Root: ع د س

Words from this Root in the Grand Qur’ān:

a) Total occurrences: 1 Noun

Sub-division or lexical set: "hyponyms" of —the Plant Kingdom of the Earth.

Lane Lexicon

 

  • Keep tracing the past; when you people said: "O Mūsā, we might no more tolerate one kind of meal —

  • اور (اے بنی اسرئیل یاد کرو) جب تم لوگوں نے کہا تھا”اے موسیٰ(علیہ السلام)! ہم سے ایک ہی طرح کے طعام پر صبرنہیں ہوتا۔

  • Therefore, beseech your Sustainer Lord for us that He should cause-arrange for us that which the Earth grows —

  •  اِس لئے اپنے رب سے ہمارے لئے دعا کریں کہ ہمارے لئے وہ مہیا کرے جسے زمین اگاتی ہے

  •  Its vegetable-herbs, and its cucumbers, and its grains, and its lentils, and its onions."
  • اُس کی سبزیاں / ساگ، کھیرے ککڑی، اُس کا اناج/ گیہوں، اُس کی مسور، اُس کی پیازمیں سے“۔

  • He (Mūsā alahissalam) said; "Are you people seeking replacement which is inferior in place of that which is better one?

  • انہوں (موسیٰ علیہ السلام)نے کہا”کیا تم اُس طعام کو جوزیادہ بہتر ہے اُس شئے سے بدلنا چاہتے ہو جونسبتاً ادنیٰ ہے؟

  • [Okay] Go you down to a city, whereby there is certainly for you that which you have asked".

  • پہاڑی علاقے سے)نیچے /پستی کی جانب بستی میں اترو تو پھر تمہیں یقینا وہ سب ملے گا جس کا تم سوا ل کر رہے ہو“۔)

  • Beware, dependence - subjugation - remaining under-patronage and disdain - contemptibility is struck upon them as distinguished feature.

  • جان لو ان کے متعلق یہ حقیقت۔ اُن پر زیر سرپرستی رہنے،دوسروں پر انحصار کرنے اور سکونت کی محتاجی مسلط کر دی گئی ہے۔

  • And they have made their selves liable to criminal cognizance - arrest by decree of Allah the Exalted.

  • اورانہوں نے اپنے آپ کومجرمانہ جانکاری کے مستحق بنا لیا ہے ا للہ تعالیٰ کی جانب سے گرفت میں لئے جانے کے۔

  • This eventuality is because they persistently refused to accept the Aa'ya'at: Verbal passages of the Book of Allah the Exalted —

  • یہ فیصلہ اِس لئے ہوا کہ انہوں نے اللہ تعالیٰ کی آیتوں سے انکار کو اپنی سرشت بنائے رکھا۔

  • And this eventuality is because they kept indulging in character assassination of: the Chosen and elevated Allegiants of Allah the Exalted by contrary to fact slanderous and libellous statements to distance them from people's reverence —

  • اور اس بناء پر کہ وہ حقیقت کے منافی باتوں سے نبیوں کی کردار کشی،تحقیر و توہین کرتے اور انہیں زچ کرتے تھے۔

  • This attitude was because they did not accept the Word and purposely kept transgressing and going beyond prescribed limits. [2:61]

  • آپ جان لیں،یہ اس وجہ سے کرتے تھے کہ انہوں نے اُن(نبیوں) کی بات کوماننے سے انکار کر دیا تھا
    اور دوری اختیار کرتے/حد سے نکل جانے کی روش کو انہوں نے اپنائے رکھا۔

 

1

Possessive Phrase: Noun: Definite; Masculine; singular; genitive + Possessive pronoun: Third person; singular; feminine; in genitive state. (1)2:61=1

                           الإِضَافَةُ-اسم: مجرور-واحد مذكر/مضاف + ضمير متصل-واحد مؤنث غائب في محل جر-مضاف إليه