرنے لگا ہوں جنہوں نے آپ کو رسول اللہ/مسیحا ماننے سے انکار کیا ہے۔

    Root: ط ھ ر

   Rescue Plan of Allah the Exalted to thwart execution conspiracy against Easa alhaissalam

وَجَاعِلُ ٱلَّذِينَ ٱتَّبَعُوكَ فَوْقَ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوٓا۟ إِلَـىٰ يَوْمِ ٱلْقِيَٟمَةِۖ

  • And I am about to render those as ranked high till the Day of Rising who would have moved behind you upon those (second group of Bani Iesraa'eel) who have disavowed.

  • اور میں ان تمام کوجنہوں نے آپ کی اتباع کی ہے اعلیٰ اور ارفع قرار دیتا ہوں روز قیامت تک ان پر جنہوں نے آپ کو رسول ماننے سے انکار کیا ہے‘‘۔

ثُـمَّ إِلَـىَّ مَرْجِعُكُـمْ

  • Afterwards, on the Day of Requital, the return of you people for accountability is towards Me.

  • تم سب لوگ متنبہ رہو،بعد ازاں قیامت برپا ہونے کے تم نے احتساب کے لئے  میری جانب لوٹنا ہے۔

فَأَحْكُـمُ بَيْنَكُـمْ فِيـمَا كُنتُـمْ فِيهِ تَخْتَلِفُونَ .3:55٥٥

  • Thereupon, I will decide amongst you in the matter you keep differing. [3:55]

  • جس پر میں تمہارے مابین اس کے متعلق فیصلہ کروں گا جس نکتے کے متعلق تم لوگ باہمی اختلاف کرتے رہتے ہو۔

فَأَمَّا ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟ فَأُعَذِّبُـهُـمْ عَذَابٙا شَدِيدٙا فِـى ٱلدُّنْيَا وَٱلۡءَاخِـرَةِ

  • Thereby, as for those are concerned who disavowed, I will subject them, for reason of laid down principle-established practice, to punishment, a severe punishment in this world and in the Hereafter.

  • اس لئے متنبہ رہو، جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جنہوں نے قرءان مجید کو ماننے سے انکار کیا ہے انہیں میں  کربناک تکلیف میں مبتلا کروں گا، حیات دنیا کے دوران اور آخرت میں۔

وَمَا لَـهُـم مِّن نَّـٟصِرِينَ .3:56٥٦

  • And none at all of the helpers will come to afford help for them. [3:56]

  • اور مددگاروں میں سے کوئی ایک بھی ان کی مدد کرنے کا خواہشمند نہیں ہو گا۔

وَأَمَّا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَعَمِلُوا۟ ٱلصَّٟلِحَـٟتِ فَيُوَفِّيـهِـمْ أُجُورَهُـمْۗ

  • And regards those who heartily accepted-believed and conducted moderately in accordance with the Book, thereby, He the Exalted will pay them fully the reward of them.

  • اور جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جو رسول کریم اور قرءان مجید پر ایمان لائے اور انہوں نے صالح اعمال کئے  تو ان کی قدردانی کرتے ہوئے وہ جناب ان کے واجبات کی مکمل ادائیگی کر دیں گے۔

وَٱللَّهُ لَا يُحِبُّ ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .3:57٥٧

  • And remain cognizant that Allah the Exalted does not approve for nearness those who distort-transgress the prescribed code. [3:57]

  • متنبہ رہواللہ تعالیٰ ان لوگوں کو جوحقیقت کے منافی باتوں سے بگاڑ پیدا کرنے والے ہیں قابل قدر نہیں گردانتے۔(آل عمران۔۵۷)

ذَٟلِكَ نَتْلُوهُ عَلَيْكَ مِنَ الْءَايَٟتِ

  • Our Majesty are continuing narrating it: the episode of Easa [alai'his'slaam] upon you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] which is one of many unprecedented happening-unprecedented displays

  • یہ قصہ  تاریخی حقیقت ہے۔اسےہم آپ (ﷺ)کو ترتیب سےزبانی سنا رہے ہیں۔یہ  اپنے آپ میں آیات میں سے ہے

وَٱلذِّكْرِ ٱلْحَكِيـمِ .3:58٥٨

  • And Our Majesty are narrating it out of the miscellany of Memoir/Referential/Reference Book: Grand Qur’ān; its peculiarity is that it persistently exposes the infolded realities. [3:58]

  • اورمکمل سرگزشت(قرءان عظیم)میں سے جس کی خصوصیت پنہاں کو عیاں کر دینا ہے۔۔


إِنَّ مَثَلَ عِيسَىٰ عِندَ ٱللَّهِ كَمَثَلِ ءَادَمَۖ

  • It is a fact that the peculiar characteristic- the analogy of Easa [alai'his'slaam] regarding mode of his creation determined by and in the judgment of Allah the Exalted is like the peculiarity- individuality of Aa'dam [alai'his'slaam]

  • یہ حقیقت جان لو کہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے تخلیق کے حوالے سے عیسیٰ (علیہ السلام) کی مثال مثل ِ ِآدم(علیہ السلام)ہے۔

خَلَقَهُۥ مِن تُرَابٛ

  • He the Exalted had created him (Aa'dam [alai'his'slaam]) corporeally structured with substances of clay drawn from dust

  • انہوں نے انہیں (آدم) خاک کے ذرات  میں سے چنے مواد سےتخلیق کیا تھا۔

ثُـمَّ قَالَ لَهُۥ كُن فَيَكُونُ .3:59٥٩

  • Afterwards its finishing process, He the Exalted had verbally said for him: "You (Aa'dam) be in evident-tangibly existing state". Thereby, he took existence as a being. [3:59]

  • (بعد ازاں تکمیل مراحل انہوں نے ان کے لئے کہا تھا”تم(آدم)وجود پذیر ہو جاؤ“۔تکمیل حکم میں وہ مادی دنیا کے لئے وجود پذیر ہو گئے“۔ (آلِ عمران۔۵۹

ٱلْحَقُّ مِن رَّبِّكَ

  • That just narrated Episode (of Easa [alai'his'slaam]) is the infallible fact conveyed by your Sustainer Lord.

  • یہ جو عیسیٰ(علیہ السلام)کے متعلق بتایا ہے وہ بیان حقیقت ہے۔آپ کے رب کی جانب سے ناقابل تردید حقیقت کا حامل

فَلَا تَكُن مِّنَ ٱلْمُمْتَـرِينَ .3:60٦٠

  • Therefore, you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] should not henceforth remain worrywart for the people of the Book. [3:60]

  • اس لئے آپ(ﷺ)کو چاہئے کہ ظن و گمان کے پیروکاروں کے لئے متردد نہ ہوں۔

فَمَنْ حَآجَّكَ فِيهِ مِنۢ بَعْدِ مَا جَآءَكَ مِنَ ٱلْعِلْمِ

  • Thereby, if someone wrangled with you the Messenger about it (episode of Easa [alai'his'slaam]), after that crystallizing piece of knowledge that has reached you, take this recourse:

  • اس لئے اس بارے اگر کوئی آپ سے  الجھے بعد اس کے جوآپ کے پاس پہنچ گیا ہے جو علمی طور پر ٹھوس حقیقت ہے۔

فَقُلْ تَعَالَوْا۟ نَدْعُ أَبْنَآءَنَا وَأَبْنَآءَكُمْ وَنِسَآءَنَا وَنِسَآءَكُمْ وَأَنفُسَنَا وأَنفُسَكُـمْ

  • Thereat, invite the disputing party, saying: "You come to a mutually agreed prominent place; inviting our sons and your sons; and our women and your women, and our people and your people

  • تو  آپ کہیں’’تم لوگ باہمی طے شدہ مقام پر آؤ،ہم  بلائیں اپنے بیٹوں اور تمہارے بیٹوں کو،ہماری خواتین اور تمہاری خواتین کو،اور ہمارے نفوس  اور تمہارے نفوس کو۔

ثُـمَّ نَبْتَـهِلْ فَنَجْعَل لَّعْنَتَ ٱللَّهِ عَلَـى ٱلْـكَـٟذِبِيـنَ .3:61٦١

  • Thereafter the assembly, we should diligently divulge the standpoints mutually leaving to own opinion and judgment; thereafter we should declare the condemnation and curse- discard of Allah the Exalted should befall upon those who lie contradicting the fact publicly." [3:61]

  • بعد ازاں اجتماع ہم اپنا اپنا نظریہ اور نکتہ نظروضاحت سے بیان کرکے اسے اپنی رائے اور فیصلے پر چھوڑ دیں(مباحثہ نہیں)ایسا کر لینے کے بعد ہم قرار دیں کہ اللہ تعالیٰ کی لعنت برسرعام دانستہ جھوٹ بولنے والوں پر مستوجب ہے۔‘‘

إِنَّ هَـٟذَا لَـهُوَ ٱلْقَصَصُ ٱلْحَقُّۚ

  • -- It is a fact that this (the episode about Easa [alai'his'slaam] mentioned hereinbefore) is certainly its image by image verbal replica, absolutely accurate and truthful --.

  • ۔۔(آپ لوگ مطمئن رہیں)یقیناً یہ جو تم بیان کرو گے،بلاشبہ وہ لفظ بلفظ ناقابل تردید حقیقت پر مبنی قصہ ہے۔

وَمَا مِنْ إِلَٟهٛ إِلَّا ٱللَّهُۚ

  • And not at all there is alive amongst those considered as iela'aha: godheads for worship except Allah the Exalted

  • اور ان تمام کے تمام میں سے کوئی بھی صاحب حیات نہیں جنہیں لوگ  معبود قرار دیتے ہیں سوائے اللہ تعالیٰ کے۔۔

وَإِنَّ ٱللَّهَ لَـهُوَ ٱلْعَزِيزُ ٱلْحَكِيـمُ .3:62٦٢

  • And indeed Allah the Exalted is certainly the one and only Who is absolutely Dominant; and the Infinitely Just Supreme Administrator of the created realms. [in past, present and future] --. [3:62]

  • اور اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت ہے کہ بلاشبہ  وہ جناب  دائمی،ہر لمحہ،ہرمقام پرحتماً غالب ہیں۔ اوربدرجہ اتم انصاف پسند تمام موجود کائنات کے فرمانروا اور تمام پنہاں کو جاننے والے ہیں۔۔

فَإِن تَوَلَّوْا۟

  • [reverting from parenthetic, about the invitation] Thereat, in response to your offer if they people about faced without saying a word [it is reflective of falsity of their stand in the heart of their heart]

  • آپ کی پیشکش پر جواب میں اگر وہ اظہار نفی کے انداز میں ازخود کچھ کہے بغیرپلٹ گئے۔۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ عَلِيـمُۢ بِٱلْمُفْسِدِينَ .3:63٦٣

  • Thereby, the fact remains that Allah the Exalted is certainly ever aware of those who distort the fact and spread wicked conjectural ideas in society, create disorder, disquiet and imbalance. [3:63] 

  • ایسا ہونا تھا کیونکہ اللہ تعالیٰ یقیناً ایسے لوگوں کے متعلق بخوبی جانتے ہیں جو معاشرے میں ذہنی و فکری انتشار پھیلاتے ہیں۔(آل عمران۔۶۳)


قُلْ يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ تَعَالَوْا۟ إِلَـىٰ كَلِمَةٛ  سَوَآءِۭ بَيْنَنَا وَبَيْنَكُـمْ

  • You invite the people of Book: "O you the people of the Book! You come for harmony with us on a single proposition which is a common understanding between us and between you:

  • آپ (ﷺ)ارشاد فرمائیں’’اے اہل کتاب (دونوں یہود و نصاریٰ میں سے کسی سے سامنا اور تعلق ہو)!۔آئیں آپ اور ہم تمام باتوں سے بلند ہو کر ایک  فکری نکتہ نظر پرمتحد ہو جائیں جو ہمارے اور آپ کے مابین یکساں  ہے

أَ لَّا نَعْبُدَ إِلَّا ٱللَّهَ وَلَا نُشْـرِكَ بِهِۦ شَيْئٙا

  • That we would not submit in servitude to anyone except for Allah the Exalted exclusively and we would not ascribe anything associate with Him the Exalted.

  • وہ یہ کہ ہم سوائے اللہ تعالیٰ کے کسی کے لئے بھی اظہار بندگی نہیں کریں گے،اور نہ ہم  کسی بھی مادی شئے کو ان کے ساتھ اشتراک دیں گے۔

وَلَا يَتَّخِذَ بَعْضُنَا بَعْضٙا أَرْبَابٙا مِّن دُونِ ٱللَّهِۚ

  • And that some of us would not self assign to some others the status of  lords-sustainers besides Allah the Exalted."

  • اور یہ کہ ہم میں سے بعض  لوگ   اللہ تعالیٰ  کے سوائے اوران کے ساتھ ساتھ بعض دوسرے لوگوں کو زیر مقصد دانستہ  رب کی خصوصیت سے متصف  قرار   دیں گے اور نہ ایسا سمجھ کر انہیں  ارباب  کے طوراختیار کریں گے‘‘ ۔

فَإِن تَوَلَّوْا۟

  • In response, if they turned away showing non acceptance without orally saying it

  • آپ کی پیشکش پر جواب میں اگر وہ اظہار نفی کے انداز میں ازخود کچھ کہے بغیرپلٹ گئے۔۔۔

فَقُولُوا۟ ٱشْهَدُوا۟ بِأَنَّا مُسْلِمُونَ .3:64٦٤

  • Thereat, you people ask them: "Bear witness that we are those who are practicing Islam: maintainers of peace, tranquillity and harmony." [3:64]

  • تو آپ لوگ انہیں پکار کر کہیں’’تم لوگ اس بات کی شہادت تو دیتے جاؤ کہ ہم دین اسلام پر کاربند ہیں‘‘۔

يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • O you the people of the Book

  • اے اہل کتاب!

لِمَ تُحَآجُّونَ فِـىٓ إِبْرَٟهِيـمَ

  • Why do you wrangle about Iebra'heim [alaihis'slaam, calling him a Jew or Christian]

  • تم لوگ ابراہیم (علیہ السلام)کے حوالے  سے ایک دعوی کےساتھ دوسروں  سے  کس  وجہ سے الجھتے ہو(جبکہ انہوں  نےتمہارے آباؤاجداد کا نام مسلم رکھا تھا)  ۔

وَمَآ أُنزِلَتِ ٱلتَّوْرَىٰةُ وَٱلْإِنجِيلُ إِلَّا مِنۢ بَعْدِهِۦٓۚ

  • Despite the circumstantial fact that To'raat and Inj'eel were compositely sent only after his time-natural death.

  • تم لوگ کس بنا پر انہیں یہودی یا نصاریٰ میں شمار کرتے ہو باوجود یہ جانتے ہوئے کہ تورات کو بیک وقت نہیں ااتارا گیا تھا اور انجیل کو مجتمع انداز میں نازل نہیں کیا گیا تھا مگر ان کے طبعی موت مر جانے کے بعد کے ادوار میں۔

أَفَلَا تَعْقِلُونَ .3:65٦٥

  • Is this wrangling because you do not use intellect to differentiate?  [3:65]

  • کیا  یہ اس وجہ  سےہے کہ تم لوگ  تجزیہ/ تعقل کر کے نکتہ نظر نہیں بناتے؟۔

هٟٓأَنتُـمْ هَٟٓـؤُلَآءِ حَٟجَجْتُـمْ فِيـمَا لَـكُـم بِهِۦ عِلْمٚ

  • You are the people who indulged in controversy even in that matter about which knowledge was available for you to rely upon.

  • غور تو کرو؛تم لوگ ایسے ہو، تم لوگوں  نے دوسروں سے  اُس معاملے میں  اپنا نکتہ نظر ثابت کرنے کی کوشش کی جس کے لئے علم پر استوار تمہارے لئے دلیل موجود تھی۔

فَلِمَ تُحَآجُّونَ فِيمَا لَيْسَ لَـكُـم بِهِۦ عِلْمٚۚ

  • But why then you people wrangle in the matter about which no knowledge is available for you to rely upon?

  • اس لئے تم کس وجہ سے ایک  ایسےدعویٰ پر دوسروں سے الجھتے ہو جس کے لئے علم پر استوار دلیل تمہارے لئے قطعاً موجود نہیں۔

وَٱللَّهُ يَعْلَمُ وَأَنتُـمْ لَا تَعْلَمُونَ .3:66٦٦

  • And be mindful that Allah the Exalted completely knows everything while you people do not know about everything. [3:66]

  • ادراک رکھو؛اللہ تعالیٰ مکمل طور پر ہر بات کو بخوبی جانتے ہیں جبکہ تم لوگ ہر بات کے متعلق معلومات نہیں رکھتے۔

مَا كَانَ إِبْرَٟهِيـمُ يَـهُودِيّٙا وَلَا نَصْرَانِيّٙا

  • Iebra'heim never had association and recognition with community of Jews nor with the Christians

  • ابراہیم (علیہ السلام) نہ تو کبھی یہودی کی شناخت رکھتے تھے اور نہ کبھی نصاریٰ کہلواتے تھے۔

وَلَٟكِـن كَانَ حَنِيفٙا مُّسْلِمٙا

  • حقیقت اس کے برعکس ہے  وہ ہمیشہ،التزام و دوام سے فلسفہ توحیدپررہتے ہوئے دین اسلام پر کاربند انسان تھے۔

حنیفاً کےمعنی و مفہوم

وَمَا كَانَ مِنَ ٱلْمُشْـرِكِيـنَ .3:67٦٧

  • And be mindful, he (Iebra'heim [alaihis'slaam]) was never considered and identified as part of the Idolaters of his times. [3:67]

  • اورا نہیں کبھی بھی ان کے زمان کے مشرکین /اصنام پرستوں کے ساتھ سمجھا اور گردانا گیا تھا۔

إِنَّ أَوْلَـى ٱلنَّاسِ بِإِبْرَٟهِيـمَ لَلَّذِينَ ٱتَّبَعُوهُ

  • It is a fact that those people are certainly relatively nearer ones with Iebra'heim [alaihis'slaam] in timeline who conducted by following him in letter and spirit

  • حقیقت تو یہ ہے کہ یقیناً وہ لوگ ابراہیم(علیہ السلام)کے زیادہ قریبی ہیں جنہوں نے  خلوص و لگن سے ان کی اتباع کرتے ہوئے دین اسلام پر اپنے آپ کو قائم رکھا۔

وَهَـٟذَا ٱلنَّبِىُّ وَٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ۗ

  • And this Nabi (Muhammad [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam]): the Chosen and elevated subject of Allah the Exalted;  and those who have heartily accepted-believed in this Nabi and Book-Grand Qur’ān.

  • اوریہ نبی(محمدﷺ)ان کے زیادہ قریبی ہیں اور وہ لوگ جو ان نبی پر ایمان لائے ہیں۔

وَٱللَّهُ وَلِـىُّ ٱلْمُؤْمِنِيـنَ .3:68٦٨

  • Fact remains, Allah the Exalted is the Guide, Helper, Protector, Sustainer, Benefactor, Companion of those who have consciously and heartily believed  [3:68]

  • مطلع رہو؛ اللہ تعالیٰ ان لوگوں  کے ساتھ،ان کے حامی و ناصر ہیں جنہوں نے صدق دل سے رسول کریم اور قرءان مجید پر ایمان لانے کا اقرار کیا ہے

وَدَّت طَّآئِفَةٚ مِّنْ أَهْلِ ٱلْـكِـتَٟبِ لَوْ يُضِلُّونَكُـمْ

  • O you the believers be mindful: A scholarly-religious group of the people of Book is desirous that they could possibly make you people neglectful of the right course.

  • اے مدعیان ایمان محتاط رہو؛اہل کتاب میں سے علمی موشگافیوں میں مہارت رکھنے والے ایک گروہ  کی یہ خواہش رہی ہے  کہ تم لوگوں کو منحرف کر سکیں

Root: ط و ف

وَمَا يُضِلُّونَ إِلَّآ أَنفُسَهُـمْ

  • And by what they do for it they astray none except their selves

  • اگرچہ یہ الگ بات ہے کہ وہ منحرف اور غافل خود اپنے نفوس کو کرتے رہتے ہیں

وَمَا يَشْعُـرُونَ .3:69٦٩

  • While they intend not to recognise the dissonance between their desire and reality (victim of cognitive dissonance [since do not see beyond their selfish stakes]).  [3:69]

  • کیونکہ وہ اپنی خواہش اور حقیقت کے مابین تفاوت کا ادراک کرنا نہیں چاہتے۔[مفادات کی سوچ کے بھنور میں سے نکلتے ہی نہیں کہ کسی دوسری بات کا پیچھا کریں]

Root: ش ع ر

يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • O, you the people of the Book!

  • اے اہل کتاب!

لِمَ تَكْـفُرُونَ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • What for you people deny the Aa'ya'at: Unitary Verbal Passages of the Book of Allah the Exalted

  • تم لوگ کیوں اللہ تعالیٰ کی آیات(کتاب اللہ میں درج مندرجات)کا انکار کر رہے ہو

وَأَنتُـمْ تَشْهَدُونَ .3:70٧٠

  • Despite the fact that you know them explicitly like an observed affair? [3:70]

  • باوجود اس کے کہ ان کے متعلق مشاہدہ کی مانند علم رکھتے ہو۔

يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • O You the (clergy-knowledgeable) people of the Book!

  • اے اہل کتاب!

لِمَ تَلْبِسُونَ ٱلْحَقَّ بِٱلْبَٟطِلِ

  • What for you people clothe the Infallible Truth with the false conjectural fascinating assertions

  • کیوں تم لوگ بیان حقیقت کی تلبیس ظن  وگمان اور اختراع کردہ باتوں کو جھاگ کی مانندپھیلانے کے انداز سے کرتے ہو

وَتَكْـتُـمُونَ ٱلْحَقَّ

  • And withhold mentioning the Infallible Truth

  • اور ساتھ میں بیان حقیقت کو چھپاتے ہو(لوگوں کو بتاتے نہیں)۔

وَأَنتُـمْ تَعْلَمُونَ .3:71٧١

  • You people do it while you are fully aware of that? [3:71]

  • باوجود اس کے کہ تمہیں اس کا بخوبی علم ہے۔


وَقَالَت طَّـآئِفَةٚ مِّنْ أَهْلِ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • And scholarly-religious group of the people of Book directed their influenced people:

  • اور جان لو(ان کے منحرف کرانے کے داؤ پیچ)اہل کتاب میں سے علمی موشگافیوں میں مہارت رکھنے والے عمائدین نے(منافقین)سے کہا

Root: ط و ف 

ءَامِنُوا۟ بِٱلَّذِىٓ أُنزِلَ عَلَـى ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَجْهَ ٱلنَّـهَارِ وَٱكْفُرُوٓا۟ ءَاخِـرَهُۥ

  • "Pronounce accepting, that which has compositely been sent to the Believers, before them in the beginning of the day and at day-end denounce the belief therein.

  • تم لوگ  دن کے ابتدائی پہراس پر ایمان لانے کا ان کے سامنے اعلان کردوجو ایمان لانے والوں پر مجتمع انداز میں نازل کیا جا چکا ہے،اور دن کے آخر میں تم ان کے سامنے اس کا انکار کر دو۔

لَعَلَّـهُـمْ يَرْجِعُونَ .3:72٧٢

  • By this method, there is possibility that those of our people who have become believers might return to us [3:72]

  • اس سے امکان پیدا ہو گا کہ وہ(اہل کتاب میں سے صدق دل سے ایمان لانے والے)واپس پلٹ آئیں۔

وَلَا تُؤْمِنُوٓا۟ إِلَّا لِمَن تَبِــعَ دِينَكُـمْ

  • And that you should not believe any one, except he who literally followed your way of life."...

  • اور یہ کہ تمہیں کسی کے کہے کو تسلیم نہیں کرنا چاہیے  سوائے اس شخص کے جس نے تمہارے دین/نظریہ اور طرز حیات کی پیروی کی ہے‘‘۔

قُلْ إِنَّ ٱلْـهُـدَىٰ هُدَى ٱللَّهِ

  • -- You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce; "The fact remains that the Guide (Qur’ān) is the Guidance of Allah the Exalted." --

  • ۔۔آپ(ﷺ)ارشاد فرما دیں’’حقیقت یہ ہے  کہ  جسے ”الھدیٰ“حتمی اور مطلق ہدایت نامہ قرار دیا گیا ہے(قرء ان عظیم) وہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے ہدایت  ہے‘‘ ۔۔

أَن يُؤْتَـىٰٓ أَحَدٚ مِّثْلَ مَآ أُوتِيتُـمْ أَوْ يُحَآجُّوكُمْ عِندَ رَبِّكُـمْۗ

  • [reverting from parenthetic, to their private talk] "...should not believe in that anyone might be given what was given to you, or they might challengingly dilate with you about what is from your Sustainer Lord?" [Refer 2:76 also]

  • ’’(تمہیں کسی کے کہے کو تسلیم نہیں کرنا چاہیے)کہ کسی ایک کو بھی اس کے مثل عنایت کیا جا سکتا ہے جو تم لوگوں کوعنایت کیا گیا تھایا وہ تمہارے ساتھ  اس کے مخالف ثابت کرنے کی  دلیلیں دیں جو تمہارے رب کی جانب سے ہے‘‘۔

قُلْ إِنَّ ٱلْفَضْلَ بِيَدِ ٱللَّهِ يُؤْتِيهِ مَن يَشَآءُۗ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "The Bounty and Grace is in the Hand of Allah which He gives to the person whom He Willed." [Read in conjunction 2:90;2:105]

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرما دیں’’حقیقت یہ ہے  کہ منفرد عنایت و بزرگی کا دیا جانا تو اللہ تعالیٰ کے دائرہ اختیار میں ہے،وہ جناب اس عنایت خاص کو اُس کو دیتے ہیں جس کووہ اس کے لائق ہونے کا فیصلہ کرتے ہیں۔

وَٱللَّهُ وَٟسِعٌ عَلِيـمٚ .3:73٧٣

  • Moreover, remember that Allah the Exalted has domain beyond bounds-limits. He is eternally the all-Knowing. [3:73]

  • اور یقینا اللہ تعالیٰ  وسعت دینے والے،اور منبع علم ہیں۔

يَخْتَصُّ بِرَحْـمَتِهِۦ مَن يَشَآءُُۗ

  • He the Exalted by His own Will and Special Grace makes him uniquely dignified selection that He the Exalted likes.

  •  وہ جناب جسے چاہتے ہیں سوچے سمجھے فیصلے کے تحت اسے دوسروں سے ممتاز و افضل کر دیتے ہیں،ان کی رحمت کایہ اظہار ہے۔

وَٱللَّهُ ذُو ٱلْفَضْلِ ٱلْعَظِيـمِ .3:74٧٤

  • Know it; Allah the Exalted is the possessor of Infinite Bounty. [3:74]

  • اوریقینا اللہ تعالیٰ عظیم ترین فضل کرنے والے ہیں‘‘۔


وَمِنْ أَهْلِ ٱلْـكِـتَٟبِ مَنْ إِن تَأْمَنْهُ بِقِنطَارٛ يُؤَدِّهِۦٓ إِلَيْكَ

  • And amongst the people of the Book there is such a person that if you entrust him with enormous amount he will refund it to you.

  • ان کی نفسیات جاننے کے لئے مطلع ہوں کہ ایک ایسا شخص بھی اہل کتاب سے تعلق رکھنے والوں میں موجود ہوتا ہے کہ اگربکثرت مال بھی اسے بطور امانت دیں تو وہ اس کو آپ کی جانب لوٹا دے گا۔

  • Root: ق ن ط ر

وَمِنْـهُـم مَّنْ إِن تَأْمَنْهُ بِدِينَارٛ لَّا يُؤَدِّهِۦٓ إِلَيْكَ إِلَّا مَا دُمْتَ عَلَيْهِ قَآئِمٙاۗ

  • And there are also amongst them whom if you just entrust one Dinar (دينار dīnār)) he will not refund it except by you having kept standing with him: importunity.

  • اور ساتھ میں ایک ایسا شخص بھی ان سے تعلق رکھتا ہے جسے اگر آپ محض ایک دینار بطور امانت دے دیں تو وہ اسے آپ کی جانب نہیں لوٹائے گا ماسوائے اس طرح کے آپ اس سے لگاتار تقاضا کرتے رہیں۔

Root: د و م

ذَٟلِكَ بِأَنَّـهُـمْ قَالُوا۟ لَيْسَ عَلَيْنَا فِـى ٱلۡأُمِّيِّــۧنَ سَبِيلٚ

  • This conduct is for reason that they said:  "Some sort of censure-reproach-plea to allege is not incumbent upon us in the matter of dealings with Uemee'yien: the Gentiles (those who were not given Divine Book earlier)".

  • اس شخص کی یہ نفسیات اس بنا پر بنی ہے کہ انہوں(علمی موشگافیاں کرنے والے عمائدین) نے لوگوں سے کہا ہوا ہے’’کسی قسم کے مؤاخذہ کی قدغن ہم پران لوگوں کے ساتھ معاملات میں نہیں لگائی گئی جوقبل ازیں  کتاب سےبے بہرہ تھے۔

وَيَقُولُونَ عَلَـى ٱللَّهِ ٱلْـكَذِبَ وَهُـمْ يَعْلَمُونَ .3:75٧٥

  • Mind it that they keep saying to people the falsehood attributing it as authorized by Allah the Exalted, while they are fully aware of falsity of their utterances. [3:75]

  • اور یہ لوگ اللہ تعالیٰ سے منسوب کرتے ہوئے جھوٹ بولتے رہتے ہیں  باوجود اس کے کہ اصل بات انہیں معلوم ہے۔

بَلَـىٰ مَنْ أَوْفَـىٰ بِعَهْدِهِۦ وَٱتَّقَىٰ

  • No, it is their falsity. The fact is that subject to one having discharged the commitment with Him the Exalted and sincerely endeavoured to attain salvation, he will get absolved

  • ان کا مؤاخذہ سے بری الذمہ ہونے کا بیان جھوٹ ہے؛مؤاخذہ اس کا نہیں جس نے اپنے کئے ہوئے عہد کو نبھا دیا؛اورتندہی سے محتاط رہتے اللہ تعالیٰ سے پناہ کا خواستگار رہا۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ يُحِبُّ ٱلْمُتَّقِيـنَ .3:76٧٦

  • Because Allah the Exalted certainly approves for nearness those who sincerely endeavour to attain salvation. [3:76]

  • کیونکہ یقیناً اللہ تعالیٰ   متقین کو قابل قدر و تحسین گردانتے ہیں۔

إِنَّ ٱلَّذِينَ يَشْتَـرُونَ بِعَهْدِ ٱللَّهِ وَأَيْمَٟنِـهِـمْ ثَمَنٙا قَلِيلٙا

  • The authentic news about those people who earn a vile gain/make it a business at the cost of the Contract of Allah the Exalted and their own oaths is that:

  • اور جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جودانستہ معمولی دنیاوی فائدے کے عوض اللہ تعالیٰ سے کئے عہد اور اپنے ایمان کا سودا کر دیتے ہیں ان کا انجام جان لو۔

Root: ع ھ د

أُو۟لَـٟٓئِكَ لَا خَلَٟقَ لَـهُـمْ فِـى ٱلۡءَاخِـرَةِ

  • They are the people for whom nothing of significance shall be available in the Hereafter.

  • یہ وہ لوگ ہیں جن کے لئے آخرت کی زندگی میں عنایات میں قطعی کوئی حصہ نہیں۔

وَلَا يُكَلِّمُهُـمُ ٱللَّهُ وَلَا يَنظُرُ إِلَيْـهِـمْ يَوْمَ ٱلْقِيَٟمَةِ وَلَا يُزَكِّيـهِـمْ

  • And Allah the Exalted will neither address such people nor will pay them attention on the Day of Rising. And nor will He the Exalted cause their uplift/sanctification

  • اور نہ ہی  یوم قیامت اللہ تعالیٰ ان سے کلام کرنا پسند کریں گے،اور نہ ان پر نگاہ ڈالنا پسند کریں گے،اور نہ وہ جناب انہیں  اوپر اٹھان کے قابل بنائیں گے۔

Root: ز ك و

وَلَـهُـمْ عَذَابٌ أَلِيـمٚ .3:77٧٧

  • Be mindful, a severe punishment is prepared-in wait for them. [3:77]

  • اور جان لوایک دردناک عذاب اُن کیلئے تیار ؍ منتظر ہے

وَإِنَّ مِنْـهُـمْ لَفَرِيقٙا يَلْوُوۥنَ أَ لْسِنَتَـهُـم بِٱلْـكِـتَٟبِ لِتَحْسَبُوهُ مِنَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • And there is certainly a group reputed and recognized as scholars-clergy amongst them who twist their tongues for oratory while holding the Book. The keeping of the Book is for the purpose that you people might consider their oratory as if it were the contents of the Book.

  • یہ حقیقت بھی جان لو؛ایک  گروہ ان میں ایسا ہے جوفن تقریر کا ماہر ہے،وہ اپنی زبانوں کومختلف جہتوں میں گھما پھرا کر تقریر کرتے ہیں اس حال میں کہ کتاب کو تھامے ہوئے ہوتے ہیں تاکہ تم لوگ یہ سمجھو کہ اس کا بیان کتاب کے مندرجات میں سے ہے۔

وَمَا هُوَ مِنَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • Be mindful that their artfully twisted oratory is not the substance of the miscellany of the Book.

  • جبکہ درحقیقتت وہ کتاب کے مندرجات میں سے نہیں ہے۔

وَيَقُولُونَ هُوَ مِنْ عِندِ ٱللَّهِ وَمَا هُوَ مِنْ عِندِ ٱللَّهِ

  • And they keep saying/rhetoric to people: "This: what we have said is the word revealed by the grace of Allah". But the fact is that their statements are not the word from Allah the Exalted.

  • اور بار بار کہتے رہتے ہیں کہ وہ(ان کا تقریری بیان)اللہ تعالیٰ کی جانب  سے نازل کردہ ہے جبکہ حقیقت یہ ہے وہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے نازل کردہ نہیں ہے۔

وَيَقُولُونَ عَلَـى ٱللَّهِ ٱلْـكَذِبَ وَهُـمْ يَعْلَمُونَ .3:78٧٨

  • Mind it that they keep saying to people the falsehood attributing it as authorized by Allah the Exalted, while they are fully aware of falsity of their utterances. [3:78]

  • متنبہ رہو؛یہ لوگ اللہ تعالیٰ سے منسوب کرتے ہوئے جھوٹ بولتے رہتے ہیں  باوجود اس کے کہ اصل بات انہیں معلوم ہے۔


مَا كَانَ لِبَشَـرٛ أَن يُؤْتِيهُ ٱللَّهُ ٱلْـكِـتَٟبَ وَٱلْحُكْـمَ وَٱلنُّبُوَّةَ

  • It has never been the practice of him whom Allah the Exalted may have given the Book and the commanding authority, and the Elevated status and distinction over others that:

  • (متذکرہ لوگوں کے طرز عمل کے برعکس)اللہ تعالیٰ نے اس کے لئے مخصوص کتاب،اور آئین حیات اورنبوت عنایت فرما کر جس کسی بشر کوسرفراز فرمایا ان سے کوئی منفی طرز عمل منسوب نہیں کیا گیا ہے

ثُـمَّ يَقُولَ لِلنَّاسِ كُونُوا۟ عِبَادٙا لِّـى مِن دُونِ ٱللَّهِ

  • Afterwards, he would have been promulgating for the people: "You be the personal subjects and allegiants solely for me instead being for Allah the Exalted."

  • نہ یہ ان سے منسوب کیا گیا کہ بعد ازاں انہوں نے یہ کہا ہو’’تم لوگ میرے عبادت گزار بن جاؤ اللہ تعالیٰ کی بجائے/علاوہ‘‘۔

وَلَـٟكِن كُونُوا۟ رَبَّـٟنِيِّــۧنَ بِمَا كُنتُـمْ تُعَلِّمُونَ ٱلْـكِـتَٟبَ وَبِمَا كُنتُـمْ تَدْرُسُونَ .٧٩

  • On the contrary, he commanded the people saying: "You people be true allegiants for the Sustainer Lord since you have been teaching others the Book and because you yourself have been reading it". [3:79]

  • بلکہ انہوں نے لوگوں کو کہا’’رب کے عبادت گزار رہو اور تلقین کرتے رہوجو نازل کردہ کتاب کے مندرجات کی تعلیم لوگوں کو دیتے ہو اوراس کے مطابق جو خود پڑھتے ہو‘‘۔

Root: د ر س

وَلَا يَأْمُرَكُمْ أَن تَتَّخِذُوا۟ ٱلْمَلَٟٓئِكَـةَ وَٱلنَّبِيِّــۦنَ أَرْبَابٙاۗ

  • And neither it ever happened that he ordered you people to adopt the Angels and the Elevated and Distinction-granted Sincere Allegiants of Allah the Exalted as sustainer lords.

  • اورنہ انہوں نے کبھی تم لوگوں کو ملائکہ اور نبیوں کو رب کی صفت سے متصف قرار دے اور سمجھ کربطور ارباب اختیار کرنے کا حکم دیا ہے۔

ن ب و

أَيَأْمُـرُكُم بِٱلْـكُـفْرِ بَعْدَ إِذْ أَنتُـم مُّسْلِمُونَ .3:80٨٠

  •  [Ponder over it] Would such person will advise you to be in the state of denial and non-belief after you people are the adherents and followers of the prescribed code of conduct: Islam? [3:80]

  • کیا انہوں نے تمہیں   اللہ تعالیٰ کا انکار کرنے کا حکم دینا تھا بعد اس کہ تم دین اسلام پر کاربند ہو چکے تھے؟


وَإِذْ أَخَذَ ٱللَّهُ مِيثَـٟـقَ ٱلنَّبِيِّــۦنَ

  • Know it; When Allah the Exalted had obtained the Pledge-Covenant-Oath of the Chosen, Dignified and elevated Sincere Allegiants, to the effect:

  • (اور جب ا للہ تعالیٰ نے نبیوں سے میثاق لیا(جس کے نکات یہ ہیں

Root: ن ب و;  و ث ق   The Covenant between Allah the Exalted and His Chosen, Dignified and Exalted Sincere Allegiants

نبیوں کا میثاق اور ام الکتاب

لَمَآ ءَاتَيْتُكُـم مِّن كِتَٟبٛ وَحِكْمَةٛ

  • "That whatever I would have given to you by that time for communication to people a segment of a book (Mother/ Principal) and wisdom- knowledge of invisible- infolded facts, judging rightly in matters relating to life and conduct

  •  میں جب تم لوگوں کو کتاب (ام الکتاب)میں سے کچھ حصہ انفرادی طور پر ہر ایک کو عنایت فرما چکا ہوں گا لوگوں کو پہنچانے کے لئے اور حکمت کے بعض نکات عنایت فرما دوں گا۔"

ثُـمَّ جَآءَكُمْ رَسُولٚ مُّصَدِّقٚ لِّمَا مَعَكُـمْ

  • Afterwards the passage of time and having given to you all, a Messenger would have come to you people. This messenger would be a Testifier-Affirmer-Certifier-Sanctifier-Authenticator of that which was with you all

  •  بعد ازاں جب تمہارے پاس رسول آجائے گا جس کی خصوصیت اور پہچان یہ ہوگی کہ وہ اس کی جو تمہیں کتاب و حکمت میں سے عنایت کیا گیا ہو گا تصدیق کرنے والا ہو گا۔

لَتُؤْمِنُنَّ بِهِۦ وَلَتَنصُرُنَّهُۥۚ

  • It will be thenceforth binding for you people to affectionately believe in him and must help him".

  • تو تم اس(رسول) پر ضرور ایمان لاؤ گے اور ضرور اس کی مدد کرو گے‘‘۔

قَالَ ءَأَقْرَرْتُـمْ وَأَخَذْتُـمْ عَلَـىٰ ذَٟلـِكُـمْ إِصْرِىۖ

  • He (Allah) the Exalted asked them: "Have you willingly consented-pledged to stay by it and that you have self undertaken this Assignment-Covenant of Mine?"

  • “کیا تم اقرار کرتے ہو اور اس پر میرا دیا ہوا ذمہ،بوجھ اٹھاتے ہو؟

قَالُوٓا۟ أَقْرَرْنَاۚ

  • They responded: "We have heartily and sincerely consented."

  • “انہوں ( نبیوں) نے کہا ”ہم بخوشی اس کا اقرار کرتے ہیں۔

Root: ق ر ر

قَالَ فَٱشْهَدُوا۟ وَأَنَا۟ مَعَكُـم مِّنَ ٱلشَّٟهِدِينَ .3:81٨١

  • He (Allah) the Exalted said: "Thereby, you people record-testify your oath. And I also testify along with you as being amongst witnesses [having administered the oath]." [3:81]

  • (انہوں (ا للہ تعالیٰ)نے کہا’تم لوگ گواہ رہو اور میں بھی تمہارے ساتھ گواہوں میں ایک ہوں۔“(آلِ عمران۔ ۸۱

فَمَنْ تَوَلَّـىٰ بَعْدَ ذَٟلِكَ

  • Thereby, after having known this obligation with which the entire humanity is bound by the aforesaid oath, if someone deliberately turned away

  • اس میثاق کے پیش نظر زمان و مکان میں  جو کوئی ازخوداس سے پلٹ گیا

فَأُو۟لَـٟٓئِكَ هُـمُ ٱلْفَٟسِقُونَ .3:82٨٢

  • Thereat, they are the people who truly are "al-fasiqoona": aberrant: dissolutely move out of the bounds and restraints. [3:82]

  • تو ان کے متعلق جان لو؛ایسے لوگ درحقیقت  عہد/آئین شکن اور حدودوقیود کو پامال کرنے والے ہیں۔

Root: ف س ق

أَفَغَيْـرَ دِينِ ٱللَّهِ يَبْغُونَ

  • [Why they turned away?] Are they searching for a system which is other than (Allah's Deen) the Code of Conduct-Universal Constitution Prescribed by Allah the Exalted?

  • مگر کیا وہ لوگ ا للہ تعالیٰ کے وضع کردہ نظام کے علاوہ کسی دوسرے طریقہ کار کے متلاشی رہتے ہیں؟

وَلَهُۥٓ أَسْلَمَ مَن فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضِ طَوْعٙا وَكَرْهٙا

  • باوجود اِس روشن حقیقت کی موجودگی/حال میں کہ جو کوئی ذی حیات آسمانوں اور زمین میں موجود ہے درحقیقت اُس نے اپنے آپ کواُن /اللہ تعالیٰ کیلئے پابند و مکلف/ فرمانبردار/خود سپردگی میں دیا ہے،چاہے چاہت و رغبت و کشش کے زیر اثر اورچاہے نظام کی مجبوری اور ناگواری جبر کے زیر اثر۔

Root: ك ر ه

وَإِلَيْهِ يُرْجَعُونَ .3:83٨٣

  • And they all will be presented before Him the Exalted for accountability  [3:83]

  • اوران جناب کی جانب احتساب کیلئے انہیں پیش کیاجائے گا۔


قُلْ ءَامَنَّا بِٱللَّهِ وَمَآ أُنزِلَ عَلَيْنَا

  • You the Messenger [Muhammad صلى الله عليه وسلم] tell believers to pronounce; "We have believed in Allah the Exalted, and in that which has compositely been sent upon us

  • آپ(ﷺ)مومنین سے کہیں کہ  اہل کتاب سے کہیں ”ہم ا للہ تعالیٰ پر ایمان لائے ہیں اور اُس پر جو ہماری طرف مجتمع انداز میں نازل کیا گیاہے۔

وَمَآ أُنزِلَ عَلَـىٰٓ إِبْرَٟهِيـمَ وَإِسْـمَٟعِيلَ وَإِسْحَٟقَ وَيَعْقُوبَ وَٱلۡأََسْبَاطِ

  • And we believe in that which was compositely sent upon Iebra'heim, and Iesma'eile, and Ies'hauq; and upon Ya'qoob [عليهم السلام]; and in that sent upon his excessively numbered progeny.

  • اورہم اس پر ایمان لائے ہیں جو ابراہیم، اسماعیل،اسحاق،اور یعقوب (علیہم السلام)اور ان کی اولاد(بارہ قبیلے) کی طرف مجتمع انداز میں نازل کیا گیا تھا۔

Root: س ب ط

وَمَا أُوتِـىَ مُوسَـىٰ وَعِيسَىٰ

  • And we believe in the visual signs - unprecedented displays (miracles) which were given to Mūsā [alai'his'slaam] and Easa [alai'his'slaam], that were beyond your experience and understanding, explicitly indicative of evidence originating from Allah the Exalted.

  •  اورہم اس پر ایمان لائے ہیں جو موسیٰ اور عیسیٰ (علیہما السلام) کو  عینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادتیں(آیات )عنایت کی گئی تھیں    جوتمہارے تصور،تجربہ،سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں۔

وَٱلنَّبِىُّونَ مِن رَّبِّـهِـمْ

  • And we believe in the visual signs - unprecedented displays (miracles) which were given to all those declared as Chosen, Dignified and Exalted Sincere Allegiants [plural of Nabi علیہم السلام] to display as explicitly indicative of evidence originating from their Sustainer Lord.

  • اور ہم اس پر ایمان لائے ہیں جو اُن کے رب کی جانب سے زمان و مکان میں مبعوث فرمائے گئے تمام نبیوں کو    عینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادتیں(آیات ) عنایت کی گئی تھیں تھے   جوان لوگوں کے تصور،تجربہ،سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں ۔  

لَا نُفَرِّقُ بَيْـنَ أَحَدٛ مِّنْـهُـمْ

  • We do not cast-off - seclude a single one from amongst them.

  • ہم اُن(نبیوں علیہم السلام) میں سے کسی ایک کو بھی ایمان میں الگ تھلگ نہیں کرتے۔

:We do not seclude a single one in the Galaxy of Messengers.

وَنَـحْنُ لَهُۥ مُسْلِمُونَ .3:84٨٤

  • And we are subjects exclusively for Him the Exalted consciously following Constitution-Code of Conduct prescribed by Him the Exalted". [3:84]

  • اور ہم اُن (اللہ تعالیٰ)کیلئے ان کے بنائے آئین پر کاربند رہنے والے مسلمان ہیں‘‘۔

وَمَن يَبْتَغِ غَيْـرَ ٱلْإِسْلَٟمِ دِينٙا فَلَنْ يُقْبَلَ مِنْهُ

  • And in case someone purposely seeks other than Islam (submission to the discipline establishing state of peace, security, tranquillity, harmony and dynamic balance for all) as a Code of conduct of life, it will never be accepted from him.

  • متنبہ رہو؛جو کوئی دانستہ زیر مقصد اسلام کے بجزکسی آئین /نظام حیات  کو  بطور دستوراپنانے  کاخواہشمند ہو گا تو کبھی بھی اس کی جانب سے قبول کیا جائے گا۔

وَهُوَ فِـى ٱلۡءَاخِـرَةِ مِنَ ٱلْخَٟسِـرِينَ .3:85٨٥

  • Take note that he will be in the Hereafter one of those who cause loss to their selves. [3:85]

  • اور وہ شخص آخرت میں اپنا خسارہ کرنے والوں میں سے ایک ہو گا۔

Root: خ س ر

كَيْفَ يَـهْدِى ٱللَّهُ قَوْمٙا كَفَـرُوا۟ بَعْدَ إِيمَٟنِـهِـمْ

  • How come that Allah the Exalted shall guide the nation who disavowed after their acceptance and state of belief?

  • اللہ تعالیٰ  کیسے اس قوم(اپنے آپ کو نصاریٰ کہنے والے) کوصحیح طرز عمل کی ہدیات فرمائیں گے جنہوں نے اپنے ایمان لانے کے بعد اپنے میثاق کا انکار کر دیا ہے۔

وَشَهِدُوٓا۟ أَنَّ ٱلرَّسُولَ حَقّٚ

  • And they had testified that the Messenger (Easa [alai'his'slaam]) is infallibly true in his proclamation.

  • باوجود اس کے کہ انہوں نے اس بات کی شہادت دی تھی کہ اللہ تعالیٰ کے رسول(عیسیٰ علیہ اسلام) حقیقت میں مسیحابر حق ہیں

وَجَآءَهُـمُ ٱلْبَيِّنَـٟتُۚ

  •  And visual signs - unprecedented displays (miracles) had come to them which were beyond their experience and understanding, explicitly indicative of evidence originating from Allah the Exalted.

  • اورعینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادتیں(آیات ) ان  کے پاس آئی تھیں    جوان کے تصور،تجربہ،سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں۔

وَٱللَّهُ لَا يَـهْدِى ٱلْقَوْمَ ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .3:86٨٦

  • And be mindful, Allah the Exalted does not guide [against their will/considered decision] people who are mischievous-distorters and substitute facts with conjectures-myths-concocted stories. [3:86]

  • مطلع رہو؛اللہ تعالیٰ ان لوگوں کو جوحقیقت کے منافی باتوں سے بگاڑ پیدا کرنے والے ہیں ہدایت نہیں دیتے۔

أُو۟لَـٟٓئِكَ جَزَآؤُهُـمْ أَنَّ عَلَيْـهِـمْ لَعْنَةَ ٱللَّهِ وَٱلْمَلَٟٓئِكَـةِ وَٱلنَّاسِ أَجْـمَعِيـنَ .3:87٨٧

  • They are the people; their punishment-recompense is that the Condemnation-contemptuous discard by Allah the Exalted and the Angels, and by men is collectively destined for them [3:87]

  • یہ لوگ(ظالمین)ایسے ہیں جن کا انجام یہ ہے کہ مسلسل اللہ تعالیٰ کی اعتنا کے قابل نہیں،اور ان پر تمام ملائکہ اورلوگوں کی اجتماعی طور پرمذمت و نفرین ہے۔

خَٟلِدِينَ فِيـهَا

  • They will live-remain in that condemned and discarded state perpetually

  • آخر میں ان کا مقام دوزخ ہے جس میں وہ ہمیشہ رہیں گے۔

لَا يُخَفَّفُ عَنْـهُـمُ ٱلْعَذَابُ

  • The awarded punishment shall not be lightened in severity away from them

  • عذاب کو ان پر کم نہیں کیا جائے گا۔

وَلَا هُـمْ يُنظَرُونَ .3:88٨٨

  • And nor they will have a moment of relief-reprieve-suspension of punishment. [3:88]

  • اور نہ انہیں (ان کی درخواست پر)مہلت،وقفہ دیا جائے گا(عذاب مسلسل میں رہیں گے) ۔

إِلَّا ٱلَّذِينَ تَابُوا۟ مِنۢ بَعْدِ ذَٟلِكَ وَأَصْلَحُوا۟

  • Exception shall be for those who returned repenting after having done that and henceforth they consciously corrected/mended the direction of conduct.

  • استثناء ان میں سے ان کے لئے ہے جنہوں نے    اپنے اس انکار کے بعداحساس ندامت سے پلٹنے کا ارادہ کر لیا،اپنی اصلاح کر لی ۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ غَفُورٚ رَّحِـيـمٌ .3:89٨٩

  • Thereat, indeed Allah the Exalted is indeed Oft-forgiving-overlooking faults, the Merciful. [3:89]

  • کیونکہ یقینا اللہ تعالیٰ  درگزر اور پردہ پوشی کرنے اور معاف فرمانے والے ہیں، منبع رحمت ہیں۔

إِنَّ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟ بَعْدَ إِيمَٟنِـهِـمْ ثُـمَّ ٱزْدَادُوا۟ كُفْرٙا

  • Certain eventuality; for those who disavowed - apostatized after their Belief; afterwards they purposely delved deeper, with regard to disavowal - apostatizing, would be:

  • (مگر متنبہ رہو)ان لوگوں کے متعلق جو اپنے ایمان کے بعدانکار کرنے کے مرتکب ہوئے بعد ازاں وہ ہٹ دھرم ہوتے چلے گئے انکاری ہونے کے حوالے سے

لَّن تُقْبَلَ تَوْبَتُـهُـمْ

  • Their repentance and returning while dying shall not be accepted.

  • ان کی توبہ(موت کا اندازہ ہونے پر)قطعاً قبول نہیں کی جائے گی۔

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ هُـمُ ٱلضَّآلُّونَ .3:90٩٠

  • And they are the people who are truly the aberrant - astray. [3:90]

  • اور یہ ہیں وہ لوگ جو درحقیقت منحرف اور راستے سے بھٹکے ہوئے ہیں۔


إِنَّ الَّذِينَ كَفَـرُوا۟ وَمَاتُوا۟ وَهُـمْ كُفَّارٚ

  • The certain fact about those who had deliberately and persistently denied to accept the Belief, and had died while were still determined-staunch rejecters-Non Believers, is this predication

  • ان لوگوں کے متعلق مطلع رہو جنہوں نے اللہ تعالیٰ کے کلام پر مشتمل نازل کردہ کتاب کا انکار کیا اور اس پر قائم رہتے ہوئے اس حال میں مر گئے کہ ہٹ دھرم کافر تھے

فَلَن يُقْبَلَ مِنْ أَحَدِهِـم مِّلْءُ ٱلۡأَرْضِ ذَهَبٙا وَلَوِ ٱفْتَدَىٰ بِهِۦٓۗ

  • Thereby, even the Mass of the Earth in form of gold would never be accepted in case anyone of them offered hypothetically hoping that he got himself redeemed in return.

    • تو ان میں سے کسی ایک سے بھی زمین  بھر سونا قبول نہیں کیا جائے گاچاہے  وہ سزا سے معافی پانے کےلئے اس کو دینے کے قابل بھی ہو۔

    Root: ف د ى

أُو۟لَـٟٓئِكَ لَـهُـمْ عَذَابٌ أَلِيـمٚ

  • They are the people a severe punishment is prepared-in wait for them [on Day of Requital].

  • یہ وہ لوگ ہیں،ایک دردناک عذاب اُن کیلئے تیار ؍ منتظر ہے۔

وَمَا لَـهُـم مِّن نَّـٟصِرِينَ .3:91٩١

  • None amongst helpers will come forward for them to help. [3:91]

  • اور مددگاروں میں سے کوئی ایک بھی ان کی مدد کرنے کا خواہشمند نہیں ہو گا۔

لَن تَنَالُوا۟ ٱلْبِـرَّ حَـتَّىٰ تُنفِقُوا۟ مِمَّا تُحِبُّونَۚ

  • You people would not attain the Virtue until and unless you heartily spend [seeking appreciation and approval of Allah, the Al-bur'ro] a part of that wealth which you love most to retain.

  • تم لوگ نیکی [فراخی،وسعت /کشادگی قلب] کو اُس وقت تک پہنچ سکتے ہی نہیں جب تک [أَلْبَرُّ کی خوشنودی/رضا پانے کیلئے] اُس مال و دولت  میں سے  خرچ نہ کرو جس سے تم لوگ الفت و رغبت رکھتے ہو۔

وَمَا تُنفِقُوا۟ مِن شَـىْءٛ

  • And should you spend, in whatever manner [openly or secretively], anything of benefit

  • اور اگر تم کچھ بھی دوسروں کی فلاح و بہبود کے لئے خرچ کرو گے۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ بِهِۦ عَلِيـمٚ .3:92٩٢

  • Thereby for reason of omnipresence Allah the Exalted is certainly  aware of it. [3:92]

  • تو ہر لمحہ تمہارے اعمال زیر مشاہدہ ہونے کے سبب یقیناً اللہ تعالیٰ اس کے متعلق مکمل علم رکھتے ہیں۔


كُلُّ ٱلطَّعَامِ كَانَ حِـلّٙا لِّبَنِىٓ إِسْرَٟٓءِيلَ

  • The fact is that all meals were permissible for the posterity of Iesra'eel [Bani Iesraa'eel]

  • تمام کے تمام کھانے بنی اسماعیل کے لئے حلال قرار دئیے گئے تھے

Root: ط ع م

إِلَّا مَا حَرَّمَ إِسْرَٟٓءِيلُ عَلَـىٰ نَفْسِهِۦ مِن قَبْلِ أَن تُنَزَّلَ ٱلتَّوْرَىٰةُۗ

  • Except that which Iesraa'eel [Yaqoob alai'his'slaam] had forbidden upon his self in the times before Tor'aat was sent in isolated pieces (written on a number of tablets).

  • تورات کواجزاء(الواح)کی صورت نازل کئے جانے سے قبل کے زمانے میں؛سوائے اس کے جو اسرائیل(علیہ السلام)نے خود اپنی ذات کے استعمال کے لئے ممنوع کر دئیے تھے۔


قُلْ فَأْتُوا۟ بِٱلتَّوْرَىٰةِ فَٱتْلُوهَآ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask them: "Thereby, to substantiate your assertion you come to me along with At'Tor'aat, thereat, you read her 

  • آپ(ﷺ)ان(یہودیوں)سے کہیں’’آپ میرے پاس تورات کو ساتھ لے کر آئیں،پھر میرے سامنے اسے پڑھیں۔

إِن كُنتُـمْ صَٟدِقِيـنَ .3:93٩٣

  • Do it if you people were who express truthfully." [3:93]

  • ایساکرو اگر آپ لوگ سچائی بیان کرنے والے ہیں‘‘۔

فَمَنِ ٱفْتَـرَىٰ عَلَـى ٱللَّهِ ٱلْـكَذِبَ مِنۢ بَعْدِ ذَٟلِكَ

  • [they did not turn up with Tor'aat] Therefore, after this proof/factual statement if someone conjectured a contradictory falsity attributing it to be from Allah the Exalted:

  • چونکہ وہ تورات کے ساتھ واپس نہیں آئے اور سچائی اپنے آپ سے ظاہر ہو گئی اس لئے اگر کسی نے اس  کے بعد بھی اللہ تعالیٰ سے دانستہ زیر مقصدجھوٹ پر مبنی بات کو اختراع کیا۔ 

فَأُو۟لَـٟٓئِكَ هُـمُ ٱلظَّٟلِمُونَ .3:94٩٤

  • Thereby, they are truly the evil-doers-distorters-creators of imbalances-disorders-over stepping [3:94]

  • تو یہ ہیں وہ لوگ جو حقیقت کو باطل میں بدلنے والے ہیں۔

قُلْ صَدَقَ ٱللَّهُۗ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Allah the Exalted has stated the fact.

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’اللہ تعالیٰ نے سچائی کو بیان کر دیا ہے۔

فَٱتَّبِعُوا۟ مِلَّةَ إِبْرَٟهِيـمَ حَنِيفٙا

  • Therefore, you people incessantly follow the Community Code of life of Iebra'heim [alai'his'slaam]. He was ever Sincere and upright staunch monotheist believer.

  • اس لئے تم لوگ ملت ابراہیم (علیہ السلام)کے نظریہ اور طرز عمل پر استقلال،التزام و دوام سے پیروکار اورکاربند رہو؛وہ خود(ابراہیم علیہ السلام)ہمیشہ،التزام و دوام سے فلسفہ توحیدپررہے ۔

Root: م ل ل

حنیفاً کےمعنی و مفہوم

وَمَا كَانَ مِنَ ٱلْمُشْـرِكِيـنَ .3:95٩٥

  • And be mindful, he (Iebra'heim [alai'his'slaam]) was never considered and identified as a part of the Idolaters of his times." [3:95]

  • اورا نہیں کبھی بھی ان کے زمان کے مشرکین /اصنام پرستوں کے ساتھ سمجھا اور گردانا گیا تھا“۔


إِنَّ أَوَّلَ بَيْتٛ وُضِعَ لِلنَّاسِ لَلَّذِى بِبَكَّـةَ

  • Undoubtedly the FIRST House appointed for the peoples is certainly the one that was raised [from foundation by Iebra'heim along with Iesma'eile [alai'his'slaam]] on a plot in the Town named Becca [part of City: Mecca].

  • تاریخی حقیقت جان لو،اولین گھرجسے  اللہ تعالیٰ کو ماننے والوں کے لئےزمین پر بنایا اور مقرر کیا گیا تھا یقیناً وہی ایک ہے جسے ابراہیم(علیہ السلام)نے اسماعیل (علیہ السلام)کے تعاون سے اس سرزمین میں تعمیر کیا  جوقصبہ بکۃ کہلاتا تھا۔

Root: و ض ع    Controversy about Becca and Mecca

مُبَارَكٙا وَهُدٙى لِّلْعَٟلَمِيـنَ .3:96٩٦

  • Its prominent characteristic is that it is perpetuated. And that it is beacon of guidance for the mankind. [3:96]

  • اسے دوام کا حامل بنایا گیا ہے؛اورتمام لوگوں کے لئے  اللہ تعالیٰ کی جانب رخ موڑنے کے لئے مرکز ہدایت رہے گا۔

فِيهِ ءَايَٟتُۢ بَيِّنَـٟتٚ

  • Pointers of explicit nature are embedded within it (the House) which is exclusive peculiarity of it.

  • پنہاں حقیقتوں کی جانب رہنمائی کرنے والی متمیز نشانیاں اس کے اندر رکھ دی گئی ہیں۔

مَّقَامُ إِبْرَٟهِيـمَۖ

  • The standing place of Iebra'heim [alai'his'slaam] around it was declared Al-Masjidilha'raam].

  • ابراہیم(علیہ السلام بطور معمار)کے کھڑے ہونے کا مقام اس کے اطراف میں مسجد الحرام قرار دے دیا گیا تھا۔

وَمَن دَخَلَهُۥ كَانَ ءَامِنٙاۗ

  • And whoever had entered therein he was in a state of amnesty and security.

  • اور جو کوئی اس (مسجد الحرام)میں داخل ہوا تھاوہ امن  امان کا پرچارک رہا۔

وَلِلَّهِ عَلَـى ٱلنَّاسِ حِجُّ ٱلْبَيْتِ مَنِ ٱسْتَطَاعَ إِلَيْهِ سَبِيلٙاۚ

  • Beware, the Huj - pilgrimage of the House is an obligation imposed upon such people who have the capacity and wherewithal to travel towards it (the House) for the awe and reverence for Allah the Exalted.

  • اللہ تعالیٰ کے گھر کااللہ تعالیٰ کی رضا پانے کے جذبہ سے حج کرناان کو ماننے والوں پر لازم ہے،ان پر جس کے پاس اس کی جانب جانے کے وسائل موجود ہیں۔

Root: س ب ل

وَمَن كَفَـرَ

  • And if someone disavowed to discharge this obligation [he caused his own loss]

  • یاد رہے، جس کسی صاحب استطاعت نے حج کرنے سے انکار کیا(تو اس نے  موقع گنوا کر اپنا نقصان کیا)۔

فَإِنَّ ٱللَّهَ غَنِىٌّ عَنِ ٱلْعَٟلَمِيـنَ .3:97٩٧

  •  Thereby know it, Allah the Exalted is certainly the Absolutely Independent, not in need from all the peoples. [3:97]

  • کیونکہ اللہ تعالیٰ توتمام لوگوں کی جانب سے کسی بھی حاجت سے منزا اور ماوراء ہیں۔


قُلْ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask:

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں

يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • "O you the people of the Book!

  • ’’اے اہل کتاب!

لِمَ تَكْفُرُونَ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • What for you people deny the Aa'ya'at: Verbal Passages of the Book of Allah the Exalted

  • تم لوگ کس وجہ سے اللہ تعالیٰ کی قرءان مجید میں درج آیات کا انکار کر رہے ہو؟۔

وَٱللَّهُ شَهِيدٌ عَلَـى مَا تَعْمَلُونَ .3:98٩٨

  • While knowing that Allah the Exalted is a thorough Observer on what you people are doing?" [3:98]

  • باوجود یہ جاننے کے کہ اللہ تعالیٰ ہر لمحہ اس کا مشاہدہ کر رہے  ہیں جو کوئی بھی عمل تم لوگ کرتے ہو‘‘۔

قُلْ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask:

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں

يَٟٓأَهْلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • "O you the people of the Book!

  • ’’اے اہل کتاب!

لِمَ تَصُدُّونَ عَن سَبِيلِ ٱللَّهِ مَنْ ءَامَنَ تَبْغُونَـهَا عِوَجٙا

  • Why you people repulse himhe who has believed, off the High road prescribed by Allah the Exalted by portraying it as obscure-crooked

  • تم لوگ کیوں اس شخص کو اللہ تعالیٰ کی راہ سے پلٹانا چاہتے ہوجوایمان لا چکا ہے اس طرح سے کہ اس(راہ)کوناہموار اورکج ثابت کرنے کی جستجو اورتگ و دو کرتے رہتے ہو۔

Root: ع و ج

وَأَنتُـمْ شُهَدَآءُۗ

  • And you people keep observing him (has he turned or not).

  • اور تم لوگ اس کا مشاہدہ کرتے رہتے ہو(کہ وہ پلٹا ہے کہ نہیں)۔

وَمَا ٱللَّهُ بِغَٟفِلٛ عَمَّا تَعْمَلُونَ .3:99٩٩

  • Remain mindful, Allah the Exalted is never ever unmindful about what you people do." [3:99]

  • متنبہ رہو، اللہ تعالیٰ اُس سے کبھی  بھی غافل نہیں جو اعمال تم کرتے ہو‘‘۔

Root: غ ف ل


يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟

  • O those people who have proclaimed to have believed in the Messenger and Qur’ān, listen;

  • !اے وہ لوگوں جنہوں نے رسول کریم (محمّد ﷺ)اور قرءان مجید پرایمان لانے کا اقرارو اعلان کیا ہے توجہ سے سنو

إِن تُطِيعُوا۟ فَرِيقٙا مِّنَ ٱلَّذِينَ أُوتُوا۟ ٱلْـكِـتَٟبَ

  • [be cautious] If you accept the word of a group (Jews or of clergy - scholarly repute) amongst the people who were given the Book

  • اگر تم لوگوں نے ان لوگوں میں سے جنہیں اللہ تعالیٰ کے کلام پر مبنی کتاب سے نوازا گیا تھا اس فریق کی باتوں کو تسلیم کر لیاجو حقیقت کی جھوٹ سے تلبیس کرنے میں ماہر ہے۔

يَرُدُّوكُم بَعْدَ إِيمَٟنِكُـمْ كَٟفِرِينَ .3:100١٠٠

  • They would revert you, after your believing, in the earlier state of disavowers. [3:100]

  • تو وہ تمہیں تمہارے ایمان لے آنے کے بعد قرءان مجید کے منکرین کی حالت میں پلٹا دیں گے۔

وَكَيْفَ تَكْفُرُونَ

  • Look! How can you people keep it (Qur'aan) aside veiled - neglected?

  • مگر تم لوگ کیسے قرءان مجید  کو پس پشت ڈال سکتے ہو،اس سے غفلت برت سکتے ہو۔نگاہوں سے اوجھل کر سکتے ہو؟

وَأَنتُـمْ تُتْلَـىٰ عَلَيْكُـمْ ءَايَٟتُ ٱللَّهِ

  • While you are the people Verbal passages of the Book of Allah the Exalted are recited - read out word by word upon you 

  • جبکہ تم لوگ اس حال میں ہو کہ اللہ تعالیٰ کی آیات لفظ بلفظ تم لوگوں کو سنائی جا تی  ہیں۔

وَفِيكُـمْ رَسُولُهُۥۗ

  • And the Messenger of Him the Exalted (Muhammad [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam]) is present amongst you people as perpetually the revivalist, admonisher and the Teacher. [ref 6:19].

  • اور  اس حال  میں ہو کہ ان جناب کے رسول(محمد ﷺ)تم لوگوں کے مابین بحثیت نذیر/متنبہ کرنے والے اور معلم موجود ہیں(محذوف خبر کے لئے حوالہ 6:19)۔

وَمَن يَعْتَصِم بِٱللَّهِ

  • And should someone diligently and sincerely resorts to Allah the Exalted

  • اور جو کوئی اللہ تعالیٰ کے ساتھ مرجع خلائق کاتعلق استوار کر لیتا ہے

فَقَدْ هُدِىَ إِلَـىٰ صِـرَٟطٛ مُّسْتَقِيـمٛ .3:101١٠١

  • Thenceforth, he certainly got guided towards the High road: Course that keeps heading safely and stably to the destination of peace and tranquillity. [3:101]

  • تویقیناوہ منزل کی جانب رواں دواں رکھنے والے راستے کی جانب ہدایت دے دیا گیا۔

يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟

  • O, those people/you who proclaim to have accepted-become believers, listen;

  • !اے وہ لوگوں جنہوں نے ایمان لانے کا اقرارو اعلان کیا ہے توجہ سے سنو

ٱتَّقُوا۟ ٱللَّهَ حَقَّ تُقَاتِهِۦ

  • You people sincerely endeavour to attain the protection from Allah the Exalted; the intensity of endeavour must be absolute as is befitting for attaining the salvation from Him the Exalted.

  • تم لوگ تندہی سے محتاط رہتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے پناہ کے خواستگار رہو۔جیسا کہ ان کی مقرر کردہ حدود و قیود میں رہ کرمحفوظ بننے کا انداز ہے۔

وَلَا تَمُوتُنَّ إِلَّا وَأَنتُـم مُّسْلِمُونَ .3:102١٠٢

  • And you people should not die except being conscious followers of the Code-Islam: submission to the discipline establishing state of peace, security, tranquillity, harmony and dynamic balance for all. [3:102]

  • اِس لئے تم لوگوں کو سوائے اس حالت میں مرنا نہیں چاہئے کہ تم لوگ دین اسلام پر کاربند رہ رہے تھے۔

وَٱعْتَصِمُوا۟ بِحَبْلِ ٱللَّهِ جَـمِيعٙا

  • And you people (Believers) are directed to sincerely grasp and fortify yourselves by taking recourse to "the Rope of Allah the Exalted (Qu r’ān)", collectively

    • اور تم لوگ دلجمعی اور تندہی سے اپنے آپ کو اللہ تعالیٰ کی رسی(قرءان مجید)سے پیوستہ کر کے محفوظ کر لو،اجتماعی انداز میں (آگ کے گڑھے میں گرنے سے)

    Root: ع ص م

وَلَا تَفَرَّقُوا۟ۚ

  • And you people should not become self-disintegrated

  • اور تم لوگوں کو چاہئےکہ خودکو الگ الگ فرقوں میں منقسم نہ کرو۔

وَٱذْكُرُوا۟ نِعْمَتَ ٱللَّهِ عَلَيْكُـمْ

  • And take lesson in this regard by recalling and celebrating "the Grace-obliging beneficence of Allah the Exalted" bestowed upon you people
  • اور تم لوگ اللہ تعالیٰ کی اس عنایت خاص(قرءان مجید )کویاد رکھو۔

إِذْ كُنتُـمْ أَعْدَآءٙ فَأَ لَّفَ بَيْـنَ قُلُوبِكُـمْ

  • When you were mutually hostile adversaries; thereby by this beneficence (appointing the Messenger along with the Book-Qur’ān) He the Exalted developed affectionate coalescence in your hearts.

  • جو اس وقت عنایت فرمائی جب تم لوگ باہمی طور پردشمنوں کے طور رہتے تھے۔اس نعمت کے ذریعے انہوں نے تمہارے دلوں میں باہمی الفت و یگانت پیدا فرما دی۔

فَأَصْبَحْتُـم بِنِعْمَتِهِۦٓ إِخْوَٟنٙا

  • Thereby, you emerged as concentrated fraternity - brothers by taking recourse to the Grace-obliging beneficence of Him the Exalted (Qur’ān).

  • جس کے نتیجے  میں تم لوگ ابھرے،ان کی نعمت سے الصاق کے ذریعے، بھائی بھائی بن کر۔

وَكُنتُـمْ عَلَـىٰ شَفَا حُفْرَةٛ مِّنَ ٱلنَّارِ

  • And you people were earlier as if almost reached upon the brink of a pit crater having characteristic of filled with lava of burning fire---or erupted from fire

  • اور اس نعمت کے وقت تم لوگ پہنچ چکے تھے زمین میں بنے ایک ایسے گڑھے کے کنارے اوپر جو آگ سے ابھرنے والے لاوہ سے بنا ہو۔

فَأَنقَذَكُم مِّنْـهَاۗ

  • Thereby He the Exalted retrieved you away from her.

  • اس طرح ان جناب نے تم لوگوں کواس(گھڑے)سے دور کر کے گرنے سے بچا لیا۔

كَذَٟلِكَ يُبَيِّـنُ ٱللَّهُ لَـكُـمْ ءَايَٟتِهِۦ

  • This is how Allah the Exalted explicitly explicates His Aa'ya'at: Verbal Passages of Qur’ān rendering each point-concept-situation distinctly isolated and crystal clear for you people [for comprehension as was promised to the Messenger Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam]

  • اس تقابلی انداز میں اللہ تعالیٰ اپنی آیات کوتم لوگوں کے فہم کے لئے متمیز اور واضح فرما دیتے ہیں۔

لَعَلَّـكُـمْ تَـهْتَدُونَ .3:103١٠٣

  • The objective is that you people might heartily guide yourselves aright. [3:103]

  •  اس  کامقصد یہ  ہے کہ  تم لوگ ازخود صحیح سمت کی رہنمائی حاصل کر سکو۔

وَلْتَكُن مِّنكُـمْ أُمَّةٚ يَدْعُونَ إِلَـى ٱلْخَيْـرِ

  • And a group should exist undertaking the responsibility among you - society: Their characteristic is that they invite people towards : the Aa'ya'at of Grand Qur’ān [16:20] - the best conduct of tolerance and maintaining tranquillity and harmony

  • لیکن ایک ہم خیال  ٹولی کو تمہارے میں سے ازخود یہ ذمہ داری اٹھانے والا ہونا چاہئے جو مطلق بھلائی (قرءان مجید)کی جانب آنے کی دعوت دیتا رہے۔

وَيَأْمُـرُونَ بِٱلْمَعْـرُوفِ وَيَنْـهَوْنَ عَنِ ٱلْمُنكَرِۚ

  • And they enjoin to act according to the accepted social values-norms and forbid to stay away from the conjectural, unexampled, unauthentic and unverifiable myths

  • اور وہ لوگوں کومعروف باتوں کی تلقین کرتے رہیں اوربے سروپا،مبہم باتوں کی پیروی سے منع کریں۔

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ هُـمُ ٱلْمُفْلِحُونَ .3:104١٠٤

  • Know it, they are the people who are truly the endeavourers for perpetual success-fruitfulness. [3:104]

  • اور یہی ہیں وہ لوگ جودرحقیقت دائمی کامیاب اور سرخرو ہونے کے لئے کوشاں ہیں۔

وَلَا تَكُونُوا۟ كَٱلَّذِينَ تَفَرَّقُوا۟ وَٱخْتَلَفُوا۟ مِنۢ بَعْدِ مَا جَآءَهُـمُ ٱلْبَيِّنَـٟتُۚ

  • And you people should not be like those who had purposely disintegrated and mutually differed after distinct unprecedented displays - clarifications had come to them.

  • اور تم لوگوں کو ان کی مانندنہیں ہونا چاہیے جنہوں نے اپنے آپ کوطبقوں میں منقسم کر لیا اورمفادات کی خاطر آپس میں اختلاف کیا بعد اُس  علم،وضاحت  کے جو واضح متمیزآیات نے انہیں پہنچایا تھا۔

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ لَـهُـمْ عَذَابٌ عَظِيـمٚ .3:105١٠٥

  • And take note that they are truly the people a severe punishment in wait for them [3:105]

  • اور یہ ہیں وہ لوگ؛جان لیں ایک بڑا عذاب اُن کیلئے تیار اور منتظر ہے۔

يَوْمَ تَبْيَضُّ وُجُوهٚ وَتَسْوَدُّ وُجُوهٚۚ

  • [a severe punishment in wait for them] On the Day when some faces will be brightened and some faces blackened.

    •  جس دن بعض چہرے مسرت ونبساط سے دمکتے ہوں گے اور بعض چہرے سیاہ ہوں گے،

    Root: س و د

فَأَمَّا ٱلَّذِينَ ٱسْوَدَّتْ وُجُوهُهُـمْ أَكَفَرْتُـم بَعْدَ إِيمَٟنِكُـمْ

  • Thereat, as for those whose faces blackened, they will be asked (by Angels who recognize by apparent signs): "Did you people disavowed after remaining in the state of belief?

    • اِس لئے جن لوگوں کے چہروں پر سیاہی چھائی ہوئی گی[اِس شناخت/پہچان کی وجہ سے ملائکہ کہیں گے] ”کیا تم لوگوں نے مان لینے/ایمان لانے کے بعد انکار کر دیا تھا‘‘،

    Root: س و د

فَذُوقُوا۟ ٱلْعَذَابَ بِمَا كُنتُـم تَكْفُرُونَ .3:106١٠٦

  • Therefore, you people taste and suffer the punishment for the reason that you you kept disavowing." [3:106]

    • انہوں نے اثبات میں جواب دیا تو ملائکہ نے کہا’’اپنے لئے مقرر کردہ عذاب کو چھکو بسبب اس کے کہ تم لوگ مرتے دم تک  انکار کرتے رہے تھے‘‘۔

    Root: ذ و ق

وَأَمَّا ٱلَّذِينَ ٱبْيَضَّتْ وُجُوهُهُـمْ فَفِـى رَحْـمَةِ ٱللَّهِ

  • And regards those whose faces will be brightened, it is because they are under the umbrella of the Mercy of Allah the Exalted.

  • اور جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جن کے چہرے دمکتے سفید ہوں گے تووہ اللہ تعالیٰ کی رحمت کی چھاؤں میں ہوں گے۔

هُـمْ فِيـهَا خَٟلِدُونَ .3:107١٠٧

  • They will abide therein indefinitely. [3:107]

  • یہ لوگ ہمیشہ  اس (رحمت /جنت)میں رہیں گے۔

تِلْكَ ءَايَٟتُ ٱللَّهِ

  • These are the Aa'ya'at: Verbal constituent passages of Grand Qur’ān of Allah the Exalted

  • یہ(بیان کردہ) اللہ تعالیٰ کی  آیات ہیں۔

نَتْلُوهَا عَلَيْكَ بِٱلْحَقِّۗ

  • Our Majesty recite them distinctly word by word upon you the Messenger [Mohammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] conveying the infallible fact - for determined purpose of transcription by you to humanity.

  • ہم جناب  آپ(ﷺ)کو حسن ترتیب سے انہیں(آیات)سنا رہے ہیں،یہ موقع محل کی نسبت سےبیان حقیقت ہے ۔

وَمَا ٱللَّهُ يُرِيدُ ظُلْمٙا لِّلْعَٟلَمِيـنَ .3:108١٠٨

  • And Allah the exalted never has the intention of doing slightest injustice to people. [3:108]

  • مطلع رہو؛اللہ تعالیٰ تمام تخلیقات سے کسی قسم کی زیادتی کا ارادہ نہیں رکھتے۔

وَلِلَّهِ مَا فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَمَا فِـى ٱلۡأَرْضِۚ

  • Whatever exists in the Skies and whatever exists in the Earth celebrates the praises for Allah the Exalted.

  • اورسب کچھ جوآسمانوں میں موجود ہے اور سب کچھ جو زمین میں موجود ہے اللہ تعالیٰ کے لئے  شرف و کبریائی  بیان اور ظاہر کرتے ہوئےمصروف عمل ہے

وَإِلَـى ٱللَّهِ تُرْجَعُ ٱلۡأُمُورُ .3:109١٠٩

  • Be mindful that all matters are returned-presented for settling-decision-finality by Allah the Exalted. [ 3:109]

  • مطلع رہو؛تمام امور  نبٹائے جانے کے لئے اللہ تعالیٰ کی جانب  لوٹائے جاتے ہیں۔


كُنتُـمْ خَيْـرَ أُمَّةٛ أُخْرِجَتْ لِلنَّاسِ

  • You the believing Muslims have been a people best in goodness and moderation. This community was made prominent for the Mankind.

  • تم لوگ ،اے قرءان مجید پر ایمان لانے والو،بہترین نظریہ رکھنے والی معاشرتی اکائی ہو،جسے تمام انسانیت کے لئے مختلف قومیتوں سے نکال کرتشکیل دیا گیا ہے

تَأْمُـرُونَ بِٱلْمَعْـرُوفِ وَتَنْـهَوْنَ عَنِ ٱلْمُنكَرِ

  • You enjoin people to act according to the accepted social values-norms and forbid people to stay away from the conjectural, unexampled, unauthentic and unverifiable myths.

    • تم لوگ  عرفان، حق آگہی کی لوگوں کو تلقین کرتے ہو، اوربے سروپا،مبہم باتوں  میں مگن رہنے سے منع کرتے ہو۔

    Root: ن ك ر

وَتُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِۗ

  • And you people believe and place your trust with Allah the Exalted.

  • اور تم لوگ اللہ تعالیٰ پر ایمان رکھنے والے تھے۔

وَلَوْ ءَامَنَ أَهْلُ ٱلْـكِـتَٟبِ لَـكَانَ خَيْـرٙا لَّـهُـمۚ

  • And had the people of the Book accepted and believed [in the Messenger and Grand Qur’ān]; indeed it would have been much better for them.

  • اور اگر اہل کتاب(من حیث القوم)قرءان مجید پر ایمان لے آتے تویہ ان کے لئے بہتر ہوتا۔

مِّنْـهُـمُ ٱلْمُؤْمِنُونَ

  • The believers are present amongst them (People of the Book)

  • صدق دل سے قرءان مجید پر ایمان لانے والے قلب سلیم والے لوگ ان میں سے بھی ہیں۔

وَأَكْثَرُهُـمُ ٱلْفَٟسِقُونَ .3:110١١٠

  • But the majority of them are: "al-fasiqoona": aberrant: the promise breakers who dissolutely move out of the bounds and restraints. [3:110]

  • مگر ان میں زیادہ ترمیثاق شکن  اور تنفر انگیز علیحدگی اختیار کرنے کی سرشت والے ہیں۔

لَن يَضُـرُّوكُمْ إِلَّآ أَذٙىۖ

  • They (the People of the Book) might never cause you much loss except little annoyance and trifle hurt.

  • یہ لوگ(فاسقون)تم لوگوں کوضرر نہیں پہنچا سکیں گے سوائے    معمولی ایذا کے۔

وَإِن يُقَـٟتِلُوكُمْ يُوَلُّوكُمُ ٱلۡأَدْبَارَ

  • And if they wage war against you they will retreat-turn back.

  • اور اگر تمہارے خلاف جنگ چھیڑیں گے تو تم لوگوں سے پیٹھ پھیریں گے۔

ثُـمَّ لَا يُنصَرُونَ .3:111١١١

  • Afterwards, they will not be helped in the Hereafter. [3:111]

  • بعد ازاں انہیں مدد نہیں ملے گی۔


ضُرِبَتْ عَلَيْـهِـمُ ٱلذِّلَّةُ أَيْنَ مَا ثُقِفُوٓا۟ إِلَّا بِحَبْلٛ مِّنَ ٱللَّهِ وَحَبْلٛ مِّنَ ٱلنَّاسِ

  • Beware, the state of subjugation and dependence is struck upon them (Bani Iesraa'eel-Jews) as distinguished feature where ever they were found. The exception is in circumstances when they have taken refuge by tying with the "Rope": the Book received from Allah the Exalted and when a unifying "rope" is afforded by certain people.

  • جان لو ان کے متعلق یہ حقیقت۔ اُن پر زیر سرپرستی رہنے،دوسروں پر انحصار کرنے  کی محتاجی مسلط کر دی گئی ہے جہاں کہیں انہیں رہنے کی جگہ ملی ہو،اس حال میں کہ اللہ تعالیٰ کی جانب سے نازل کردہ’’رسی‘‘سے الصاق کریں یا لوگوں کی جانب سے سہارے کی رسی سے بندھ کر۔

Root: ذ ل ل; ض ر ب

وَبَآءُو بِغَضَبٛ مِّنَ ٱللَّهِ

  • And they have made their selves liable to criminal cognizance - arrest by the decree of Allah the Exalted.

  • اورانہوں نے اپنے آپ کومجرمانہ جانکاری کے مستحق بنا لیا ہے ا للہ تعالیٰ کی جانب سے گرفت میں لئے جانے کے۔

Root: ب و ء; غ ض ب

وَضُرِبَتْ عَلَيْـهِـمُ ٱلْمَسْكَنَةُۚ

  • And disdain - contemptibility is struck upon them as distinguished feature.

  • جان لو  اور ان پرسکونت کی محتاجی مسلط کر دی گئی ہے۔

Root: ض ر ب; س ك ن

ذَٟلِكَ بِأَنَّـهُـمْ كَانُوا۟۟ يَكْـفُـرُونَ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • This eventuality is because they persistently refused to accept the Aa'ya'at: Verbal passages of the Book - Unprecedented Displays of Allah the Exalted

    • یہ فیصلہ اِس لئے ہوا کہ انہوں نے اللہ تعالیٰ کی آیتوں سے انکار کو اپنی سرشت بنائے رکھا۔

    Root: ك ف ر

وَيَقْتُلُونَ ٱلۡأَنۢبِيَآءَ بِغَيْـرِ حَقّٛۚ

  • In addition, this eventuality is for their continued effort in character assassination of few of the Chosen and exalted Allegiants of Allah the Exalted by contrary to fact slanderous and libelous statements to distance-ill-repute them from people's reverence

  • اور اس بناء پر کہ وہ حقیقت کے منافی باتوں سے نبیوں کی کردار کشی،تحقیر و توہین کرتے اور انہیں زچ کرتے تھے۔

Root: ق ت ل;غ ى ر; ح ق ق

ذَٟلِكَ بِمَا عَصَوا۟ وَّكَانُوا۟ يَعْتَدُونَ .3:112١١٢

  • This happened to them because they did not accept the Word and purposely kept transgressing and going beyond prescribed limits. [3:112]

  • آپ جان لیں،یہ اس وجہ سے کرتے تھے کہ انہوں نے اُن(نبیوں) کی بات کوماننے سے انکار کر دیا تھا
    اور دوری اختیار کرتے/حد سے نکل جانے کی روش کو انہوں نے اپنائے رکھا۔

Root: ع ص ى; ع د و

لَيْسُوا۟ سَوَآءٙۗ 

  • All of them (Bani Iesraa'eel) have not been alike. [since within them are those also who have become believers-3:110].

  •  وہ سبھی کبھی یکساں سرشت والے نہیں تھے۔

مِّن أَهْلِ ٱلْـكِـتَٟبِ أُمَّةٚ قَآئِمَةٚ

  • A steadfast group [believers] has always been there amongst the People of the Book

  • ایک ہم نظریہ جماعت اسقامت سے اہل کتاب کے لوگوں میں ایمان پر قائم رہی ہے۔

يَتْلُونَ ءَايَٟتِ ٱللَّهِ ءَانَآءَ ٱلَّيْلِ

  • They read and recite the Aay'aa't (Verbal passages of the Book) of Allah the Exalted during the hours of night

  • وہ اللہ تعالیٰ کی آیات کی رات کے پہروں میں تلاوت کرتے ہیں۔

وَهُـمْ يَسْجُدُونَ .3:113١١٣

  • And they do prostrate while reading (Qur’ān) [3:113]

  • اور وہ سجدہ کرتے ہیں۔

يُؤْمِنُونَ بِٱللَّهِ وَٱلْيَوْمِ ٱلۡءَاخِـرِ

  • They heartily believe in Allah the Exalted and the Last Day

  • وہ اللہ تعالیٰ اور یوم آخر پر ایمان رکھتے ہیں۔

وَيَأْمُـرُونَ بِٱلْمَعْـرُوفِ وَيَنْـهَوْنَ عَنِ ٱلْمُنكَرِ

  • And they enjoin to act according to the accepted social values-norms and forbid to stay away from the conjectural, unexampled, unauthentic and unverifiable myths

    • اور وہ  عرفان، حق آگہی کی لوگوں کو تلقین کرتے ہیں، اوربے سروپا،مبہم باتوں  میں مگن رہنے سے منع کرتے ہیں۔

وَيُسَٟرِعُونَ فِـى ٱلْخَيْـرَٟتِ

  • And they hasten to outstand in doing the best things of benefit, welfare and tranquillity for all

  • اور آپس میں اچھائی اور بھلائی کے کام کرنے میں  جلدی کرتے ہیں۔

Root: س ر ع

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ مِنَ ٱلصَّٟلِحِيـنَ .3:114١١٤

  • And they are truly the people who are amongst the perfectionists. [3:114]

  • اور یہ وہ لوگ ہیں جن کا شمار اصلاح کرنے والوں میں ہے۔

وَمَا يَفْعَلُوا۟ مِنْ خَيْـرٛ فَلَن يُكْفَروهُۗ

  • And whatever good if they do, they would not be denied its fruitfulness.

  • اور جو کچھ اچھائی اور بھلائی کا فعل وہ کرتے ہیں تواس کی قدردانی کا انہیں انکار نہیں کیا جائے گا۔

وَٱللَّهُ عَلِيـمُۢ بِٱلْمُتَّقِيـنَ .3:115١١٥

  • And Allah the Exalted is always fully aware of those people who sincerely endeavour to attain salvation. [3:115]

  • مطلع رہو؛اللہ تعالیٰ  متقین کے متعلق مکمل طور پر جانتے ہیں(جہاں کہیں بھی وہ ہوں)۔


إِنَّ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟

  • Be informed about those who have refused to accept Qur’ān - the Divine Discourse:

  • ایسے لوگوں کے متعلق حقیقت جان لیں جنہوں نےقرآن مجید کو ماننے سے انکار کیا ہے:۔

لَنْ تُغْنِىَ عَنْـهُـمْ أَمْوَٟلُـهُـمْ وَلَآ أَوْلَٟدُهُـم مِّنَ ٱللَّهِ شَيْئٙاۖ

  •  Their Wealth and their Progeny might never avail to fetch them tangible laxity and relaxation from the grace of Allah the Exalted.

    • ان کے مال و دولت اور نہ ان لوگوں کی اولادانہیں  اللہ تعالیٰ کی جانب سےکسی قسم کی رعایت وآزادی دلا سکے گی۔

    Root: غ ن ى

وَأُو۟لَـٟٓئِكَ أَصْحَـٟـبُ ٱلنَّارِۚ

  • And they are the people who will be the resident inmates of the scorching Hell-Prison

  • یہ وہ لوگ ہیں جو جہنم میں رہنے والے ہوں گے۔

Root: ص ح ب

هُـمْ فِيـهَا خَٟلِدُونَ .3:116١١٦

  • They will abide therein permanently/indefinitely. [3:116]

  • یہ لوگ اس(جہنم)میں ہمیشہ رہائش پذیررہیں گے۔

مَثَلُ مَا يُنفِقُونَ فِـى هَـٟذِهِ ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَا

  • [their wealth and progeny will be of no avail] The similarity-illustration of that which they (Non-Believers) spend in this worldly life is:

  • اس کی مثال جو یہ لوگ اس دنیا کی حیات میں خرچ کرتے ہیں

كَمَثَلِ رِيحٛ فِيـهَا صِرٌّ أَصَابَتْ حَرْثَ قَوْمٛ ظَلَمُوٓا۟ أَنفُسَهُـمْ فَأَهْلَـكَـتْهُۚ

  • Like such a wind; creaking and cold effect is inherent within it. She descended upon cultivation of a people who did injustice to themselves. Thereby, she destroyed the cultivation.

    • اس ہوا کی مانند ہے جس میں یخ بستگی کی صلاحیت ہے،وہ اس قوم کی کھڑی فصل پر پہنچ گئی جنہوں نے اپنے آپ پر ظلم کیا تھا،اور اس فصل کو تباہ کر دیا۔

    Root: ر و ح; ص ر ر

وَمَا ظَلَمَهُـمُ ٱللَّهُ وَلَـٟكِنْ أَنفُسَهُـمْ يَظْلِمُونَ .3:117١١٧

  • Understand it, Allah the Exalted did no injustice to them but in fact they kept doing injustice to their selves. [3:117]

  • جان لو،اللہ تعالیٰ نے ان کے ساتھ  زیادتی نہیں کی، بلکہ وہ خود اپنے  نفوس پرزیادتی کرنے کے مرتکب ہوتے رہے۔


يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟

  • O those people who have proclaimed to have believed in the Messenger and Qur’ān, listen;

  • !اے وہ لوگوں جنہوں نے رسول کریم (محمّد ﷺ)اور قرءان مجید پرایمان لانے کا اقرارو اعلان کیا ہے توجہ سے سنو

لَا تَتَّخِذُوا۟ بِطَانَةٙ مِّن دُونِكُـمْ لَا يَأْلُونَكُـمْ خَبَالٙا وَدُّوا۟ مَا عَنِتُّـمْ

  • تم لوگوں کو چاہئے کہ اپنوں کے علاوہ مصاحبین کو زیر مقصدبطور سرپرست بھیدی نہ بناؤ۔وہ تم لوگوں کی کمزوری/کمی بیشی کااستحصال کرنے میں سستی نہیں کرتے/موقع نہیں گنواتے؛وہ اسے پسند کرتے ہیں جو تمہیں مشکل میں ڈالے۔

Root:  ع ن ت

قَدْ بَدَتِ ٱلْبَغْضَآءُ مِنْ أَفْوَٟهِهِـمْ وَمَا تُخْفِـى صُدُورُهُـمْ أَكْبَـرُۚ

  • The grudge, hatred and resentment has become evident by their utterances. And what their chests are concealing it is much greater than their evident resentment.

  • کینہ/بغض/خلش تو ان کی مونہوں کی باتوں سے ہی عیاں ہو چکا ہے۔اور جو ان کے سینے چھپا کر رکھتے ہیں وہ  ظاہر ہو چکے سےکہیں بڑھ کر ہے۔

قَدْ بَيَّنَّا لَـكُـمُ ٱلْءَايَٟتِۖ

  • Indeed, Our Majesty have explicitly explained the Aaya'at: Verbal Passages of Qur’ān for you people

  • ہم جناب نے تم لوگوں کی فہم و فراست کے لئے آیات کوصریحاً واضح طور پر متمیز فرما دیا ہے

إِنْ كُنتُـمْ تَعْقِلُونَ .3:118١١٨

  •  If you were in habit of objectively analyzing-thinking critically. [3:118]
  • اگر تم لوگ عقل استعمال کرنے والے ہو(تو سنجیدگی سے ان پر غوروفکر کرو)۔

هَٟٓأَنتُـمْ أُو۟لَآءِ تُحِبُّونَـهُـمْ وَلَا يُحِبُّونَكُـمْ

  • You people be cautioned; some of you are inclined towards them lovingly, while they do not love you.

  • غور تو کرو،تم لوگ ایسے ہو کہ ان سے رغبت و محبت رکھتے ہو جبکہ وہ تم لوگوں کو پسندیدگی اور چاہت کی نگاہ سے نہیں دیکھتے۔

وَتُؤْمِنُونَ بِٱلْـكِـتَٟبِ كُلِّهِۦ

  • And you people believe in the Book, whole of it.

  • باوجود اس کے کہ تم لوگ تو اللہ تعالیٰ کے کلام پر مشتمل کتاب پر ایمان رکھتے ہو،اس کے تمام کے تمام مندرجات پر۔

وَإِذَا لَقُوكُمْ قَالُوٓا۟ ءَامَنَّا

  • And when they meet you they say: "We have accepted/believed".

  • جان لو؛وہ لوگ جب تمہارے آمنے سامنے ہوتے ہیں تو انہوں نے کہا’’ہم ایمان لے آئے ہیں‘‘

وَإِذَا خَلَوْا۟ عَضُّوا۟ عَلَيْكُـمُ ٱلۡأَنَامِلَ مِنَ ٱلْغَيْظِۚ

  • And when they are in privacy-solitude they burst out their anger upon you by biting their finger-tips/nails.

    • مگر جب وہ تنہائی میں ہوئے تو وہ  غصے سے مغلوب اپنا غصہ تم لوگوں پرنکالنے کے لئےاپنی انگلیاں دانتوں میں دیتے ہیں۔

    Root: خ ل و; ع ض ض

قُلْ مُوتُوا۟ بِغَيْظِكُـمْۗ

  • You Tell them: "You keep solacing with your outburst of anger".

  • آپ(ﷺ)تم لوگ اپنے غیض و غصب سے مر جاؤ۔

Root: غ ى ظ

إِنَّ ٱللَّهَ عَلِيـمُۢ بِذَاتِ ٱلصُّدُورِ .3:119١١٩

  • It is a fact that Allah the Exalted is aware absolutely of that which the chests hold inside. [3:119]

  • یقناً اللہ تعالیٰ اسے مکمل طور پر جانتے ہیں جو سینوں میں موجود ہے‘‘۔

إِن تَمْسَسْكُـمْ حَسَنَةٚ تَسُؤْهُـمْ وَإِن تُصِبْكُـمْ سَيِّئَةٚ يَفْرَحُوا۟ بِـهَاۖ

  • If some privilege reaches you people it would be noisome for them. And would adversity befalls on you people they would rejoice on it.

  • جان لو اے  صاحبان ایمان؛اگر تم لوگوں کو کچھ خوشگواری میسر آتی ہے تو وہ انہیں تکلیف پہنچاتی ہے؛اور اگر کوئی ناگوار صورت حال تمہیں پیش آ جائے تو وہ اس سے فرحت محسوس کرتے ہیں۔

Root: ف ر ح

وَإِن تَصْبِـرُوا۟ وَتَتَّقُوا۟ لَا يَضُـرُّكُمْ كَيْدُهُـمْ شَيْئٙاۗ

  • Remember; should you people remain coolly perseverant and sincerely endeavour to attain salvation; their tricks-crafty schemes will not at all cause you any harm.

  • لیکن اگر تم ضبط و تحمل سے برداشت کرتے پائے استقلال پر رہے اورتندہی سے محتاط رہتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے پناہ کے خواستگار رہے،ان کے حربے تم لوگوں کو کسی قسم کا ضرر نہیں پہنچا سکیں گے۔

إِنَّ ٱللَّهَ بِمَا يَعْمَلُونَ مُحِيطٚ .3:120١٢٠

  • Indeed Allah the Exalted encompasses all acts that they do. [3:120]

  • یقیناً اللہ تعالیٰ ہر لمحہ ان اعمال کا جو وہ کرتے رہتے ہیں احاطہ کئے ہوئے ہیں۔

Root: ح و ط


وَإِذْ غَدَوْتَ مِنْ أَهْلِكَ تُبَوِّئُ ٱلْمُؤْمِنِيـنَ مَقَٟعِدَ لِلْقِتَالِۗ

  • And recall when you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] had set out of your house-hold [Madeena] early in the morning; you were assigning the believers their strategic positions on the battlefield for the imposed war (of Uhud).

  • ۔آپ(ﷺ)یاد کریں جب آپ اپنے اہل خانہ سے صبح سویرے الگ ہو کرایمان والوں کو ان مقامات کی نشاندہی کر رہے تھے  جہاں پرانہوں نے بسبب جنگ مورچہ بند ہونا تھا۔

Root: غ د و

وَٱللَّهُ سَـمِيعٌ عَلِيـمٌ .3:121١٢١

  • -- Be mindful, Allah the Exalted is eternally the Listener, the Fountain of Knowledge - Setter of sciences. --. [3:121]

  • یہ حقیقت ذہن نشین رہے،اللہ تعالیٰ  ہر لمحہ ہر آواز کو سننے والے ہیں، منبع علم ہیں۔

إِذْ هَـمَّت طَّآئِفَتَانِ مِنكُـمْ أَن تَفْشَلَا وَٱللَّهُ وَلِيُّـهُـمَاۗ

  • [reverting from parenthetic, to Uehud battlefield] When two smaller subgroups amongst you were caught in anxiety that they might be flagging while Allah the Exalted was protector of both.

  • ۔اور یاد کروجب تم میں سے دو گروہ اِس فکر میں گھلے جا رہے تھے کہ وہ دونوں کمزورہیں حالانکہ اللہ تعالیٰ اُن دونوں کے  [ولی] رفیق/قوت وغلبہ دینے والے تھے۔

Root: ط و ف; ف ش ل

وَعَلَـى ٱللَّهِ فَلْيَتَوَكَّلِ ٱلْمُؤْمِنُونَ .3:122١٢٢

  • And the believers should keep their trust and hopeful reliance upon Allah the Exalted. [3:122]

  • اور اس بناء پر کہ اللہ تعالیٰ ان کے حامی و ناصر ہیں مومنوں کو ازخود اللہ تعالیٰ پر بھروسہ اور اعتماد کرنا چاہیے۔

Root: و ك ل

وَلَقَد نَصَـرَكُمُ ٱللَّهُ بِبَدْرٛ وَأَنتُـمْ أَذِلَّـةٚۖ

  •  [their anxiety was without reason] And Allah the Exalted had indeed helped you people in battlefield of Badder while at that time and place you were weaker as compared to this occasion.

  • اور یہ بات تو تم لوگوں کے لئے باعث تقویت  ہونی چاہئیے تھی کہ اللہ تعالیٰ نے تم لوگوں کی جنگ بدر میں ان حالات میں مدد کی تھی جب تم جنگ کے لئے خستہ حال تھے

Root: ذ ل ل

فَٱتَّقُوا۟ ٱللَّهَ

  • Therefore, you people sincerely endeavour to attain the protection from Allah the Exalted

  • اس لئے تم لوگ تندہی سے محتاط رہتے ہوئے