010-سُوۡرَةُ يونس


الٓرۚ

  • Aleph [letter], Laam [Consonant] with prolongation sign/glyph, Ra [Consonant].

  • عربی زبان کے حروف الف،لام بمع آواز کی طوالت کانشان اور منسلک حرف ر

تِلْكَ ءَايَٟتُ ٱلْـكِـتَٟبِ ٱلْحَكِيـمِ .10:01١

  • These are the Aa'ya'at: Verbal Passages of the Miscellany of the Book: Qur’ān which gives insight to the invisible, hidden, secreted realities of established import. [10:01]

  • یہ آیات اللہ تعالیٰ کے کلام پر مشتمل کتاب(قرءان مجید)میں سے ہیں؛جس کی خصوصیت ہے کہ پنہاں کو عیاں کرتابصیرت افروز ہے۔

أَكَانَ لِلنَّاسِ عَجَبٙا أَنْ أَوْحَيْنَآ إِلَـىٰ رَجُلٛ مِّنْـهُـمْ

  • Has it seemed strange-extraordinary phenomenon for sceptical people that Our Majesty has verbally communicated the Book to a man reputedly a Monotheist believer amongst them?

  • ۔ہم جناب کا اس کتاب کو ایک ایسے  مرد کو پہبچانا جو ان میں ہمیشہ توحید کے پیروکار مشہور ہیں ایسے لوگوں کے لئے  کیا واقعی باعث تعجب ہے جوکثرت معبودان کے قائل اورپجاری ہیں۔

Root: ع ج ب

أَنْ أَنذِرِ ٱلنَّاسَ وَبَشِّـرِ ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟ أَنَّ لَـهُـمْ قَدَمَ صِدْقٛ عِندَ رَبِّـهِـمْۗ

  • The communication is to the effect: "You the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] admonish- awaken the mankind and guarantee glad tidings to them who have heartily accepted believing in the Message that a respectable position and reward of an act of truth is promised for them by the grace of their Sustainer Lord."

  • ۔یہ حکم دے کر کہ’’آپ (ﷺ)لوگوں کو باطل طرز عمل پر گامزن رہنے کے لازمی تکلیف دہ عواقب و نتائج سے متنبہ فرمائیں اور ان لوگوں کو خوش کن نتائج کی پیشگی بشارت اور ضمانت دیں جو آپ اور قرءان مجید پر ایمان لائے ہیں کہ ان کا سچائی پر اٹھایا قدم ان کے رب کی جانب سے تحسین وپذیرائی کا ان کے لئے پیش خیمہ ہے‘‘۔

Root: ق د م

قَالَ ٱلْـكَـٟفِـرُونَ إِنَّ هَـٟذَا لَسَٟحِرٚ مُّبِيـنٌ .10:02٢

  • The deniers and rejecters of the Message said: "Indeed this Man is certainly manifestly illusionist - Hoaxer." [10:02]

  • ۔رسول کریم اور قرءان مجید کا انکار کر دینے والے عمائدین نے لوگوں سے کہا’’یہ صاحب دراصل فریب نظر اور جھوٹے جھانسے دینے والا ہے‘‘۔

Root: س ح ر


إِنَّ رَبَّكُـمُ ٱللَّهُ ٱلَّذِى خَلَقَ ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضَ فِـى سِتَّةِ أَيَّامٛ

  • Indeed the Sustainer Lord of you people is Allah the Exalted Who had innovatively created the Skies and the Earth in a time duration of six days [reckoned outside your universe]

  • اے لوگو جان لویہ  حقیقت ہے کہ تم لوگوں کے رب  اللہ تعالیٰ ہیں جنہوں نے  سات آسمانوں اور زمین کو تخلیق فرمایا ہے،اس کائنات کے باہر کے وقت کے شمار سے چھ دنوں میں۔

Root: خ ل ق;س ت ت             Why is the Universe the way it is?

ثُـمَّ ٱسْتَوَىٰ عَلَـى ٱلْعَـرْشِۖ

  • Thereafter, He the Exalted ascended to the Supreme Sovereign Seat/Throne [beyond Skies of universe]

  • بعد ازاں وہ جناب مزیدبلندی پر عرش/یکتا تخت اقتدار پر تشریف فرما ہوئے۔

Root: ع ر ش

يُدَبِّرُ ٱلۡأَمْرَۖ

  • He the Exalted organizes, manages, and commands all matters to their logical conclusion.

  • ۔وہ جناب  ہر طے شدہ معاملے کوترتیب سے پائے تکمیل تک پہنچاتے ہیں۔

مَا مِن شَفِيـعٛ إِلَّا مِنۢ بَعْدِ إِذْنِهِۦۚ

  • None amongst the intercessors intercedes before His Majesty except after the explicit permission of Him the Exalted.

  • متنبہ رہو؛ قطعی کوئی  حمایت و سفارش کرنے والا تمہارے لئے کھڑا ہو گا سوائے ان جناب کے اجازت دینے کے بعد۔(محذوف کے لئے الشوریٰ۔۸)

Root: ش ف ع

ذَٟلِـكُـمُ ٱللَّهُ رَبُّكُـمْ فَٱعْبُدُوهُۚ

  • This Supreme Sovereign, Allah the Exalted is the Sustainer Lord of you people. Therefore be subservient and allegiant subject to Him alone.

  • ۔یہ  ہے تم لوگوں کے لئے  اللہ تعالیٰ کو پہچاننے کے شواہد اور حقائق؛ وہ جناب تمہارے رب ہیں۔ چونکہ بدیہی حقائق سے  دانستہ غفلت برتنے والے صاحب عقل و فکر نہیں ہوتے اس لئے تم لوگ ان جناب کی بااظہار بندگی کرو۔

أَفَلَا تَذَكَّرُونَ .10:03٣

  • Why you deviate; Is it for reason that you people are not in habit of self reflecting? [10:03]

  • ۔کیا تم لوگوں کا یہ رویہ اس بات کا شاخسانہ ہے کہ تم ازخود یاد رکھنا  اور تاریخ سے سبق لینا نہیں چاہتے۔

إِلَيْهِ مَرْجِعُكُـمْ جَـمِيعٙاۖ

  • The return of you people, all together on the Day of Requital, is destined towards Him the Exalted.

  • تم سب لوگ متنبہ رہو،بعد ازاں قیامت برپا ہونے کے تم نے احتساب کے لئے  ان جناب کی جانب لوٹنا ہے،مجموع ۔

وَعْدَ ٱللَّهِ حَقّٙاۚ

  • The promise of Allah the Exalted is always a proven and established truth.

  • ۔متنبہ رہو،یہ محض بیان نہیں،یہ اللہ تعالیٰ کا وعدہ ہے،یہ ایسا وعدہ ہے جس نے وقوع پذیر ہو کر رہنا ہے۔

إِنَّهُۥ يَبْدَؤُا۟ ٱلْخَلْقَ ثُـمَّ يُعِيدُهُۥ

  • Indeed He the Exalted initiates the creation and after pause of time will cause his relapsereverted to original state:

  • ۔یہ حقیقت ہے کہ وہ جناب سوچے سمجھے مقصد کے تحت تخلیق کی ابتدا فرماتے ہیں۔بعد ازاں مقررہ وقت پر وہ جناب اس تخلیق کردہ کوازسر نواپنی جانب پلٹا دیں گے۔

Root: خ ل ق;  ع و د

لِيَجْزِىَ ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَعَمِلُوا۟ ٱلصَّٟلِحَـٟتِ بِٱلْقِسْطِۚ

  • So that He may reward equitably those who believed and performed moderate righteous deeds.

  • ۔یہ ازسر نو حیات دینا اس مقصد سے ہے کہ وہ جناب ان لوگوں کو جو رسول کریم اور کتاب اللہ پر صدق قلب سے ایمان لائے اور ان اعمال پر کاربند رہے جنہیں صالح قرار دیا گیا تھابہترین ایوارڈ  سے نوازیں انصاف اور مساوات کے تقاضوں کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے۔ 

Root: ق س ط

وَٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟

  • And as for those are concerned who denied to believe in the Messenger and Qur’ān:

  • ۔اور جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جنہوں نے رسول کریم اور قرءان مجید کو من جانب اللہ ماننے سے انکار کیا ہے۔

لَـهُـمْ شَرَابٚ مِّنْ حَـمِيـمٛ وَعَذَابٌ أَلِيـمُۢ بِمَا كَانُوا۟۟ يَكْـفُـرُونَ .10:04٤

  • Drinking water of heated reservoir and severe punishment is arranged and is in wait for them for the reason that they persistently kept refusing to accept the truth. [preferring worldly interests and fascination] [10:04]

  • ۔گرم چشمے کا پانی اورایک دردناک عذاب ان کے لئے تیار اور منتظر ہے۔ان کا یہ انجام اس بنا پر ہے کہ مسلسل رسول کریم اور قرءان مجید کا انکار کرتے رہے تھے۔

Root: ك ف ر; ء ل م

هُوَ ٱلَّذِى جَعَلَ ٱلشَّمْسَ ضِيَآءٙ وَٱلْقَمَـرَ نُورٙا

  • He the Exalted is the One Who has rendered the Sun as source of radiating heat and visible light; and the Moon as reflecting visible light.

  • ۔وہ جناب ہی ہیں جنہوں نے سورج کو ضیاء /روشنی اور حرارت پیدا کرنے والی کے طور بنایا ہے اورچاند کو روشنی منعکس کرنے والا۔

Root: ض و ء;  ق م ر; ش م س

وَقَدَّرَهُۥ مَنَازِلَ لِتَعْلَمُوا۟ عَدَدَ ٱلسِّنِيـنَ وَٱلْحِسَابَۚ

  • And He the Exalted has apportioned the Moon by stages-spaces so that you people might know the count/number of Lunar years and to carry out other calculations and equations.

  • ۔ اور انہوں نے اس ( مذکر۔چاند) کیلئے منزلیں مقرر کیں تا کہ تم قمری برسوں کوشمار کرنا جان سکو، اورباہمی پیمائشوں کو معلوم کر سکو۔

مَا خَلَقَ ٱللَّهُ ذَٟلِكَ إِلَّا بِٱلْحَقِّۚ

  • Allah the Exalted has not created this randomly but by conditioning them scientifically: infallible governing rules for a determined purpose and time.

  • ۔اوریہ نظام ا للہ تعالیٰ نے بے مقصد،بے ترتیب،بے اصول(randomly) تخلیق نہیں کیابلکہ غلطی سے مبرا یقینی اصول،مقصد اور ثابت شدہ حقیقت(scientifically established system) کے طور تخلیق کیا ہے۔

يُفَصِّلُ ٱلْءَايَـٟتِ لِقَوْمٛ يَعْلَمُونَ .10:05٥

  • He the Exalted renders the verbal passages of Qur’ān distinct for the people who are in pursuit of knowledge. [10:05]

  • ۔وہ جناب علم کی جستجو کرنے والے لوگوں کے لئے قرءان مجید کی آیات کو ہر نکتے کے حوالے سے متمیز اور منفرد انداز میں فصل کر دیتے ہیں۔


إِنَّ فِـى ٱخْتِلَٟفِ ٱلَّيلِ وَٱلنَّـهَارِ

  • It is a fact; existents which are explicitly distinct manifestations reflect the Divine Providence and Will evidently: In the alteration-revolving-circular pursuit of the Night and the Day

  • یقیناً ان مظاہر فطرت  کا عینی مشاہدہ فلسفہ توحید،معبود مطلق پر گواہ ہیں : رات اور دن کے ایک دوسرے کے مقام پرآنے کے نظام میں؛

وَمَا خَلَقَ ٱللَّهُ فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضِ

  • And in all that which Allah the Exalted has created in the Skies and the Earth

  • ۔اور وہ جو اللہ تعالیٰ نے آسمانوں اور زمین میں تخلیق فرمایا ہے۔

لءَايَٟتٛ لِّقَوْمٛ يَتَّقُونَ .10:06٦

  • [distinct manifestations reflect the Divine Providence and Will] For the people who endeavour to remain cautious to act rationally, avoiding conduct inspired and governed by emotions, in reverence and fear of Allah the Exalted. [10:06]

  • ۔یہ شناخت اور پہچان کے لئے مادی توضیحات ہیں  ان لوگوں کے لئے جو ممانعات سے اپنے آپ کو محفوظ و مامون رکھتے ہوئے اللہ تعالیٰ سے پناہ کے خواستگار ہیں۔

إِنَّ ٱلَّذِينَ لَا يَرْجُونَ لِقَآءَنَا

  • Know the certain upshot about those who do not expect to be held accountable before Our Majesty

  • ان  لوگوں کے انجام کے متعلق جان لو  جو ہمارے حضور احتساب کے لئے پیش کئے جانے کومتوقع نہیں سمجھتے ۔ 

Root: ر ج و

وَرَضُوا۟ بِٱلْحَيوٰةِ ٱلدُّنْيَا وَٱطْمَأَنُّوا۟ بِـهَا

  • And they are happily absorbed in the worldly life and are satisfied with it

  • ۔اور دنیا کی حیات میں شادمان ہیں اور اس کی لگن میں اپنے آپ کو مطمئن اور مگن رکھتے ہیں۔

Root: ط م ن

وَٱلَّذِينَ هُـمْ عَنْ ءَايَٟتِنَا غَٟفِلُونَ .10:07٧

  • And about those who are negligent about the Verbal Passages of the Book and visible existential displays of Our Majesty: [10:07]

  • ۔اور وہ لوگ جو  ہم جناب کی آیات ۔۔حقیقت کی جانب رہنمائی کرنے والی عناصر فطرت اور کتاب اللہ میں درج مندرجات سے ہر وقت بے پرواہ،غفلت شعار ہیں۔

Root: غ ف ل

أُو۟لَـٟٓئِكَ مَأْوَىٰـهُـمُ ٱلنَّارُ

  • They are the people: the scorching Hell-Prison will be their abode.

  • یہ ہیں وہ لوگ ۔۔۔ ان کی آخری "پناہ گاہ"جھلسا دینے والی جہنم ہے۔

بِمَا كَانُوا۟۟ يَكْسِبُونَ .10:08٨

  • This upshot is because of what they people deliberately and consciously used to perform/earn. [10:08]

  • ۔یہ ان کے جرائم کی پاداش ہے جووہ اپنے مفادات کے حصول کی خاطر کرتے رہے ہیں۔

إِنَّ ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَعَمِلُوا۟ ٱلصَّٟلِحَـٟتِ يَـهْدِيـهِـمْ رَبُّـهُـم بِإِيمَٟنِـهِـمْۖ

  • Know the fact about those who have heartily believed in the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] and Qur’ān and performed moderate righteous deeds their Sustainer Lord will guide them because of their sincere belief:

  • ان لوگوں کے متعلق مبنی بر حقیقت خبر جان لوجورسول کریم اور  قرء ان پردل کی شاد سے ایمان لائے اور انہوں نے صالح اعمال کئے ۔ان کے رب انہیں اپنے ایمان پر قائم رہتے ہوئے  جنت کی جانب رواں دواں رہنے کے لئےہدایت دیتے رہیں گے۔

تَجْـرِى مِن تَحْتِـهِـمُ ٱلۡأََنْـهَٟرُ فِـى جَنَّٟتِ ٱلنَّعِيـمِ .10:09٩

  • Into the Gardens of Delight; enjoying streams flowing side-by them. [10:09]

  • خوبصورت منظر پیش کرتی نہریں ان لوگوں کے پائیں بہہ رہی ہوں گی جب وہ  نعمتوں سے بھرپور باغات میں رہائش پذیر ہوں گے۔۔

دَعْوَىٰـهُـمْ فِيـهَا سُبْحَٟنَكَ ٱللَّهُـمَّ وَتَحِيَّتُـهُـمْ فِيـهَا سَلَٟمٚۚ

  • Their prayer therein would be: "Glory is for You, Allah the Exalted". And their greetings and pleasantries therein would be wishing peace and tranquillity.

  • ۔ان کاان میں رہتے ہوئے طرز عمل  اس دعا سے ہو گا"آپ جناب عظیم ہیں!تمام عظمت وکبریائی اور جدوجہد کا محورآپ جناب ہیں، اے اللہ  تعالیٰ‘‘۔اور ان میں رہتے ہوئے باہمی ملاقاتوں پرایک دوسرے کے لئے نیک خواہشات اور خیر سگالی کا اظہار کریں گے۔

وَءَاخِرُ دَعْوَىٰـهُـمْ أَنِ ٱلْحَمْدُ لِلَّهِ رَبِّ ٱلْعَٟلَمِيـنَ .10:10١٠

  • And their departing call is pronouncement: "The Infinite Glory and Praise is specified eternally, entirely and exclusively for Allah, the Sustainer Lord of the Existing Worlds-All that exists". [10:10]

  • ۔اور آخر میں جدا ہوتے وقت ان کے الفاظ یہ ہوں گے کہ اللہ تعالیٰ کیلئے عظمت وبرتری وشرف و کبریائی کو بیان کرتی حمد کو ہمیشہ کیلئے مختص فرما دیاگیا ہے ۔

وَلَوْ يُعَجِّلُ ٱللَّهُ لِلنَّاسِ ٱلشَّـرَّ ٱسْتِعْجَالَـهُـم بِٱلْخَيْـرِ لَقُضِىَ إِلَيْـهِـمْ أَجَلُـهُـمْۖ

  • And if Allah the Exalted hastens damaging state for the people as they haste for the pleasantness, certainly their term would have been concluded for them.

  • ۔متنبہ رہو؛ اگر اللہ تعالیٰ لوگوں کے لئے انتشار اور ابتلا کی کیفیت پیدا کر دیں جیسے ان کی عجلت میں ہر بھلائی کو حاصل کر لینے کی خواہش و آرزو ہے تو یقیناً ان کی مہلت کے اختتام ان کے نزدیک پہنچ چکا ہوتا۔

Root: ش ر ر

فَنَذَرُ ٱلَّذِينَ لَا يَرْجُونَ لِقَآءَنَا فِـى طُغْيَٟنِـهِـمْ يَعْمَهُونَ .10:11١١

  • Therefore, for reason of appointed term Our Majesty let those prolonging in their defiant brims, leaving them in state of blind distracted wandering, who believe not in their presentation before Our Majesty for accountability. [10:11]

  • ۔چونکہ احتساب کے لئے متعین مدت تک مہلت ہے،اس لئےہم جناب ان لوگوں کو جو ہمارے حضور احتساب کے لئے پیش کئے جانے کو متوقع نہیں سمجھتے  انہیں اُن کی بیوقوفانہ احمقانہ بہکی سرگرمیوں میں دراز و سرگرداں رہنے میں ڈھیل دیتے ہیں۔

Root: ر ج و;  ط غ ى; و ذ ر

وَإِذَا مَسَّ ٱلْإِنسَٟنَ ٱلضُّرُّ دَعَانَا لِجَنۢبِهِۦٓ أَوْ قَاعِدٙا أَوْ قَآئِمٙا

  • Know general behaviour; When adversity has inflicted the Man he kept calling upon Our Majesty in all positions of lying on his side, or sittings or standing.

  • ۔اور جب  درد اورتکلیف  کا احساس انسان کو لاحق ہو جاتا ہے تو چاہے اس حالت میں اپنے کروٹ کے بل ہو،یا بیٹھا ہو،یا کھڑا ہو ہم جناب کو پکارتا ہے۔

Root: ق ع د

فَلَمَّا كَشَفْنَا عَنْهُ ضُرَّهُۥ مَـرَّ كَأَن لَّمْ يَدْعُنَآ إِلَـىٰ ضُرّٛ مَّسَّهُۥۚ

  • In response when Our Majesty removed from him his affliction he walked away [without a word of thanks] as if he had never requested Our Majesty during affliction that had touched him.

  • ۔تو فریاد کو قبول کرتے  اور مہلت دیتے ہوئے جوں ہی ہم جناب نے اسے لاحق اذیت ناک صورتحال سے  نجات دے دی تو ایسے چل دیا جیسے اس نے کبھی ہم جناب کو پکارا ہی نہیں تھا اس اذیت کی جانب جس سے وہ لاچار تھا۔

Root: م ر ر;  ك ش ف

كَذَٟلِكَ زُيِّنَ لِلْمُسْـرِفِيـنَ مَا كَانُوا۟۟ يَعْمَلُونَ .10:12١٢

  • This is how it is; by fabricators of fascinating myths suggesting good and bad times are just routine phenomenon, made alluring for the transgressors what acts they deliberately kept executing-performing. [10:12]

  • ۔یہ طرز عمل اس بات کا مظہر ہے کہ جو وہ کرتے رہے ہیں وہ ایسے لوگوں کے لئے باعث کشش و لگن بنا دیا گیا ہے جوبے پرواہ سرشت کےحامل ہیں۔

Root: س ر ف

وَلَقَدْ أَهْلَـكْنَا ٱلْقُرُونَ مِن قَبْلـِكُـمْ لَمَّا ظَلَمُوا۟ۙ

  • Be mindful; Our Majesty has indeed annihilated many civilizations; who existed before you people, when they kept acting as evil-doers, distorters, creators of imbalances, disorder and over stepping.

  • ۔تاریخی حقیقت سے خبردار رہو؛ہم جناب نے کئی تہذیبوں کو نیست و نابود کر دیا جنہوں نے تم لوگوں سے قبل عروج دیکھا تھا،جب انہوں نے حقیقت کے متضاد روئیے کو اپنی سرشت بنا لیا تھا۔

وَجَآءَتْـهُـمْ رُسُلُـهُـم بِٱلْبَيِّنَـٟتِ وَمَا كَانُوا۟۟ لِيُؤْمِنُوا۟ۚ

  • They did so while their Messengers had indeed brought to them evident/ distinct/ unprecedented [miraculous] demonstrative Signs. And in response they were not such that they would subsequently believe in what they had earlier contradicted.

  • ۔اور یہ حقیقت ہے کہ ان کی جانب مبعوث فرمائے گئے ان کے رسول  ان کے لئےمافوق التصور و تجربہ،انہونے صریحاً واضح مظاہر قدرت(معجزات)کے ساتھ آئے تھے۔مگر عینی تجربہ اور ثبوت کے باوجود وہ ا ایمان لانے کا سوچتے بھی نہ تھے (جس کو وہ گزرے زمانہ میں برملا جھٹلا چکے تھے۔الاعراف۔101)۔

كَذَٟلِكَ نَجْزِى ٱلْقَوْمَ ٱلْمُجْرِمِيـنَ .10:13١٣

  • This is how Our Majesty punishes the nation who are eventually convicted as criminals. [10:13]

  • خبردار رہو؛ہم جناب اس انداز میں  اس قوم کو سزا دیتے ہیں  جسے بالاخرمجرم قرار  دے دیا گیا۔

ثُـمَّ جَعَلْنَـٟكُـمْ خَلَـٰٓئِفَ فِـى ٱلۡأَرْضِ مِنۢ بَعْدِهِـم لِنَنظُرَ كَيْفَ تَعْمَلُونَ .10:14١٤

  • After lapse of certain period, Our Majesty has rendered you rulers enjoying freedom of will and decision in the Earth after them so that We may see and expose how you people conduct. [10:14]

  • ۔بعض ازاں ،ان لوگوں کے زوال کے بعد،ہم جناب نے تم لوگوں کو زمین میں خود مختار  حکمرانی کا حامل بنا دیا تا کہ ہم مشاہدہ کریں اور دکھا دیں کہ تم لوگ کیا طرز عمل اختیار کرتے ہو۔


وَإِذَا تُتْلَـىٰ عَلَيْـهِـمْ ءَايَاتُنَا بَيِّنَٟتٛۙ

  • Know it; When Our Aaya'at: Verbal Passages of  of Qur’ān, characteristically mirroring information, facts and knowledge in exegetical manner, were relayed upon them word by word:

  • مطلع رہو(زمانہ نزول کی تاریخ سے)جب ہم جناب  کے کلام پر مشتمل آیات  لفظ بلفظ سنائی اور مطالعہ کے لئے  ان لوگوں کودی جاتی تھیں،جو اس انداز میں مدون ہیں کہ ازخود ہر موضوع کو مترشح کر دیتی ہیں۔

قَالَ ٱلَّذِينَ لَا يَرْجُونَ لِقَآءَنَا ٱئْتِ بِقُرْءَانٛ غَيْـرِ هَـٟذَآ أَوْ بَدِّلْهُۚ

  • Those who were not expecting their presentation before Our Majesty for accountability, demanded saying: "You [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] come to us with some composition other than this Qur’ān, or you alter/edit it (Qur’ān)".

  • ۔تو ان لوگوں(عمائدین مشرکین)نے جو ہمارے حضور احتساب کے لئے پیش کئے جانے کومتوقع نہیں سمجھتے رسول کریم سے کہا"آپ  ایک ایسےمتن/عبارت کو ہمارے پاس لائیں جواِس(قرءان مجید)سے علاوہ اور مختلف ہو یاآپ اس (قرءان مجید)کے متن/عبارت کو تبدیل کر دیں"۔

Root: ر ج و; ب د ل

قُلْ مَا يَكُونُ لِـىٓ أَنْ أُبَدِّلَهُۥ مِن تِلْقَآئ ِنَفْسِىٓۖ

  • You [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] answer them: "It is not permitted for me that I ever alter-edit it (Qur’ān) by writing some content of my personal intellect-knowledge saved in my memory, (heard and gained in life till this point in time).

  • آپ(ﷺ)جواب دیں"اس(قرءان مجید)کو اپنے علم و ادراک سے دوسرے متن/عبارت میں تبدیل کرنا میرے لئے ممکن اور دائرہ اختیار میں نہیں ہے۔

إِنْ أَ تَّبِــعُ إِلَّا مَا يُوحَـىٰٓ إِلَـىَّۖ

  • I only follow in letter and spirit that which is verbally communicated to me (Qur’ān).

  • حقیقت یہ ہے کہ میں تو خلوص اور تن دہی  سےفقط اس  کی پیروی میں عمل پیرا ہوتا ہوں  جو میری طرف  کتاب میں سے  کلام بھیجا جا رہا ہے ،کسی اور کی اتباع نہیں کرتا۔

إِ نِّـىٓ أَخَافُ إِنْ عَصَيْتُ رَبِّـى عَذَابَ يَوْمٛ عَظِيـمٛ .10:15١٥

  • Indeed I am afraid of the punishment of Great Day if I were to refuse to accept the word of My Sustainer Lord" [10:15]

  • حقیقت تو یہ ہے کہ میں ایک عظیم دن میں دئیے جانے والے عذاب کا خوف  رکھتا ہوں اگر میں نے اپنے رب کے سونپے ہوئے کام کے خلاف کیا۔"

قُل لَّوْ شَآءَ ٱللَّهُ مَا تَلَوْتُهُۥ عَلَيْكُـمْ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] further tell them: "Had it been the will of Allah the Exalted, I would not have orated it (Qur’ān) syllable by syllable upon you people

  • ۔آپ(ﷺ)انہیں کہیں"اگر اللہ تعالیٰ نے ایسا چاہا ہوتا تو میں نے اس(قرءان مجید)کو لفظ بلفظ آپ لوگوں کو سنایا اور مطالعہ کے لئے نہ دیا ہوتا۔

وَلَآ أَدْرَىٰكُـم بِهِۦۖ

  • And nor He the Exalted would have made it known to you people.

  • اور نہ ان جناب نے اس کے متعلق آپ لوگوں کو ادراک دیا ہوتا۔

Root: د ر ى

فَقَدْ لَبِثْتُ فِيكُـمْ عُمُرٙا مِّن قَبْلِهِۦٓۚ

  • Realize it as you know I have lived a lifetime amongst you people before it (Qur’ān)..

  • ۔اس بات کا ثبوت یہ حقیقت ہے کہ میں نے ایک عمر تم لوگوں کے مابین بیتائی ہے اس (قرءان مجید)کو بتانے کی ابتدا کرنے سے قبل (اس وقت تو نہ کسی کتاب کو سنایا اور نہ تحریر کر کے دیا)۔

Root: ع م ر; ل ب ث

أَفَلَا تَعْقِلُونَ .10:16١٦

  • Is this demand and attitude for reason that you do not ponder-use intellect to differentiate between two phases of my life?  [10:16]

  •  کیا  اس مطالبے اور روئیے کی وجہ یہ ہے کہ تم لوگ  تعقل نہیں کرتے کہ میرے دو ادوار کے مابین فرق کو سمجھ سکو؟“

فَمَنْ أَظْلَمُ مِمَّنِ ٱفْتَـرَىٰ عَلَـى ٱللَّهِ كَذِبٙا أَوْ كَذَّبَ بِـٔ​َايَـٟتِهِۦٓۚ

  • Therefore, reflect who could be a greater evil monger-a distorter-creator of imbalances, disorder-over stepping than him who artfully conjectured a falsehood attributing to Allah the Exalted; or publicly contradicted the Aa'ya'at: Verbal Passages of the Book of Him the Exalted?

  • ۔اس لئے اس سے بڑھ کرحقیقت کے متضاد رویہ اپنانے والا کون ہو سکتا ہے جس نے دانستہ ،مقصد کے زیر اثر،  اللہ تعالیٰ سے منسوب کرتے ہوئے جھوٹ اختراع کیا۔یا ان کے کلام پر مشتمل  منفرد کتاب(قرءان مجید) کی آیات کی برملا تکذیب کی۔

إِنَّهُۥ لَا يُفْلِحُ ٱلْمُجْرِمُونَ .10:17١٧

  • It is a fact that the criminals never attain prosperous success at the end. [10:17]

  • ۔اس حقیقت سے متنبہ رہو کہ  مجرم قرار پائے لوگ آخر کار کبھی کامیاب، سرخرو اور سرفراز نہیں ہوتے۔

وَيَعْبُدُونَ مِن دُونِ ٱللَّهِ مَا لَا يَضُـرُّهُـمْ وَلَا يَنفَعُهُـمْ

  • Know it, they the polytheists worship-exhibit allegiance and subservience besides Allah the Exalted those that can neither cause them any infliction nor cause them any benefit.

  • ۔ان مجرمین کے عقل و فہم کو دیکھو؛ اور اللہ تعالیٰ کے علاوہ  تجاوز کرتے ہوئے وہ اس غیر حیات کی بندگی/پرستش کرتے ہیں جو نہ تو انہیں کوئی ضرر پہنچاتا اور نہ کوئی نفع انہیں پہنچاتا اور پہنچا سکے گا۔

وَيَقُولُونَ هَٟٓـؤُلَآءِ شُفَعَٟٓـؤُنَا عِندَ ٱللَّهِۚ

  • And they (clergy/elite) tell people referring to those idols: "These will be our Intercessors before Allah the Exalted."

  • ۔مگر(قائل  کرنے کے لئے)لوگوں سے کہتے ہیں"یہ معبودان ہمارے شفاعت گر ہیں،اللہ تعالیٰ کی جانب سے مقرر کردہ اور ان کے حضور"۔  

Root: ش ف ع

قُلْ أَتُنَبِّـُٔـونَ ٱللَّهَ بِمَا لَا يَعْلَمُ فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَلَا فِـى ٱلۡأَرْضِۚ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] question them, "Do you people give information to Allah the Exalted about that He does not know neither in the Skies and nor in the Earth?"

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں "کیا تم اللہ تعالیٰ کو وہ بات بتا رہے جسے نہ تو وہ جانتا ہے جو آسمانوں میں موجود ہے اور نہ وہ جو زمین میں موجود ہے۔

سُبْحَٟنَهُۥ وَتَعَٟلَـىٰ عَمَّا يُشْـرِكُونَ .10:18١٨

  • Glory is for Him the Exalted, His pleasure is the focus of all effort; and He is Exalted above those they conjecturally associate with Him the Exalted. [10:18]۔

  • خبردار؛ وہ جناب تمام  عظمت وکبریائی  اور جد و جہد کا محور ہیں۔اور وہ  جناب مطلق اعلیٰ  ہیں  ان تمام سے  جنہیں وہ فلسفہ شراکت کے عناصر بناتے ہیں۔

Root: ع ل و

وَمَا كَانَ ٱلنَّاسُ إِلَّآ أُمَّةٙ وَٟحِدَةٙ فَٱخْتَلَفُوا۟ۚ

  • Be aware that there has been a time when people were but like minded singular harmonious unit. Sequel to social divide, thereby, they mutually differed when they put together another ideology besides the previous one. They became bi-polar instead a unity.

  • ۔مطلع رہو؛زمان میں ایک وقت ایسا بھی رہا ہے جب انسان  صرف ایک ہم خیال وحدت تھے۔چونکہ ایک طبقاتی تقسیم(ارزل اور اکابر)معاشرت  میں وجود پذیر ہو چکی تھی اس لئے انہوں نے آپس میں ایک نئے نظرئیے کو قبل والے مقام پر لانے پر اختلاف /وحدت کا خاتمہ کر کے   دوئی کو اختیار  کر لیا۔

وَلَوْلَا كَلِمَةٚ سَبَقَتْ مِن رَّبِّكَ لَقُضِىَ بَيْنَـهُـمْ فِيمَا فِيهِ يَخْتَلِفُونَ .10:19١٩

  • And had a word of promise-decision not preceded granting a respite period by your Sustainer Lord, the matter would have been ended between them regarding what they diligently differ. [10:19]

  • ۔اس میں اچنبھے کی کوئی بات نہیں،کیونکہ اگر  فیصلہ  جس نے انسان کو صاحب حریت قرار دیا، جو آپ(ﷺ)کے رب کی جانب سے   پہلے آدم کو دے دیا گیا  تھا،موجود  نہ ہوتا تو ان کے مابین اسی وقت  اس معاملے کو ختم کر دیا جاتا  جس  میں وہ باہمی اختلاف کر رہے تھے۔

Root: س ب ق

وَيَقُولُونَ لَوْلَآ أُنزِلَ عَلَيْهِ ءَايَةٚ مِّن رَّبِّهِۦۖ

  • And they say to [deceptively delude] people: "Why is it so that some unprecedented display [miraculous happening] as support evidence-sign is not sent to him from his Sustainer Lord?"

  • ۔انکار کرنے والے عمائدین کا استدلال جان لو،وہ لوگوں سے کہتے ہیں"کیا وجہ ہے کیوں انہیں  عینی مشاہدہ کرانے کے لئے  ایسی شہادت ان کے رب نے ان پرنہیں بھیجی جو تصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے  سند ہوتی  جیسی پہلے رسولوں نے دکھائی تھیں؟"   

فَقُلْ إِنَّمَا ٱلْغَيْبُ لِلَّهِ

  • Thereat, to keep record straight, you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "The authority for the disclosure of the invisible contained in the past and future is solely for Allah the Exalted.

  • اس کے جواب میں آپ(ﷺ)ارشاد فرما دیں"ماضی اور مستقبل میں جو لوگوں سے پنہاں ہے اس کو عیاں کرنے کا استحقاق صرف اللہ تعالیٰ کا ہے۔

فَٱنتَظِرُوٓا۟ إِ نِّـى مَعَكُـم مِّنَ ٱلْمُنتَظِرِينَ .10:20٢٠

  • Therefore, wait for the promised thing to happen. I am indeed staying with you people waiting patiently." [10:20]

  • چونکہ تم لوگ  باطل نظرئیے پرقائم رہنے پر بضد ہو تو نتائج کا انتظار کرو، میں تمہارے ساتھ منتظر ہوں"۔


وَإِذَآ أَذَقْنَا ٱلنَّاسَ رَحْـمَةٙ مِّنۢ بَعْدِ ضَرَّآءَ مَسَّتْـهُـمْ إِذَا لَـهُـم مَّكْـرٚ فِـىٓ ءَايَاتِنَاۚ

  • Know general conduct of people; When Our Majesty favoured people to taste mercy after the affliction which had affected them, thereat deceptive moves are the activity they indulge in regarding Our Aa'ya'at: Verbal passages of the Book of Allah.

  • ۔بعض لوگوں کے رویئے جان لو؛ جب ہم جناب بعض لوگوں کو اس تکلیف سے جس میں وہ مبتلا تھے نجات دے کر آسانیوں اور خوشگواریوں سے لطف اندوز ہونے کا موقع فراہم کر دیتے ہیں تو   ہم جناب کے کلام پر مشتمل آیات  کے متعلق مکارانہ طرز عمل اس کے  چھچھورے پن کی شناخت      بن جاتاہے۔

Root: ذ و ق;  م ك ر

قُلِ ٱللَّهُ أَسْرَعُ مَكْـرٙاۚ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Allah the Exalted is the swiftest in planning".

  • ۔آپ(ﷺ)ارشدا فرمائیں’’اللہ تعالیٰ مطلق سریع ہیں،ہر معاملے میں تدبیر کرنے کے حوالے سے‘‘۔

Root: س ر ع

إِنَّ رُسُلَنَا يَكْتُبُونَ مَا تَمْكُرُونَ .10:21٢١

  • It is a fact; emissaries of Our Majesty, respectively appointed on every person, keep writing down whatever you people strategize or conspire. [10:21]

  • متنبہ رہو؛یہ حقیقت ہے کہ ہر شخص پر مقرر کئے ہوئے ہمارے رسول(ملائکہ)ہر اس مکروفریب کو ضبط تحریر میں لاتے ہیں جو تم لوگ کرتے ہو۔

هُوَ ٱلَّذِى يُسَيِّـرُكُمْ فِـى ٱلْبَـرِّ وَٱلْبَحْرِۖ

  • He the Exalted is the One Who enables you people to traverse in the Land and the Sea

  • ۔وہ جناب ہیں جو تمہارے لئے خشک مقامات اور سمندر میں جانا اور سفر کرنا ممکن بناتے ہیں۔

Root: س ى ر

حَتَّىٰٓ إِذَا كُنتُـمْ فِـى ٱلْفُلْكِ

  • This fact is ordinarily not appreciated so long when you were travelling in the sea within the ship 

  • ۔تم اس حقیقت کا اس وقت تک ادراک نہیں کرتے جب تم کشتیوں میں سوارسکون سے سفر کر رہے ہوتے ہو۔

Root: ف ل ك

وَجَرَيْنَ بِـهِـم بِرِيحٛ طَيِّبَةٛ وَفَرِحُوا۟ بِـهَا

  • They (ships) were sailing carrying them (people-10:21) on board with pleasant breeze blowing, and they were rejoicing the pleasant moments

  • ۔اور وہ موافق ہوا کے ساتھ  اپنے مسافروں کو ساتھ لئے رواں ہوتی ہیں اوروہ لوگ  خوشگوار ہوا سے  فرحت  محسوص کر رہے ہوتے ہیں۔

Root: ر و ح;  ف ر ح

جَآءَتْـهَا رِيحٌ عَاصِفٚ

  • Until when a wind overtook her (the Ship). One [masculine active participle] Twister who makes things revolve and spread was laden within her: Wind.

  • ۔کہ اچانک اس  سمندری آندھی (hurricane)نے اسے(کشتی)آن لیا جس کے اندر ایک (عاصف۔اسم فاعل مذکر)گھما دینے والا ، طغیانی کا دائرہ بنا دینے والاموجود ہے۔

Root: ر و ح; ع ص ف   Hurricane and Waterspout

وَجَآءَهُـمُ ٱلْمَوْجُ مِن كُلِّ مَكَانٛ

  • And the Wave reached them coming from all sides

  • ۔اور ان پر جھپٹتے ہوئے موج نےہر جانب سے انہیں گھیر لیا۔

Root: م و ج

وَظَنُّوٓا۟ أَنَّـهُـمْ أُحِيطَ بِـهِـمْۙ

  • And they apprehensively assessed that they have certainly been surrounded by it (waves) from all sides

  • ۔اور انہوں نے یقینی گمان کرلیا کہ ان موجوں کے ذریعے انہیں گھیر لیا گیا ہے۔

Root: ح و ط

دَعَوُا۟ ٱللَّهَ مُخْلِصِيـنَ لَهُ ٱلدِّينَ

  • They called upon Allah the Exalted promising that they will adhere to the Constitution and Code of Life as sincere devotees-allegiant for Him the Exalted

  • اس وقت انہوں نے اللہ تعالیٰ  کو مدد کے لئے پکارا یہ وعدہ کرتے ہوئے کہ وہ    اُن کے  متعین کردہ آئین  اور ضابطہ حیات/ دین (اسلام)کے ساتھ مخلصانہ یکسوئی سے وابستہ رہتے ہوئے   کاربند رہیں گے۔

لَئِنْ أَنجَيْتَنَا مِنْ هَـٟذِهِۦ لَنَكُونَنَّ مِنَ ٱلشَّٟكِـرِينَ .10:22٢٢

  • "We swear that if You the Exalted rescued us from this life threatening situation, we will henceforth certainly remain obliged and grateful". [10:22]

  • ۔"ہم وعدہ کرتے ہیں کہ اگر آپ جناب نے اس طوفان میں ڈوبنے سے ہمیں  محفوظ رکھا تو یقیناً آئندہ ہم شکر گزار رہیں گے"۔

فَلَمَّآ أَنجَىٰـهُـمْ إِذَا هُـمْ يَبْغُونَ فِـى ٱلۡأَرْضِ بِغَيْـرِ ٱلْحَقِّۗ

  • Acceding their prayer as soon Our Majesty saved and rescued them, they again start indulging in excesses in the Earth void of justification and rightful cause.

  • ۔ان کی عاجزانہ دعا اور انہیں وعدہ کو سچ کر دکھانے کا موقع دینے کے لئے جب ہم جناب نے  پانی کی پہنچ سے دور رکھ کراس خطرے سے انہیں نجات دلاکر خشکی پر پہنچا دیاتو پھر وہ لگے معاشرے میں بغیر جواز اور مبنی بر حقیقت استدلال کے بگاڑ کی جستجو میں۔

Root: غ ى ر and ح ق ق

يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلنَّاسُ إِنَّمَا بَغْيُكُـمْ عَلَـىٰٓ أَنفُسِكُـمۖ

  • O you the Mankind! indeed your excesses only effect upon your selves

  • اے لوگو!دھیان سے سنو! حقیقت یہ ہے کہ تمہارے سرکش روئیے کا خمیازہ خود تمہارے نفوس پر ہو گا۔

مَّتَٟعَ ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَاۖ

  • All that you gain by excesses is merely the transitory sojourn material of the worldly life.

  • ۔تمہارا یہ سرکش رویہ محض دنیاوی حیات کے سامان زیست کے لالچ میں ہے۔

ثُـمَّ إِلَينَا مَرْجِعُكُـمْ

  • Afterwards your escorting to subject you to justice will be towards Our Majesty

  • ۔بعد ازاں قیامت برپا ہونے کے تم نے احتساب کے لئے  ان جناب کی جانب لوٹنا ہے۔

فَنُنَبِّئُكُـم بِمَا كُنتُـمْ تَعْمَلُونَ .10:23٢٣

  • Thereat, Our Majesty will inform-charge sheet you about the activities you were in. [10:23]

  • ۔چونکہ انصاف اور عدالتی تقاضوں کو پورا کیا جائے اس لئے ہم جناب فرد جرم تم لوگوں کو بتائیں گے جو مستوجب سزا اعمال تم کرتے رہے تھے۔

إِنَّمَا مَثَلُ ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَا كَمَآءٛ أَنزَلْنَٟهُ مِنَ ٱلسَّمَآءِ

  • The analogy of the life of this lowly world is merely like the water that Our Majesty has descended from the Sky

  • ۔اس حقیقت کا ادراک کرو کہ حیات دنیا کی مثال ایسے ہے جیسے پانی،ہم جناب نے اسے آسمان سے مخصوص مقدار میں برسایا تھا۔

فَٱخْتَلَطَ بِهِۦ نَبَاتُ ٱلۡأَرْضِ

  • Thereby, the produce-embryonic plant of the Earth meticulously associated with it

  • ۔چونکہ حالات سازگار ہو گئے تھے اس لئے زمین کی نباتات نے اس کے ساتھ اختلاط کر کے پروان چڑھایا۔

Root: ن ب ت

مِمَّا يَأْكُلُ ٱلنَّاسُ وَٱلۡأَنْعَٟمُ

  • -- Human beings and the herbivore mammals eat out of it --

  • ۔۔انسان اور چارہ خور چوپائے ان میں سے اپنے لئے موزوں کو کھاتے ہیں۔۔

حَتَّىٰٓ إِذَآ أَخَذَتِ ٱلۡأَرْضُ زُخْرُفَهَا وَٱزَّيَّنَتْ وَظَنَّ أَهْلُهَآ أَنَّـهُـمْ قَـٟدِرُونَ عَلَيْـهَآ

  • Flourishing of plants continued until when the Land attained its bloomy embellishment and became fascinating; and her inhabitants thought they were capable to manage her:

  • ۔نباتات پھلتی پھولتی رہتی ہیں یہاں تک کہ جب زمین نے اپنا سنگھار کر لیا اور اپنے آپ کو جاذب نگاہ بنا لیا اور اس کے باسیوں نے گمان کر لیا کہ اب وہ اس پرکسی لمحے اختیار رکھنے والے بن جائیں گے۔

Root: ز خ ر ف  ; ظ ن ن

أَتَىٰـهَآ أَمْـرُنَا لَيْلٙا أَوْ نَـهَارٙا فَجَعَلْنَٟهَا حَصِيدٙا كَأَن لَّمْ تَغْنَ بِٱلۡأَمْسِۚ

  • Our command reached to it either during the night or the day, whereat Our Majesty rendered her (produce of land) mowed as if it had not flourished yesterday.

  • ۔تو ہم جناب کا فرمان رات یا دن کے کسی وقت اس پر پہنچ گیا۔اس کے نتیجے میں ہم جناب نے اسے کٹا ہوا بھوسا بنا دیا جیسے کہ بیتے کل میں اس(زمین)نے کچھ دیا ہی نہ تھا۔

Root: ح ص د

كَذَٟلِكَ نُفَصِّلُ ٱلْءَايَـٟتِ لِقَوْمٛ يَتَفَكَّرُونَ .10:24٢٤

  • This is the manner Our Majesty renders the signs - verbal passages of Qur’ān distinct by demarcating, categorizing, delineating and individuating all aspects for people who objectively ponder and reflect. [10:24]

  • اس طرح کے انداز بیان سے ہم جناب آیات کو جدا جدا موضوعات کے فریم میں تالیف فرماتے ہیں۔اس کا بنیادی مقصد  ایسےلوگوں  کو حقیقت اور مقصد تخلیق کو سمجھنے کے لئے آسان فہم بنانا ہے جو ازخود تفکر کرتے ہیں۔

Root: ف ك ر Root: ف ص ل

وَٱللَّهُ يَدْعُوٓا۟ إِلَـىٰ دَارِ ٱلسَّلَٟمِ

  • Know it; Allah the Exalted calls towards the abode of tranquillity, peace and joy

  • اور اللہ تعالیٰ لوگوں کوامن ،سکون و سلامتی،خوف و حزن سے منزہ قیام گاہ  کی جانب محو سفر ہونے کی دعوت دے رہے ہیں۔

وَيَـهْدِى مَن يَشَآءُ إِلَـىٰ صِـرَٟطٛ مُّسْتَقِيـمٛ .10:25٢٥

  • And He the Exalted keeps guiding him, about whom He the Exalted so decides, towards the High Road: Course that leads safely and stably to the destination of peace and tranquillity. [10:25]

  • وہ جناب اس شخص کو جس کے متعلق رضامند ہوتے ہیں کہ متمنی ہدایت ہے صراط مستقیم کی جانب گامزن فرما دیتے ہیں۔

لِّلَّذِينَ أَحْسَنُوا۟ ٱلْحُسْنَـىٰ وَزِيَادَةٚۖ

  • The most appropriate and proportioned reward and excessive addition, minimum ten times, is promised and ensured for those who who acted moderately, decently and righteously.

  • انتہائی مناسب اوردل آویز صلہ  اور اس پر اضافہ،کم از کم دس گناان میں سے ان کے لئے منتظر ہے جنہوں نے حسن توازن کا مظاہرہ کیا؛

وَلَا يَرْهَقُ وُجُوهَهُـمْ قَتَـرٚ وَلَا ذِلَّـةٌۚ

  • Neither depression nor humiliation will reflect on their faces.

  • ۔نہ تو افسردگی، مرجھاہٹ اور نہ خواری کے تاثرات ان کے چہروں پر چھائے ہوں گے۔

Root: ذ ل ل; ق ت ر

أُو۟لَـٟٓئِكَ أَصْحَـٟـبُ ٱلْجَنَّةِۖ

  • They are the people who will be the residents-inmates of the Paradise.

  • ۔یہ لوگ ہیں جو اصحاب جنت ہیں۔

Root: ص ح ب

هُـمْ فِيـهَا خَٟلِدُونَ .10:26٢٦

  • They will abide therein permanently. [10:26]

  • ۔یہ لوگ ہمیشہ اس میں رہائش پذیر رہیں گے۔

وَٱلَّذِينَ كَسَبُوا۟ ٱلسَّيِّــَٔاتِ جَزَٟٓؤُا۟ سَيِّئَةِۭ بِمِثْلِـهَا

  • And as regards those who earned evil deeds,  their punishment will be proportionate to the evil done.

  • ۔اور جہاں تک ان لوگوں کا تعلق ہے جنہوں نے برائیوں کو اپنا کسب بنائے رکھا ان کو سزا کے طور اس برائی کے مثل تکلیف میں مبتلا کیا جائے گا جو ان کی برائی تکلیف کا باعث بنی تھی۔

وَتَرْهَقُهُـمْ ذِلَّـةٚۖ

  • And humiliation will overwhelm them

  • ۔خواری کے تاثرات ان کے چہروں پر چھائے اور نمایاں ہوں گے۔

Root: ذ ل ل;  ر ھ ق

مَّا لَـهُـم مِّنَ ٱللَّهِ مِنْ عَاصِـمٛۖ

  • Not at all a defender-defence counsel listed by Allah the Exalted will be there for them.

  • اللہ تعالیٰ کی جانب سے قطعاً کوئی وکیل صفائی ان کی معاونت کرنے کے لئے مقرر کیا جائے گا۔

Root: ع ص م

كَأَنَّمَا أُغْشِيَتْ وُجُوهُهُـمْ قِطَعٙا مِّنَ ٱلَّيْلِ مُظْلِمٙاۚ

  • [humiliation will overwhelm them] As if their faces had been veiled by patches of night, rendering them darkened black.

  • ۔ان کے چہروں پر خواری کے تاثرات ایسے ہوں گے جیسے تاریک سیاہ رات میں سے قطع کئے ٹکڑے نے ان کے چہروں کو ڈھانپ لیا ہو۔

Root: غ ش ى; ق ط ع

أُو۟لَـٟٓئِكَ أَصْحَـٟـبُ ٱلنَّارِۖ

  • They are the people who will be the resident inmates of the scorching Hell-Prison.

  • یہ وہ لوگ ہیں جو جہنم میں رہنے والے ہوں گے۔

Root: ص ح ب

هُـمْ فِيـهَا خَٟلِدُونَ .10:27٢٧

  • They will abide therein permanently. [10:27]

  • یہ لوگ اس(جہنم)میں ہمیشہ رہائش پذیررہیں گے۔

وَيَوْمَ نَحْشُـرُهُـمْ جَـمِيعٙا

  • Know the happenings of the Day of resurrection; Our Majesty will collect them, all together

  • ۔آخرت کے حقائق سے بھی مطلع ہو جاؤ؛ہم جناب جس دن ان سب کو اجتماعی طور پر اکٹھا کریں گے؛

ثُـمَّ نَقُولُ لِلَّذِينَ أَشْرَكُوا۟ مَكَانَكُـمْ أَنتُـمْ وَشُرَكَآؤُكُمْۚ

  • Afterwards Our Majesty will say for those who ascribed partners, stay where you are, you and your partners.

  • ۔بعد ازاں اسمبلی ہم جناب ان لوگوں سے کہیں گے جو  اپنےہاتھوں سے تراشے بتوں کو مشترک معبودان قرار دے کر پرستش کرتے تھے، تم لوگ اور تمہارے اختیار کردہ شرکاء اپنے اپنے مقام پر رکے رہو۔

فَزَيَّلْنَا بَيْنَـهُـمْۖ

  • Then Our Majesty made a rift evident between them

  • ۔چونکہ ہم جناب نے انہیں قوت گویائی عنایت کر دی تھی  اس لئے ان کے مابین تفاوت کو نمایاں کر دیا۔

Root: ز ى ل

وَقَالَ شُرَكَآؤُهُـم مَّا كُنتُـمْ إِيَّانَا تَعْبُدُونَ .10:28٢٨

  • And their partners said to them: "you were not worshipping and allegiant to us exclusively. [10:28]

  • جس پر ان کے بنائے ہوئے شریک خداؤں نے کہا’’تم لوگ ہماری بندگی نہیں کرتے تھے۔

فَكَـفَىٰ بِٱللَّهِ شَهِيدَاۢ بَيْنَنَا وَبَيْنَكُـمْ

  • Thereby, Allah the Exalted suffices as witness between us and between you people

  • چونکہ اللہ تعالیٰ ہر ظاہر اور باطن کو جانتے ہیں،اس لئے وہ جناب ہمارے درمیان اور تمہارے درمیان ہمیشہ عینی شاہد کے طور موجود تھے۔

Root: ك ف ى

إِن كُنَّا عَنْ عِبَادَتِكُـمْ لَغَٟفِلِيـنَ .10:29٢٩

  • The fact is that we were indeed unaware of your worshipping rituals." [10:29]

  • ۔یہ حقیقت ہے ہمارے بارے کہ ہم یقیناً تم لوگوں کی عبادت سے بے خبر(اپنی تسبحات میں  مصروف)تھے‘‘(سورۃ مریم۔۸۲ بھی دیکھ لیں)۔

Root: غ ف ل

هُنَالِكَ تَبْلُوا۟ كُلُّ نَفْسٛ مَّآ أَسْلَفَتْۚ

  • Thereat every person will acquaint with the nature of what it did in gone days.

  • ۔اس بیان پر فوری طور پر وہیں کھڑے کھڑے ہر مشرک شخص جان لے گا اس بات کی اصلیت کو جو گئے دنوں وہ کرتا رہا تھا۔

Root: س ل ف

وَرُدُّوٓا۟ إِلَـى ٱللَّهِ مَوْلَاهُـمُ ٱلْحَقِّۖ

  • And they were turned towards Allah the Exalted, their true Sustainer Lord.

  • ۔اور انہیں اللہ تعالیٰ کی جانب لے جایا جائے گا۔ان کے فرمانروا،حقیقی مالک۔

وَضَلَّ عَنْـهُـم مَّا كَانُوا۟۟ يَفْـتَـرُونَ .10:30٣٠

  • And that lost/vanished from them which they used to artfully fabricate. [10:30]

  • ۔اور  ان کے دل و دماغ سے  وہ غائب ہو گیا جو  زیر مقصد کانٹ چھانٹ کر وہ اختراع کرتے رہتے تھے۔


قُلْ مَن يَرْزُقُكُـم مِّنَ ٱلسَّمَآءِ وَٱلۡأَرْضِ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask them, "Who provides you sustenance for life from the Sky and the Earth

  • آپ(ﷺ)لوگوں کو اس حقیقت کا سامنا کرائیں یہ پوچھ کر’’وہ کون ہیں جو تم لوگوں کو آسمان اور زمین میں سے رزق مہیا کرتے ہیں؟

أَمَّن يَـمْلِكُ ٱلسَّمْعَ وٱلۡأَبْصَٟرَ

  • Or Who controls and commands the faculty of listening and vision

  • ۔یا وہ کون ہیں جو سماعت اور بصارتیں دینے پر اختیار رکھتے ہیں؟

Root: م ل ك

وَمَن يُخْرِجُ ٱلْحَـىَّ مِنَ ٱلْمَيِّتِ وَيُخْرِجُ ٱلْمَيِّتَ مِنَ ٱلْحَـىِّ

  • And who brings out the living from the matter-dead; and brings out matter-dead from the living

  • ۔اور وہ کون ہیں جو مادے سے ابتدا کر کے حیات کو خروج دیتے ہیں اور حیات میں سے مادے/میت کو خروج دیتے ہیں؟

وَمَن يُدَبِّرُ ٱلۡأَمْرَۚ

  • And who organizes, manages and commands all matters until their logical conclusion?

  • ۔اور کون ہیں وہ جناب  جو ہر طے شدہ معاملے کوترتیب سے پائے تکمیل تک پہنچاتے ہیں۔

فَسَيَقُولُونَ ٱللَّهُۚ

  • In response, they will say after a little pause: "He is Allah the Exalted".

  • ۔چونکہ جس نکتے کر اجاگر کرنے کے لئے سوال پوچھا گیا ہےان کے متعلق جانتے ہیں کہ ایسی کوئی صلاحیت ان میں نہیں اس لئے کچھ ٹھہر کر کہیں گے’’یہ اللہ تعالیٰ کرتے ہیں‘‘۔

فَقُلْ أَفَلَا تَتَّقُونَ .10:31٣١

  • Thereat, in response to their admission you ask them: "Would you people still not protect yourselves?" [10:31]

  • ۔چونکہ انہوں نے  اعتراف  کر لیا ہے اس لئے  آپ (ﷺ) ان سے پوچھیں "کیا تم لوگ حقیقت کو جان لینے کے باوجود اپنے آپ کوخوفناک نتائج و عواقب سےمحفوظ کرنے کے لئے  اللہ تعالیٰ سےپناہ کے خواستگار نہیں بنو گے؟"

فَذَٟلِـكُـمُ ٱللَّهُ رَبُّكُـمُ ٱلْحَقُّۖ

  • Thereby, you people remain mindful of Allah the Exalted; your Sustainer Lord, the Infallible Reality.

  • ۔چونکہ بالواسطہ تم نے تمام معبودوں کو کسی بھی خصوصیت سے عاری قرار دے دیا تو ان تمام کے حامل اللہ تعالیٰ ہیں، تم لوگوں کے رب،وہ جناب مطلق حقیقت ہیں۔

فَمَاذَا بَعْدَ ٱلْحَقِّ إِلَّا ٱلضَّلَٟلُۖ

  • Thereby, what is there after acceptance of the infallible fact except turning in the state of neglectful wandering?

  • ۔چونکہ حقیقت تمہیں سمجھ آ رہی ہے تو دانستہ انحراف اور گم کردہ راہ  رہنےکا حقیقت کے افشاں ہو جانے کے بعد کیا جواز اور سبب ہے۔

فَأَنَّـىٰ تُصْرَفُونَ .10:32٣٢

  • Therefore, how and for what reason you people are turned away? [10:32]

  • ۔چونکہ تم اس انحراف پر قائم ہو اس لئے یہ تو بتاؤ کہ کیسے اور کیوں تم لوگوں کو دوسری جانب پلٹا دیا جاتا ہے۔

Root: ص ر ف

كَذَٟلِكَ حَقَّتْ كَلِمَتُ رَبِّكَ عَلَـى ٱلَّذِينَ فَسَقُوٓا۟ أَنَّـهُـمْ لَا يُؤْمِنُونَ .10:33٣٣

  • This is how the Word of your Sustainer Lord is proved and established upon those who transgressed distancing away from restraints, that they will not accept and believe. [10:33]

  • ۔اس طرح آپ(ﷺ)کے رب کی دی ہوئی اطلاع ان لوگوں پر حقیقت بن گئی ہے جنہوں نے بدیہی حقیقتوں سے تنفر انگیز علیحدگی کو اپنی سرشت بنا لیا ہے کہ وہ ایمان نہیں لائیں گے۔

Root: ف س ق

قُلْ هَلْ مِن شُرَكَآئِكُـم مَّن يَبْدَؤُا۟ ٱلْخَلْقَ ثُـمَّ يُعِيدُهُۥۚ

  • You the Messenger confront them: "Who is there who originates the creation amongst the godheads you people declare as associates, and afterwards causes its iterationafter pause of time will cause his relapsereverted to original state? [it is sensitive for them, will keep mum, therefore]

  • ۔آپ(ﷺ)ان سے پوچھیں’’ذرا یہ تو بتاؤ؛تمہارے معبودان میں سے کوئی ہے جو تخلیق کی ابتدا کر سکتا ہے،بعد ازاں اس کے معدوم ہو جانے کے اسے از سر نواصل حالت میں لوٹا سکتا ہے؟

Root: ع و د

قُلِ ٱللَّهُ يَبْدَؤُا۟ ٱلْخَلْقَ ثُـمَّ يُعِيدُهُۥۖ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Allah the Exalted originates the creation and after pause of time will cause his relapsereverted to original state

  • ۔آپ (ﷺ)  ارشاد فرمائیں ’’یہ اللہ تعالیٰ ہیں ۔۔۔ وہ جناب سوچے سمجھے مقصد کے تحت تخلیق کی ابتدا فرماتے ہیں۔بعد ازاں مقررہ وقت پر وہ جناب اس تخلیق کردہ کوازسر نواپنی جانب پلٹا دیں گے۔

فَأَنَّـىٰ تُؤْفَكُونَ .10:34٣٤

  • Thereby, how come you people are deluded away from Him the Exalted?" [10:34]

  • ۔چونکہ تم لوگوں کو ان معبودان کی اصلیت کا تجربے اور مشاہدے سے ادراک ہے تو کیسے اور کیوں تم لوگوں کو اللہ تعالیٰ سے منحرف کر کے جھوٹے نظریہ کی جانب راغب کر دیا جاتا ہے‘‘۔

قُلْ هَلْ مِن شُرَكَآئِكُـم مَّن يَـهْدِىٓ إِلَـى ٱلْحَقِّۚ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] confront them, "Who is one of your associates who guides towards the truth and reality?"

  • ۔آپ(ﷺ)ان سے پوچھیں’’ذرا یہ تو بتاؤ کہ تمہارے معبودان میں سے کوئی ہے جو حقیقت کی جانب رہنمائی دینے کی صلاحیت رکھتا ہے‘‘۔

قُلِ ٱللَّهُ يَـهْدِى لِلْحَقِّۗ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Allah the Exalted guides for the Infallible Truth (Qur´ān).

  • ۔آپ(ﷺ)بتائیں’’یہ اللہ تعالیٰ ہیں جو مطلق حقیقت کو جاننے کے لئے رہنمائی فرماتے رہتے ہیں‘‘۔

أَفَمَن يَـهْدِىٓ إِلَـى ٱلْحَقِّ أَحَقُّ أَن يُتَّبَعَ أَمَّن لَّا يَـهِدِّىٓ إِلَّآ أَن يُـهْدَىٰۖ

  • Is then he more deserving who pioneers towards the infallible reality to be pursued in letter and spirit or someone else who can not aright guide his own self unless guidance is given to him?

  • ۔کیا یہ صائب نہیں کہ جو شخص (رسول کریم ﷺ)بیان حقیقت کی جانب جانے کی راہ دکھا  رہاہے  وہ اس بات کا زیادہ  حق دار ہے کہ اس کے پیچھے خلوص سے چلا جائے یا اس کے پیچھے جانا جو خود تو کسی مقام کی جانب رہنمائی  نہیں کر سکتا سوائے اس کے کہ خود اس کو  کسی مقام پر لے جایا جائے۔

فَمَا لَـكُـمْ كَيْفَ تَحْكُـمُونَ .10:35٣٥

  • Therefore, what else is relevant for you people? How you adjudge? [10:35]

  • ۔چونکہ تم جانتے ہو کہ وہ خود تو چل کر کسی جگہ کا نشان راہ(ھدًی)بھی نہیں بن سکتے تو تمہارے لئے کیا جواز ہے کہ کیسے لوگوں کو ان کی پرستش کا حکم دیتے ہو۔

وَمَا يَتَّبِــعُ أَكْثَرُهُـمْ إِلَّا ظَنّٙاۚ

  • Realize it, Most of them purposely pursue but conjectural hearsay-suppositions-hypothetic assertions.

  • ۔متنبہ رہو؛ان لوگوں کی اکثریت سوائے گمان  سے اختراع کردہ تصور کے کسی مبنی بر حقیقت بات کی زیر مقصد پیروی نہیں کرتے۔

إِنَّ ٱلظَّنَّ لَا يُغْنِى مِنَ ٱلْحَقِّ شَيْئٙاۚ

  • The fact remains; conjecture and imaginative matter not at all avail in the presence of the infallible fact.

  • ۔جبکہ حقیقت یہ ہے کہ  فرسودہ گمان پائے ثبوت کو پہنچی سچائی کے مقابل کسی بھی معاملے میں منفعت بخش نہیں ہوتا۔

إِنَّ ٱللَّهَ عَلَيـمُۢ بِمَا يَفْعَلُونَ .10:36٣٦

  • Remain aware, Allah the Exalted is fully aware of what innovative acts they perform." [10:36]

  • ۔یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ ان سے مطلق باخبر ہیں جو بھی جدید حرکت وہ کرتے ہیں۔


وَمَا كَانَ هَـٟذَا ٱلْقُرْءَانُ أَن يُفْتَـرَىٰ مِن دُونِ ٱللَّهِ

  • Mind it, this Qur’ān were not such which could be authored, compiled and edited by someone other than Allah the Exalted.

  • ۔اس حقیقت کو جان بھی لو اور پرکھ بھی لو؛یہ قرءان مجید ایسا کلام نہیں ہے جسے اللہ تعالیٰ کے سوائے کوئی تصنیف و تالیف کبھی بھی کر سکے۔

وَلَـٟكِن تَصْدِيقَ ٱلَّذِى بَيْـنَ يَدَيْهِ

  • To say it are ancient tales written by the Messenger is a lie; on the contrary, it is the affirmation and authentication in time and space of that which was sent in front of it (Qur’ān [previously sent -and/or Injeel]) 

  • ۔یہ کہنا کہ رسول کریم  ماضی کی اساطیر  کے مؤلف ہیں دروغ گوئی ہے،بلکہ حقیقت یہ ہے کہ زمان و مکان میں یہ اس کی تصدیق کرتا رہے گا جو زمان و مکان میں اس سے قبل حسب وعدہ ہدایت نامہ بھیجا گیا تھا۔

وَتَفْصِيلَ ٱلْـكِـتَٟبِ

  • Moreover, the organization-differentiation-delineation-arrangement of the said Book (Qur’ān) has been by the command of the Sustainer Lord of the Universes.

  • ۔اور تو اور منفرد کتاب(قرءان مجید)کو موضوعات کی فصول(فریم)میں متمیز اور مدون کرنا بھی ان جناب کی جانب اور سوابدید سے ہے۔

لَا رَيْبَ فِيهِ

  • -- Let it be known about the contents of the Book that it are absolutely void of peeving substance: suspicious, conjectural, whimsical, conflicting, ambiguous, anomalous, irrational, un-certain, illusory, unsubstantiated, incongruous, biased and opinionated matter --.

  • اس کے مجموعہ کلام/ ؍بیان میں تخیل،مفروضوں،تصور،غیر تصدیق شدہ،نفسیاتی ہیجان پر مبنی ایسا کچھ موادبھی نہیں جودوران مطالعہ باعث الجھن، اضطراب و ہیجان بنے/یہ ہے وہ کتابِ خاص جوریب سے منزہ بیانِ حقیقت ہے۔

مِن رَّبِّ ٱلْعَٟلَمِيـنَ .10:37٣٧

  • It is composed and organized in distinct frames by the command of the Sustainer Lord of the universes-physical realms. [10:37]

  • ۔اس کو متمیز فصول اورآسان فہم انداز میں عالمین کے رب کی جانب سے ملنے والی ہدایات کے مطابق مدون اور  تالیف کیا گیا ہے۔

أَمْ يَقُولُونَ ٱفْتَـرَىٰهُۖ

  • Contradicting it, do they keep saying to people: "He: Muhammad [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] has drafted, compiled it (Qur’ān) with his own effort, perception, knowledge, and understanding?"

  • ۔کیا وہ (رسول کریم کا انکار کرنے والے عمائدین) لوگوں سے کہتے ہیں" اس (محمّد ﷺٗ)نے اپنے مقاصد کے لئے محنت اور لگن سے اس(قرءان)کو  ازخوداختراع کیا ہے"۔

قُلْ فَأْتُوا۟ بِسُورَةٛ مِّثْلِهِۦ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask them: "If you think it is authored by me, thereby, you bring one Surat: Segment authored in semblance of a Segment of it (Qur’ān)

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں ’’چونکہ  آپ کا گمان  اور الزام ہے کہ یہ میرا تصنیف کردہ ہے  تواس کو ثابت کرنے یا اپنے آپ کو تذبذب اورالجھاؤ سے نکالنے کے لئےجائیں اوراِس (قرء ان )کے مثل  تصنیف کردہ ایک سورۃ ہی لے آئیں۔

Root: س و ر

وَٱدْعُوا۟ مَنِ ٱسْتَطَعْتُـم مِّن دُونِ ٱللَّهِ

  • And for the needful, you invite- get help of all your friends-helpers-lawyers you have access to other than Allah the Exalted

  • اورسوائے اللہ تعالیٰ کے اس کام کے لئے  تمام  صاحبان علم اور لکھاریوں  کو بھی مدعو کر لو جن تک تمہاری رسائی ہو سکے۔

إِن كُنتُـمْ صَٟدِقِيـنَ .10:38٣٨

  • Try it, if you were truthful in your assertion about authorship of Qur’ān." [10:38]

  • ایسا کر کے دکھاؤ اگر تم اپنے کہے ہوئے قول میں سچے ہو‘‘۔

بَلْ كَذَّبُوا۟ بِمَا لَمْ يُحِيطُوا۟ بِعِلْمِهِۦ

  • No, their contention is false, the fact is that they have contradicted because of that which they have not comprehended-encompassed (hereafter-resurrection) with the assistance of its knowledge (Qur’ān).

  • ۔ان کا یہ محض گمان ہے،انہوں نے برسرعام اس کو اس سبب سے  جھٹلایاہے کہ اس میں مندرج معلومات و علم کا مطالعہ کر کے  انہوں نے احاطہ ہی نہیں کیا۔

Root: ح و ط

وَلَمَّا يَأْتِـهِـمْ تَأْوِيلُـهُۥۚ

  • And as soon when actualization of its forecast would have come to them (they will have no respite and of avail believing it-read with 7:53; 34:51-52).
  • ۔اور نہ ہی اب تک  اس میں بیان کردہ انجام تکذیب  کا ان پروقوع ہوا ہے۔

كَذَٟلِكَ كَذَّبَ ٱلَّذِينَ مِن قَبْلِـهِـمْۖ

  • In the same manner, people who flourished before their times had contradicted

  • ۔اس انداز میں ان لوگوں نے بھی  کلام اللہ کو برسرعام جھٹلایاتھا جن کی جانب ان سے قبل رسولوں کو بھیجا گیا تھا۔

فَٱنظُرْ كَيْفَ كَانَ عَٟقِبَةُ ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .10:39٣٩

  • Thereby (to reduce sense of your grief), keep in mind as to what was the upshot of the people of past who were unjust evil doers. [10:39]

  • ۔اس لئے(اپنے احساس غم کو کم کرنے کےلئے)آپ (ﷺ)اس بات کو پیش نظر رکھیں کہ  ماضی میں حقیقت کے منافی بگاڑ کا رویہ اپنانےوالوں کا آخر کار کیا انجام ہوا۔

وَمِنـهُـم مَّن يُؤْمِنُ بِهِۦ وَمِنْـهُـم مَّن لَّا يُؤْمِنُ بِهِۦۚ

  • Know it, And there are rational people amongst them who accept/agree with it (Qur’ān) and some others amongst them do not accept/agree with it (Qur’ān).

  • ۔ان میں عقل و فہم کے تابع رہنے والے دل کی شاد سے اس پر ایمان لاتے ہیں اور ان میں جوجذبات و تعصب کے زیراثررہنے کو ترجیح دیتے ہیں وہ اس پر ایمان نہیں لاتے۔

وَرَبُّكَ أَعْلَمُ بِٱلْمُفْسِدِينَ .10:40٤٠

  • Be aware; your Sustainer Lord is fully aware of those who create disorder, disquiet, imbalance, distortions, spread wicked, conjectural ideas/intellectual deceit/confusion in society. [by this act they  also get exposed to you] [10:40]

  •  ۔اور آپ(ﷺ)کے رب انہیں بہت اچھی طرح جانتے ہیں جوبگاڑ پیدا کرنے کے درپے رہتے ہیں۔

وَإِن كَذَّبُوكَ فَقُل لِّـى عَمَلِـى وَلَـكُـمْ عَمَلُـكُـمْۖ

  • Take note, if they publicly contradicted what you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] stated to them the Aa'ya'at: Verbal passages of Qur’ān, thereat you pronounce, "My acts will yield result and affect for me; and your acts will yield result and affect for you people.

  • ۔اور اگرآپ(ﷺ)کے بیان کو وہ سرعام جھٹلا دیں تو چونکہ صاحبان حریت ہیں اس لئے آپ ارشاد فرما دیں’’میرا عمل میرے لئے نتائج پیدا کرے گا اور تمہارا عمل تم لوگوں کے لئے نتائج کا موجب ہو گا۔

أَنتُـم بَرِىٓــُٔونَ مِمَّآ أَعْمَلُ

  • You people are absolved of that what I act upon

  • ۔تم لوگ ہراس عمل کی جواب دہی سے بری الذمہ ہو جن پر میں عمل پیرا ہوں۔

وَأَنَا۟ بَرِىٓ ءٚ مِّمَّا تَعْمَلُونَ .10:41٤١

  • And I am absolved of what acts you people do presently and will do in future." [10:41]

  • ۔اور میں ہر اس عمل سے بری الذمہ ہوں جن پر تم لوگ عمل پیرا ہو‘‘۔

وَمِنْـهُـم مَّن يَسْتَمِعُونَ إِلَيْكَۚ

  • And there are people amongst them who pretend attentively listening you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam].

  • ۔اور ان عمائدین مشرکین میں لوگوں کو فریب دینے والے وہ بھی ہیں جو ظاہر کرتے ہیں کہ (قرءان)سننے کی خواہش آپ(ﷺ)کی جانب متوجہ ہیں۔

أَفَأَنتَ تُسْمِعُ ٱلصُّمَّ وَلَوْ كَانُوا۟۟ لَا يَعْقِلُونَ .10:42٤٢

  • Thereby, can you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] cause such deaf to listen despite they were intentionally not applying the faculty of intellect to save speech in memory? [10:42]

  • ۔اے رسول کریم!آپ بلاوجہ غمگین ہوتے ہیں؛اس لئے اس پر غور کریں کہ کیا آپ  ایک ایسے کانوں سے  بہرے  شخص کو اپنی بات سنوا سکتے ہیں جو آپ سے پیٹھ پھیر کر چل دے  اور کیا ان کی سماعتوں تک بات پہنچا سکتے ہیں جو عقل استعمال کرنے پر رضامند ہی نہیں ہوتے تھے؟

Root: ص م م

وَمِنـهُـم مَّن يَنظُرُ إِلَيْكَۚ

  • And there are people amongst them who pretend looking towards you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam].

  • ۔اوران عمائدین مشرکین میں لوگوں کو فریب دینے والے وہ بھی ہیں جو محفل میں آپ کی جانب دیکھتے رہتے ہیں۔

أَفَأَنتَ تَـهْدِى ٱلْعُمْىَ وَلَوْ كَانُوا۟۟ لَا يُبْصِرُونَ .10:43٤٣

  • Thereby, can you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] guide such blind person despite they were not focusing sight on the passage?  [10:43]

  • ۔آپ اس پر غور کریں کہ کیا اسطرح کے منفرد اندھے کو آپ راستہ دکھا سکتے ہیں اور ان کو جو بصارتوں کو برؤے کار لانے پرراغب ہی نہیں ہوتے تھے۔

Root: ع م ى


إِنَّ ٱللَّهَ لَا يَظْلِمُ ٱلنَّاسَ شَيْــٔٙا

  • Allah the Exalted does no wrong and minute injustice, nothing of the sort, to the people

  • ۔یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ انسانوں کےساتھ معمولی سے معمولی زیادتی ،ناروا برتاؤ نہیں کرتے۔

وَلَـٟكِنَّ ٱلنَّاسَ أَنفُسَهُـمْ يَظْلِمُونَ .10:44٤٤

  • In fact it were the people who keep doing injustice and harm to their own selves. [10:44]

  • لیکن  لوگ حقیقت کو باطل سے بدل کر خود اپنے نفوس پر زیادتی کرتے اور اپنی شخصیت کوبگاڑتے ہیں ۔

وَيَوْمَ يَحْشُـرُهُـمْ كَأَن لَّمْ يَلْبَثُوٓا۟ إِلَّا سَاعَةٙ مِّنَ ٱلنَّـهَارِ يَتَعَارَفُونَ بَيْنَـهُـمْۚ

  • Know it; the Day He the Exalted will gather them altogether; it will appear and will be the guesswork of some as if they had not stayed but for an hour of the day. They will be recognizing each others.

  • ۔مطلع رہو؛جس دن ازسر نو حیات دئیے جانے پر وہ جناب انہیں ایک مقام پر مجتمع کر دیں گے تو ان کا اندازہ یہ ہوگا جیسے وہ دن کے کچھ وقت کے دوران پہلی حالت میں رہے تھے۔وہ ایک دوسرے سے پہلے سے متعارف ہیں۔

Root: ل ب ث

قَدْ خَسِـرَ ٱلَّذِينَ كَذَّبُوا۟ بِلِقَآءِ ٱللَّهِ

  • Indeed they caused loss to their selves who contradicted their presentation to and accountability by Allah the Exalted

  • ۔یہ حقیقت    ہے کہ ان لوگوں نے انجام   کےحوالے     سےخسارا کمایا ہے جنہوں نے اللہ       تعالیٰ کے حضور احتساب کےلئے         پیش ہونے      کوبرملاجھٹلایا     تھا۔

وَمَا كَانُوا۟۟ مُهْتَدِينَ .10:45٤٥

  • It retained them in a state of those who incline not to become guided aright. [10:45]

  • اوروہ اس حالت میں رہے کہ راہ راست کو پانے کے متمنی ہی نہ تھے۔

وَإِمَّا نُرِيَنَّكَ بَعْضَ ٱلَّذِى نَعِدُهُـمْ أَوْ نَتَوَفَّيَنَّكَ

  • Since the last moment will happen all of a sudden, thereby, supposing any moment henceforth Our Majesty make you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] to witness-see with eyes a part of that (Last Day) which Our Majesty are promising to them; or in future Our Majesty cause you to become segregated from people by natural death before that Day

  • ۔چونکہ یوم آخر نے بالکل اچانک وقوع پذیر ہونا ہے اس لئے اگر ہم آئندہ کسی وقت اس(دن)کے کچھ ابتدائی حصے کو آپ(ﷺ)کی نگاہوں کو دکھا دیں جس کا ان سے ہم وعدہ کر رہے ہیں؛یا اس سے قبل  آنے والے دنوں میں  ہم جناب آپ (ﷺ)کو لوگوں کی مصاحبت سے الگ کر لیں (بسبب طبعی موت)۔۔

فَإِلَيْنَا مَرْجِعُهُـمْ

  • Since you are also not aware about the time and place of Last Day it does not make a difference between two assumptions, the final decision is that they will brought before Our Majesty for accountability

  • ۔چونکہ اس دن کے وقوع ہونے کا وقت اور زمانہ آپ(ﷺ)کو بھی معلوم نہیں اس لئے دونوں مفروضوں سے فرق نہیں پڑھتا؛حتمی طور پر طے شدہ یہ ہے کہ انہیں ہمارے حضور احتساب کے لئے پیش کیا جائے گا۔

ثُـمَّ ٱللَّهُ شَهِيدٌ عَلَـىٰ مَا يَفْعَلُونَ .10:46٤٦

  • Afterwards your corporeal segregation by natural death Allah the Exalted is witness in timeline upon what they people innovatively perform. [10:46]

  • ۔آپ(ﷺ) کو لوگوں کی بشری مصاحبت سے الگ کرلینے کے بعد ازاں دور میں اللہ تعالیٰ ان کے ان افعال پر ہر لمحہ گواہ ہوں گے جو وہ کرتے ہیں۔

وَلِـكُلِّ أُمَّةٛ رَّسُولٚۖ

  • Take note; A Messenger is the witness-prosecutor-defence lawyer for every nation-people.

  • ۔اور زمان و مکان میں اللہ تعالیٰ کے مبعوث فرمائے رسول ہر ایک ایک نسل کے لئے وکیل استغاثہ اوروکیل صفائی کا فرض انجام دیں گے۔

فَإِذَا جَآءَ رَسُولُـهُـمْ قُضِىَ بَيْنَـهُـم بِٱلْقِسْطِ

  •  [their return is to Our Majesty for accountability] Thereby, when their respective Messenger would have arrived [at the appointed time] the judgment will be passed between them on the principle of equity

  • ۔چونکہ عدالتی کاروائی پر فیصلہ ہوگا اس لئے جب ان کے لئے دنیا میں مبعوث فرمائے رسول تشریف لے آئیں گے۔تو ان لوگوں کے مابین انصاف اور برابری کے اصولوں کے مطابق معاملہ انجام کو پہنچا دیا جائے گا۔

Root: ق س ط

وَهُـمْ لَا يُظْلَمُونَ .10:47٤٧

  • Whereby they will not be subjected to any injustice [not even iota of it]. [10:47]

  • اور ان سے(جزا و سزا میں)بالکل کوئی زیادتی نہیں ہو گی۔

وَيَقُولُونَ مَتَىٰ هَـٟذَا ٱلْوَعْدُ

  • And they say: "Tell us the data, time, period when this promise of Last Day will be fulfilled?

  • ۔اور وہ پوچھتے ہیں’’بتاؤ یہ وعدہ کس تاریخ/دن کو پورا ہو گا۔

إِن كُنتُـمْ صَٟدِقِيـنَ .10:48٤٨

  • Tell us if you people were truthful in asserting resurrection?" [10:48]

  • ۔بتاؤ اگر تم یوم آخر اور آخرت کے متعلق بیان میں سچے ہو؟‘‘

قُل لَّآ أَمْلِكُ لِنَفْسِى ضَرّٙا وَلَا نَفْعٙا إِلَّا مَا شَآءَ ٱللَّهُۗ

  • You the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "I do not possess authority and control for averting adversity; nor for material gain for my personal self except that which Allah the Exalted decided.

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’میرے پاس خود اپنی ذات کو ضرر دینے  اور نہ نفع  کا اختیار ہے۔ میرے لئے نفع اور ضرر صرف وہ ہے جس کا فیصلہ اللہ تعالیٰ نے کیا ہوا ہے۔

Root: م ل ك

لِـكُلِّ أُمَّةٛ أَجَلٌۚ

  • A reprieve period is designated for every generation - nation. [for accountability, in successive order].

  • ایک مقررہ میعاد اور لمحہ ہر ایک قوم         کے     ناکام یا کامیاب ہونے اور احتساب کے لئے پیش ہونے کے لئے متعین شدہ ہے ۔

إِذَا جَآءَ أَجَلُـهُـمْ فَلَا يَسْتَـٔ​ْخِرُونَ سَاعَةٙۖ وَلَا يَسْتَقْدِمُونَ .10:49٤٩

  •  [Since the Messenger/Witness-Prosecutor and the defense lawyer has come and seated] Thereby, the moment their appointed moment has reached, they cannot manage extending it for a second. Nor can they at their own advance its termination. [10:49]

  • چونکہ مساوات و عدل کے اصولوں کے تحت یہ متعین  کردہ ہے اس لئے جب ان کا  مقررکردہ لمحہ پہنچ جاتا ہے تو ان کے لئے باوجود شدید خواہش کے ایک                                                                   گھڑی مؤخر کرنا ممکن    ہے اور نہ وہ اپنی خواہش سے اس کو مقدم کر سکتے ہیں۔

Root: س و ع; ق د م

قُلْ أَرَءَيْتُـمْ إِنْ أَتَىٰكُـمْ عَذَابُهُۥ بَيَٟتٙا أَوْ نَـهَارٙا

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask them: "Have you people considered the possibility that if the Chastisement of Allah the Exalted reached you during night or during day light?

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’کیا تم لوگوں نے اس امکان پر غور کیا ہے کہ اگر ان جناب کا فرمان آفت تم لوگوں پررات کو نیند کے دوران یا دن دہاڑے پہنچ جائے۔

مَّاذَا يَسْتَعْجِلُ مِنْهُ ٱلْمُجْرِمُونَ .10:50٥٠

  • Which one the criminals would aspire hastening by Him the Exalted?" [10:50]

  • ۔اس میں سے کیا ہے جس کے لئے جرائم کے مرتکب قرار پائے لوگ عجلت کے خواہش مند ہوں گے۔

Root: ع ج ل

أَثُـمَّ إِذَا مَا وَقَعَ ءَامَنْتُـم بِهِۦٓۚ

  • Is it afterwards you people will believe in that when promised event/Day has occurred?

  • ۔کیا عذاب کے بعد ازاں جب وہ وقوع پذیر ہو چکا تو اس پر ایمان لاؤ گے کہ وہ دھمکی نہیں حقیقت تھا۔

Root: و ق ع

ءَآلْـَٔـٟنَ وَقَدْ كُنتُـم بِهِ تَسْتَعْجِلُونَ .10:51٥١

  • [you will pronounce belief but will be rejected] Now that it has happened! Whereas indeed you had sought it to be hastened [since you thought it as conjecture and delusion]. [10:51]

  • ۔کہا جائے گا’’اب! جبکہ تم اس کو عجلت میں لانے کا کہتے رہتے تھے‘‘۔

Root: ع ج ل 

ثُـمَّ قِيلَ لِلَّذِينَ ظَلَمُوا۟ ذُوقُوا۟ عَذَابَ ٱلْخُلْدِ

  • Afterwards the blowing of second trumpet and resurrection it will be said for those who were evil mongers, distorters and unjust: "You people taste the chastisement of permanence

  • ۔بعد ازاں یوم قیامت از سر بو حیات دئیے جانے پر ان لوگوں کے لئے اعلان کر دیا گیا جنہوں نے حقیقت کے منافی بگاڑ کے طرز عمل اور سرشت کو اپنائے رکھا تھا’’ہمیشہ قائم رہنے والے عذاب کو بھگتو۔

Root: ذ و ق

هَلْ تُجْزَوْنَ إِلَّا بِمَا كُنتُـمْ تَكْسِبُونَ .10:52٥٢

  • Are you people being requited except for what you people were earning by deeds?" [10:52]

  • ۔بتاؤ کیا تمہیں سوائے اس کے کچھ اور سزا سے تو ہمکنار نہیں کیا جا رہا سوائے اس کے مطابق جو کسب تم لوگ کرتے رہے تھے‘‘۔

وَيَسْتَنۢبِـُٔونَكَ أَحَقٌّ هُوَۖ

  • And they seek authentication from you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam]: "Is that promised Last Day a real fact?"

  • ۔اور آپ(ﷺ)سے لوگ اس خبر کی تصدیق  چاہتے ہیں کہ کیا وہ بدیہی حقیقت ہے۔

قُلْ إِى وَرَبِّـىٓ إِنَّهُۥ لَحَقّٚۖ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Yes, and I swear by my Sustainer Lord that indeed it is a certain and absolute fact

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’بالکل؛اور میں اپنے رب کی قسم اٹھا کر کہتا ہوں،وہ(یوم آخر اور حیات نو)اس طرح کا بیان حقیقت ہے جیسے وہ وقوعہ جو ہو چکا ہو۔

وَمَآ أَنتُـم بِمُعْجِزِينَ .10:53٥٣

  • Mind it; you people certainly cannot retard it even with the help of all the diverters." [10:53]

  • ۔اور تم لوگ یہ سکت نہیں رکھتے کہ اسے روک سکوموخر کر سکو‘‘۔

Root: ع ج ز

وَلَوْ أَنَّ لِـكُلِّ نَفْسٛ ظَلَمَتْ مَا فِـى ٱلۡأَرْضِ لَٱفْتَدَتْ بِهِۦۗ

  • Know it; If all that wealth which is available in the Earth was available for a person who did wrong and evil to his self he would have indeed offered it as compensation, fine, recompense to get himself redeemed [on the Day of Judgment]

  • ۔متنبہ رہو؛اگر بالفرض وہ تمام دولت جو زمین میں موجود ہے ہر اس شخص کے پاس ہو جس نے حقیقت کے منافی باطل سرشت کو اپنائے رکھا تھا کہ اس کو معافی پانے کے لئے زرہرجانہ کے طور پیش کر سکے،تو بھی اسے قبول نہیں کیا جائے گا۔

Root: ف د ى

وَأَسَرُّوا۟ ٱلنَّدَامَةَ لَمَّا رَأَوُا۟ ٱلْعَذَابَۖ

  • Know it; the feelings of ashamed regret would become apparent when they would have seen the punishment.

  • ۔اور وہ ندامت اور احساس شرمندگی کو چھپانے کی کوشش کریں گے جوں ہی انہوں نے انہیں گرفت میں لینے والے عذاب کو دیکھ لیا۔

Root: س ر ر;  ن د م

وَقُضِىَ بَيْنَـهُـم بِٱلْقِسْطِۚ

  • And the judgment will be passed between them on the principle of equity

  • ۔اور ان کے مابین انصاف اور برابری کے تقاضوں کو ملحوظ خاطر رکھتے ہوئے ان کے معاملے کو نبٹا دیا گیا۔

Root: ق س ط

وَهُـمْ لَا يُظْلَمُونَ .10:54٥٤

  • Whereby they will not be subjected to any injustice [not even iota of it]. [10:54]

  • اور ان سے(جزا و سزا میں)بالکل کوئی زیادتی نہیں ہو گی۔

أَ لَآ إِنَّ لِلَّهِ مَا فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضِۗ

  • Beware and remember that whoever exists in the Skies and whoever exists in the Earth is exclusively the subject for Allah the Exalted.

  • ۔  خبردار رہو؛حقیقت  یہ ہے  کہ سب کچھ جوآسمانوں میں موجود ہے اور سب کچھ جو زمین میں موجود ہے اللہ تعالیٰ کے لئے  شرف و کبریائی  بیان اور ظاہر کرتے ہوئےمصروف عمل ہے۔

أَلَآ إِنَّ وَعْدَ ٱللَّهِ حَقّٚ

  • Be mindful; the promise of Allah the Exalted [regarding Last Day] is infallible reality

  • ۔خبردار رہو؛یہ حقیقت ہے کہ اللہ تعالیٰ کا وعدہ اتنا بدیہی حقیقت ہے جیسے پائے ثبوت کو پہنچ چکا ہو۔

وَلَـٟكِنَّ أَكْثَرَهُـمْ لَا يَعْلَمُونَ .10:55٥٥

  • But the fact remains most of them do not know/intend to understand. [10:55]

  • ۔مگر ان کی اکثریت  معلومات اور علم حاصل کرنے پر مائل ہی نہیں۔

هُوَ يُحْـىِۦ وَيُمِيتُ

  • He the Exalted causes emergence of life in matter and causes death to alive.

  • ۔وہ جناب حیات کو ظہور دیتے ہیں اور ذی حیات کو موت سے ہمکنار کرتے ہیں۔

وَإِلَيْهِ تُـرْجَعُونَ .10:56٥٦

  • And be mindful; you will be presented before Him the Exalted for accountability. [10:56]

  • متنبہ رہو؛ تم لوگ (یوم قیامت اپنی نسل کی باری پرمقررہ ساعت پر) ان کی جانب احتساب کیلئے پیش کئے جاؤ گے۔


يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلنَّاسُ

  • O you the Mankind, listen!

  • !اے لوگو!دھیان سے سنو

قَدْ جَآءَتْكُـم مَّوْعِظَـةٚ مِّن رَّبِّكُـمْ

  • Indeed an advice- disclosure of factual outcome of acts: good and bad eventuality has since come to you people. It was disclosed by the Messenger under command from your Sustainer Lord.

  • ۔زمان و مکان میں نافذ العمل نصیحت تم لوگوں تک پہنچ چکی ہے۔اس کو تمہارے رب کی جانب سے آسان فہم تدوین میں ملنے پر رسول کریم نے بیان کر دیا ہے۔

Root: و ع ظ

وَشِفَـآءٚ لِّمَا فِـى ٱلصُّدُورِ

  • And a Healer and Curer for those psychological - personality disorders - diseases which are nurtured in the chests/organs located within the chests.

  • ۔اور ان نفسیاتی بیماریوں کے لئے تدارک جن کو تمہارے سینوں میں جاگزیں کر دیا گیا تھا۔

وَهُدٙى وَرَحْـمَةٚ لِّلْمُؤْمِنِيـنَ .10:57٥٧

  • And it is a Guide in time and space and a mercy - blessing for the true believers. [10:57]

  • ۔اور ہدایت نامہ اور اللہ تعالیٰ کی جانب سے اظہار رحمت ان لوگوں کے لئے جو ایمان پر قائم تھے اور جو اس پر ایمان لائے۔

قُلْ بِفَضْلِ ٱللَّهِ وَبِرَحْـمَتِهِۦ فَبِذَٟلِكَ فَلْيَفْرَحُوا۟

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce, "It has been sent as Bounty of Distinction by Allah the Exalted with His Mercy. Thereby, they the true believers should rejoice.

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’اس(قرءان مجید)کا عنایت کیا جانا اللہ تعالیٰ کے فضل اور ان کی رحمت کے دائمی موجود ہونے کا اظہار ہے۔چونکہ یہ ہدایت نامہ ہے اس لئے اس سے استفادہ کرو۔چونکہ تمام نفسیاتی الجھنوں سے بچنے کی نصیحت اس میں موجود ہے اس لئے شاداں رہو۔

Root: ف ر ح

هُوَ خَيْـرٚ مِّمَّا يَجْـمَعُونَ .10:58٥٨

  • That (Qur´ān) is far better a blessing than what they the disbelievers collect and hoard [read with 43:13]. [10:58]

  • ۔یہ(قرءان مجید)اس تمام فضل و کرم سے بہترین ہے جسے وہ جمع کرتے رہتے ہیں‘‘[الذخرف۔۱۳ ساتھ دیکھیں)۔

قُلْ أَرَءَيْتُـم مَّآ أَنزَلَ ٱللَّهُ لَـكُـم مِّن رِّزْقٛ فَجَعَلْتُـم مِّنْهُ حَرَامٙا وَحَلَٟلٙا

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce, "Have you people given a thought to what Allah the Exalted has sent for you people as life maintaining sustenance? Thereby, you people have declared a part of it as prohibited and some as permissible".

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’کیا تم لوگوں نے ان چیزوں پر غور کیا ہے جنہیں اللہ تعالیٰ نے تم لوگوں کے لئے بطور رزق دنیا میں بھیجا ہے۔چونکہ تم اپنے مفاد میں اختراع کرنے کے شوقین ہو اس لئے تم نے اس رزق میں کچھ کو حرام اور کچھ کو لوگوں کے لئے حلال قرار دیا ہے‘‘۔

قُلْ ءَآللَّهُ أَذِنَ لَـكُـمْۖ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] question them: "Have Allah the Exalted granted permission for you people to make such declarations?

  • ۔آپ(ﷺ)سوال کریں’’کیا اللہ تعالیٰ نے تمہیں ایسا کرنے کا اجازت نامہ دیا ہے۔

أَمْ عَلَـى ٱللَّهِ تَفْتَـرُونَ .10:59٥٩

  • Or you people conjecture a falsehood attributing it to Allah the Exalted?" [10:59]

  • ۔یا حقیقت اس کے برعکس ہے کہ تم لوگ اللہ تعالیٰ سے منسوب کر کے کانٹ چھانٹ کر زیر مقصد باتیں اختراع کرتے ہو‘‘۔

وَمَا ظَنُّ ٱلَّذِينَ يَفْـتَـرُونَ عَلَـى ٱللَّهِ ٱلْـكَذِبَ يَوْمَ ٱلْقِيَٟمَةِۗ

  • And what is the perception and opinion of those who conjecture falsehood attributing to Allah the Exalted regarding the Day of Rising?

  • ۔اوران لوگوں کا یوم قیامت کے متعلق کیا گمان ہے جو اللہ تعالیٰ سے منسوب کر کے زیر مقصد کانٹ چھانٹ کر جھوٹ اختراع کر کے لوگوں سے بیان کرتے رہتے ہیں۔

إِنَّ ٱللَّهَ لَذُو فَضْلٛ عَلَـى ٱلنَّاسِ

  • It is a fact that Allah the Exalted is the possessor of bounty which is showered upon people

  • اللہ تعالیٰ کے متعلق یہ حقیقت جان لو کہ بلاشبہ  لوگوں  پرصاحب فضل وکرم ہیں۔

وَلَـٟكِنَّ أَكْثَرَهُـمْ لَا يَشْكُـرُونَ .10:60٦٠

  • But most of the people do not appreciate-recognize-express gratitude. [10:60]

  • اگرچہ یہ الگ حقیقت ہے کہ  اکثر لوگ  ان کی مہربانیوں پر اظہار تشکر نہیں کرتے۔


وَمَا تَكُونُ فِـى شَأْنٛ وَمَا تَتْلُوا۟ مِنْـهُ مِن قُرْءَانٛ

  • Know it; there is no engagement of you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] paying attention to an important matter, nor about that which you relate to people from it syllable by syllable, selectively - relevant to the occasion from the miscellany of Qur’ān

  • مطلع رہیں؛آپ(ﷺ)کے فرائض رسالت انجام دینے کے دوران کوئی لمحہ ایسا نہیں اوراس اہم کام میں سے جوآپ(ﷺ)قرءان مجید کی آیات سنا رہے ہوتے ہیں

وَلَا تَعْمَلُونَ مِنْ عَمَلٛ إِلَّا كُنَّا عَلَيْكُـمْ شُهُودٙا إِذْ تُفِيضُونَ فِيهِۚ

  • And nor you people (listeners) perform an act except that Our Majesty are constantly observing you when you are engaged in it

  • اور تم لوگ(قرءان مجید سننے والے)کوئی بھی ایسا عمل نہیں کرتے سوائے اس حال میں کہ ہم جناب  مشاہدہ کر رہے ہوتے ہیں جب تم اس کی انجام دہی میں مصروف ہوتے ہو۔

Root: ف ى ض

وَمَا يَعْزُبُ عَن رَّبِّكَ مِن مِّثْقَالِ ذَرَّةٛ فِـى ٱلۡأَرْضِ وَلَا فِـى ٱلسَّمَآءِ

  • And no element of a mass of sprinkled dot-speck present in the Earth nor that present in the Sky eludes from notice of your Sustainer Lord

  • اور اے رسول کریم!آپ کے رب سے ذروں میں سے کوئی ایک نکتے کی قوت رکھنے والااپنے آپ کوپوشیدہ نہیں رکھ سکتا جو زمین میں موجود ہے اور نہ ہی وہ ایسا کر سکتا ہے جو آسمان میں موجود ہے۔

Root: ذ ر ر

وَلَآ أَصْغَـرَ مِن ذَٟلِكَ وَلَآ أَكْبَـرَ

  • Know it neither existing genus of particles relatively diminutive in mass than the speck; nor genus of particles relatively greater than it

  • اور نہ ہی ان نکتہ نماذرات کی تمام جنس سے تقابل میں چھوٹے اور نہ ان تمام کے تمام کے مقابل بڑے موجودات ہیں۔

إِلَّا فِـى كِتَٟبٛ مُّبِيـنٛ .10:61٦١

  • But are inventoried in a book which is explicitly explicativeconveyor of information in succinct, individuated, distinct and crystallized manner.  [10:61]

  • ماسوائے ان کے جو ایک ایسی کتاب(ام الکتاب)میں درج ہے جس کی خصوصیت یہ ہے  کہ اس میں ہر شئے کی الگ زمرہ بندی ہے۔

   Sub-Atomic Particles are inventoried/catalogued; tells Qur’ān.

أَ لَآ إِنَّ أَوْلِيَآءَ ٱللَّهِ

  • Know and be encouraged by the news about those who will be in affiliation-party of Allah the Exalted:

لَا خَوْفٌ عَلَيْـهِـمْ وَلَا هُـمْ يَحْـزَنُونَ .10:62٦٢

  • Fear will not overshadow-haunt them; and neither will they have a cause to grieve [10:62]

ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَكَانُوا۟۟ يَتَّقُونَ .10:63٦٣

  • They are the people who had heartily believed and and kept endeavouring to protect their selves. [10:63]

لَـهُـمُ ٱلْبُشْـرَىٰ فِـى ٱلْحَيَوٰةِ ٱلدُّنْيَا وَفِـى ٱلۡءَاخِـرَةِ

  • Cheerfulness and pleasantness of countenance in the worldly life and in the Hereafter is the hallmark for them.

لَا تَبْدِيلَ لِـكَلِمَٟتِ ٱللَّهِۚ

  • (You the Messenger remain assured) There is none at all an altered text in space-time that could manipulate alteration in the composition and arrangement of miscellany of words, phrases and sentences of Allah the Exalted or be its equivalent substitute.

  • ۔(آپ ﷺ مطمئن رہیں )یہ حقیقت ہے کہ  زمان و مکان میں قطعاً کوئی  مبدَّل کلام نہیں جو اللہ تعالیٰ کے  مدون  اور مرتب کئےکلمات   میں  ردو بدل کر کے اورمتبادل خصوصیت کا حامل بنا کر پیش کیا جا سکے۔

ذَٟلِكَ هُوَ ٱلْفَوْزُ ٱلْعَظِيـمُ .10:64٦٤

  • This approval and appreciation for nearness and affiliation with Allah the Exalted is truly the greatest, grand achievement and success.  [10:64]

  • یہ ہے جو صحیح معنوں میں زندگی بھر کی کامیابی کا عظیم ایوارڈ ہے۔

Root: ف و ز

وَلَا يَحْزُنكَ قَوْلُـهُـمْۘ

  • Pay attention; their slander should not render you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] grieved.

  • ۔اور ان لوگوں کی ہرزہ سرائی اور لغو بیانی آپ(ﷺ)کے لئے موجب رمج،حزن و ملال نہ بننے پائے۔

إِنَّ ٱلْعِزَّةَ لِلَّهِ جَـمِيعٙاۚ

  • The fact remains; the dominance is the privilege exclusively for Allah the Exalted; altogether in absolute sense.

  • ۔یہ   حقیقت  ہے کہ  ا للہ تعالیٰ کیلئے تمام غلبہ و اقتدارمکمل طور پر مخصوص ہے۔

هُوَ ٱلسَّمِيعُ ٱلْعَلِيـمُ .10:65٦٥

  • He the Exalted is eternally the Listener, the All-Knowing. [10:65]

  •  ان جناب کےمتعلق یہ حقیقت ہے، ہر لمحہ ہر آواز کو سننے والے ہیں، منبع علم ہیں۔

أَ لَآ إِنَّ لِلَّهِ مَن فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَمَنْ فِـى ٱلۡأَرْضِۗ

  • Beware and remember that whoever exists in the Skies and whoever exists in the Earth is exclusively the subject for Allah the Exalted.

  • ۔مطلع رہو؛ یہ حقیقت ہے کہ جو کوئی آسمانوں میں ذی حیات موجود ہے اور جو کوئی زمین میں ذ ی حیات موجود ہے اللہ تعالیٰ کے لئے دل کی شاد سے سربسجود ہوتا ہے اورنظام کی مجبوری اور ناگواری جبر کے زیر اثر سرنگوں ہو گا(محذوف خبر کے لئے دیکھیں الحج۔۸)۔

وَمَا يَتَّبِــعُ ٱلَّذِينَ يَدْعُونَ مِن دُونِ ٱللَّهِ شُرَكَآءَۚ

  • And those who supplicate to other than Allah the Exalted do not in fact follow those associates

  • ۔اور وہ لوگ جو اللہ تعالیٰ کے علاوہ متفرق معبودان کو پکارتے رہتے ہیں ، وہ رسول کریم کی اتباع نہیں کریں گے۔

إِن يَتَّبِعُونَ إِلَّا ٱلظَّنَّ

  • The fact is that they purposely pursue but conjectural hearsay-suppositions  

  • ۔متنبہ رہو؛وہ                دانستہ زیر مقصد(دنیاوی       مفادات بٹورنے کی غرض سے)علم و  ثبوت    سےعاری باتوں کی پیروی کرتے ہیں۔

وَإِنْ هُـمْ إِلَّا يَخْرُصُونَ .10:66٦٦

  • And they compute not but just conjecturally guess-imagine-opine. [10:66]

  • ۔اور وہ         علم و سچائی سے                                 ماورا  جھوٹےتخیلاتی قیاسات            کرنے کے علاوہ کچھ اور  نہیں کرتے۔

هُوَ ٱلَّذِى جَعَلَ لَـكُـمُ ٱلَّيلَ لِتَسْكُنُوا۟ فِيهِ وَٱلنَّـهَارَ مُبْصِرٙاۚ

  • He the Exalted is the One Who has appointed for you people the Night as time duration of rest-stillness during it, and the Day as provider of brightness and vision

  • ۔وہ جناب ہیں جنہوں نے رات کو تم لوگوں کے لئے دھندلا اور نسبتاً بارد بنایا ہے۔اس کا مقصد یہ ہے کہ تم لوگ اس کے دوران راحت و آرام حاصل کرو۔اور ہم جناب نے دن کو تمہارے لئے روشن اور منور بنایا ہے۔

إِنَّ فِـى ذَٟلِكَ لَءَايَٟتٛ لِّقَوْمٛ يَسْمَعُونَ .10:67٦٧

  • It is a fact that in it tangible manifestations are evidently reflective of Divine Providence and Will for such people who attentively listen. [10:67]

  • یقینا ان  عناصر فطرت کے عینی مشاہدہ میں  ایسی شہادتیں ہیں   جوفلسفہ توحید (معبود مطلق)کی جانب رہنمائی /اشارہ کرنے والی ہیں  خاص کر ان لوگوں کے لئے جوبات توجہ اور انہماک سے سنتے ہیں۔


قَالُوا۟ ٱتَّخَذَ ٱللَّهُ وَلَـدٙاۗ

  • Be aware; they [Elders of earlier Jews and Christians] had said; "Allah has consciously and purposely adopted so and so as a son".

  • جان لو؛انہوں(قدیم یہودی عمائدین)نے کہا’’اللہ تعالیٰ نے عزیر کو زیر مقصد بطور بیٹا اپنا لیا ہے‘‘۔

سُبْحَٟنَهُۥۖ

  • He the Exalted is above such needs-support-weakness; Infinite Glory is for Him-His pleasure is the focus of all effort.

  • وہ جناب ان حاجات سے بلند تر ہیں،تمام کبریائی ان کے لئے،اور تمام کوششوں کا وہ محور ہیں۔

هُوَ ٱلْغَنِىُّۖ

  • He the Exalted is eternally the Absolutely Independent.

  • ۔وہ جناب ہیں جو ہر احتیاج  سےمطلق منزہ اور مطلق آزاد ہیں۔

لَهُ مَا فِـى ٱلسَّمَٟوَٟت وَمَا فِـى ٱلۡأَرْضِۚ

  • The fact is that whatever exists in the Skies and whatever exists in the Earth are subservient-dependant-subjects for Him the Exalted.

  • جو کچھ آسمانوں میں موجود ہے اور جو کچھ زمین میں موجود ہے وہ تمام ان جناب کے لئے نگیں ہیں۔

إِنْ عِندَكُم مِّن سُلْطَٟنِۭ بِـهَـٟذَآۚ

  • [Ask them] "Produce it, if any concrete evidence/argument is lying with you people to substantiate your assertion (read for elisions with 37:155-157)

  • ۔حقیقت یہ ہے کہ اپنے اس قول کے دفاع کے لئے قطعاً کوئی دلیل اور سند تم لوگوں کی جانب سے پیش نہیں کیا جاتا۔اگر تمہارے پاس ہے تو بیان کرو۔(محذوف کے لئے الصافات۔۱۵۵۔۱۵۷)

Root: س ل ط

أَتقُولُونَ عَلَـى ٱللَّهِ مَا لَا تَعْلَمُونَ .10:68٦٨

  • Do you people ascribe to Allah the Exalted that about which you people have no knowledge?"  [10:68]

  • ۔کیا تم لوگ اللہ تعالیٰ سے منسوب کر کے وہ بات کہتے ہو جس کا ان کی جانب سے تمہیں علم حاصل نہیں۔

قُلْ إِنَّ ٱلَّذِينَ يَفْـتَـرُونَ عَلَـى ٱللَّهِ ٱلْـكَذِبَ لَا يُفْلِحُونَ .10:69٦٩

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "Those who conjecture false statements attributing to Allah the Exalted will never attain prosperous success-salvation at the end." [10:69]

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’حقیقت یہ ہے کہ جو لوگ اللہ تعالیٰ سے منسوب کرتے ہوئے منفرد جھوٹ اختراع کرتے ہیں کبھی دائمی کامیاب اور سرخرو نہیں ہو پائیں گے‘‘۔

Root: ف ل ح

مَتَـٟـعٚ فِـى ٱلدُّنْيَا

  • What they earn by such conjecturing is merely a meagre source of enjoyment in worldly life.

  • ۔سامان زیست کا حصول دنیا میں ان کے روئیے اور طرز عمل کا محور ہے۔

ثُـمَّ إِلَيْنَا مَرْجِعُهُـمْ

  • Afterwards their escorting for subjecting them to justice is towards Our Majesty.

  • ۔بعد ازاں حیات نو دئیے جانے پرحتمی طور پر طے شدہ یہ ہے کہ انہیں ہمارے حضور احتساب کے لئے پیش کیا جائے گا۔

ثُـمَّ نُذِيقُهُـمُ ٱلْعَذَابَ ٱلشَّدِيدَ بِمَا كَانُوا۟۟ يَكْـفُـرُونَ .10:70٧٠

  • Afterwards Our Majesty will make them taste the severe punishment because they persistently kept disavowing. [10:70]

  • ۔بعد ازاں عدالتی کاروائی مکمل ہو جانے پر ہم جناب انہیں شدید جسمانی اور نفسیاتی عذاب کا مزہ  چکھاتے رہیں گے اس جرم کی سزا میں جو وہ اللہ تعالیٰ اور ان کے رسولوں کے مابین تفریق ظاہر کر کے بدیہی کافر رہے تھے۔


وَٱتْلُ عَلَيْـهِـمْ نَبَأَ نُوحٛ إِذْ قَالَ لِقَوْمِهِۦ

  • And you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] convey them the news about Noah [alai'his'slaam] when he said for his nation elite

  • اور آپ(ﷺ)نوح(علیہ السلام)کے دور کی یہ خبر من وعن ان پر افشاں کر دیں جب انہوں نے اپنی قوم سے کہا تھا:

يٟقَوْمِ إِن كَانَ كَبُـرَ عَلَيْكُـم مَّقَامِـى وَتَذْكِيـرِى بِـَٔايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • "O my nation! if my stand point and my awakening and admonishing masses with the Aa'ya'at: Verbal passages of the Book of Allah has been hard for you to tolerate

  • ۔’’اے میری قوم!اگر  اللہ تعالیٰ کے کلام پر مبنی آیات  کے مطابق میرا مؤقف اور میرا عوام الناس کو انتباہ اور خبردار کرنا تم لوگوں پر گراں ہے۔

فَعَلَـى ٱللَّهِ تَوَكَّلْتُ

  • Thereby, I have placed reliance and dependence upon Allah the Exalted.

  • ۔چونکہ میں رسالت کے فرائض انجام دے رہا ہوں اس لئے بہتر نتائچ کے لئے میرا بھروسہ اور اعتماد اللہ تعالیٰ پر ہے۔

فَأَجْـمِعُوٓا۟ أَمْرَكُمْ وَشُرَكَآءَكُمْ ثُـمَّ لَا يَكُنْ أَمْـرُكُمْ عَلَيْكُـمْ غُمَّةٙ

  • Therefore, you consolidate your resolve and course of action, and invite your partners-associates; afterwards assembly and considered resolution your plan/affair/resolve would not cast dubiousness upon you people [read with 7:195].

  • ۔چونکہ مجھے اللہ تعالیٰ کی نصرت پر یقین ہے اس لئے تم لوگ اپنے ارادے  کو متحد ہو کر حتمی کر لو؛اور اپنے شریک کاروں  کو مدعو کر کے ان سے مشورہ بھی کر لو۔بعد ازاں اجتماعی سوچ بچار کے تمہارا منصوبہ تم پر کسی پہلو سے باعث الجھاؤ اور پریشانی نہیں ہوگا[محذوف فعل کے لئے دیکھیں الاعراف۔۱۹۵]۔

Root: غ م م

ثُـمَّ ٱقْضُوٓا۟ إِلَـىَّ وَلَا تُنظِرُونَ .10:71٧١

  • Afterwards having consolidated your plan implement against me and allow me no respite." [10:71]

  • ۔بعد ازاں اس سوچے سمجھے منصوبہ کو میرے  خلاف بروئے کار لے آؤ اور مجھے مہلت بھی نہ دو۔

فَإِن تَوَلَّيْتُـمْ فَمَا سَأَ لْتُكُـم مِّنْ أَجْرٛۖ

  • Therefore, if you people turn away unresponsive, it is your option since for this I have not asked you any remuneration.

  • ۔چونکہ میں نے تمہیں بھی متنبہ کر دیا ہے اس لئے اگر تم ازخود پلٹ کر جاتے ہو تو اس بات پر تو غور کرو کہ میں نے اس کام کے لئے کسی معاوضہ کا سوال نہیں کیا ہے۔

Root: و ل ى

إِنْ أَجْرِىَ إِلَّا عَلَـى ٱللَّهِۖ

  • Indeed my reward-remuneration is due upon none except Allah the Exalted.

  • ۔اس لئے کہ میرا ان خدمات کا اجر صرف اور صرف اللہ تعالیٰ پر واجب الادا ہے۔

وَأُمِرْتُ أَنْ أَكُونَ مِنَ ٱلْمُسْلِمِيـنَ .10:72٧٢

  • And I was advised at the time of revelation that I be first of voluntary submitters to it". [10:72]

  • ۔اور مجھے  منصب رسالت سونپتے ہوئے یہ حکم دیا گیا تھا کہ  میں کلام اللہ  کو پہلے سے موجود دین اسلام پر کاربند لوگوں  میں  اول تسلیم کرنے والا بنوں۔

فَكَذَّبُوهُ فَنَجَّيْنَٟهُ وَمَن مَّعَهُۥ فِـى ٱلْفُلْكِ

  • In response and for reason they publicly contradicted him, therefore in keeping with word and obligation to save Messengers and believers Our Majesty saved him and whoever was with him in the ship

  • چونکہ ان پر مفادات  اور لوگوں پر تسلط رکھنے  کا غلبہ تھا اس لئے انہوں نے ان کے فرمودات کو برملا جھٹلا دیا۔نتیجے میں مہلت کا وقت ختم ہونے پر عذاب پہنچنے سے قبل ہم

  • جناب نے انہیں(نوح علیہ السلام) اور وہ لوگ جو ان کے ساتھ  کشتی میں سوار ہوئے تھے وہاں سے باحفاظت نکال دیا۔

Root: ف ل ك

وَجَعَلْنَٟهُـمْ خَلَـٰٓئِفَ

  • And Our Majesty had rendered them as the rulers-self governing states.

  • ۔اور ہم جناب نے انہیں زمین میں خود مختار فرمانروا قرار دے دیا تھا۔

وَأَغْـرَقْنَا ٱلَّذِينَ كَذَّبُوا۟ بِـٔ​َايَـٟتِنَاۖ

  • And Our Majesty drowned those people of Noah's nation who had publicly contradicted our Aa'ya'at: Verbal Passages of Book.

  • ۔اور ہم جناب نے ان لوگوں کو مقامی سیلاب میں غرق کر دیا جنہوں نے ہماری آیات(کتاب کے مندرجات اور معجزہ)کو برملا جھٹلایا تھا۔

Root: غ ر ق

فَٱنظُرْ كَيْفَ كَانَ عَٟقِبَةُ ٱلْمُنذَرِينَ .10:73٧٣

  • Therefore, [to take a lesson, you the Messenger tell everyone to travel in land and] "you see how was the conclusion/end result of those who were duly admonished and awakened?". [10:73]

  • ۔چونکہ مجرمین کو سزا دینے کا اصول طے شدہ ہے اس لئے آپ(ﷺ) اپنے احساس غم کو کم کرتے کے لئے)اس بات کو پیش نظر رکھیں کہ ماضی میں متنبہ کئے گئے لوگوں کا اخر کار انجام کیا ہوا تھا۔

ثُـمَّ بَعَثْنَا مِنۢ بَعْدِهِۦ رُسُلٙا إِلَـىٰ قَوْمِهِـمْ

  • Afterwards, in timeline after him (Noah [alai'his'slaam]) Our Majesty appointed Revivalist Messengers enjoying reputation of staunch monotheists towards their nation: people who were saved in the ship along with Noah [alai'his'slaam]

  • بعد ازاں ان(نوح علیہ السلام)کی طبعی موت کے ایک عرصہ بعد رسولوں کو جو اپنی قوم میں توحید کے پیروکار مشہور تھے ان کی قوم  کی جانب  ہم جناب نےمبعوث فرمایا۔

فَجَآءُوهُـم بِٱلْبَيِّنَٟتِ

  • Thereby they had brought to them evident/distinct/unprecedented [miraculous] demonstrative Signs.

  • ۔فرائض رسالت سونپے جانے پروہ ان (قوم)کے پاس     عینی مشاہدہ  کے لئے ایسی شہادتوں(آیات/معجزات ) کے ساتھ تشریف لائے تھے     جوان کےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں۔۔

فَمَا كَانُوا۟۟ لِيُؤْمِنُوا۟ بِمَا كَذَّبُوا۟ بِهِۦ مِن قَبْلُۚ

  • Despite having seen and experienced signs, they were not even inclined for giving a thought to believe in that which they had publicly contradicted aforetimes.

  • عینی تجربہ اور ثبوت کے باوجود وہ  لوگ اس پر ایمان لانے کا سوچتے بھی نہ تھے جس کو وہ گزرے زمانہ میں برملا جھٹلا چکے تھے۔

كَذَٟلِكَ نَطْبَعُ عَلَـىٰ قُلوبِ ٱلْمُعْتَدِينَ .10:74٧٤

  • This is the reason Our Majesty renders what they themselves call envelop as veil-rust upon the the hearts of those who are transgressors, go beyond prescribed limits and rationality. [10:74]

  • ۔یہ ہے طرز عمل کا وہ انداز جس پر ہم جناب  مسلسل  دانستہ زیر مقصد بے اعتدالیاں کرنے اور حدود و قیود کو پامال کرنے والوں کے دلوں پر،ان کے اپنے بقول پڑے غلافوںکوسربمہر کر دیتے ہیں۔

Root: ط ب ع

ثُـمَّ بَعَثْنَا مِنۢ بَعْدِهِـم مُّوسَـىٰ وَهَـٟرُونَ إِلَـىٰ فِرْعَوْنَ وَمَلَإِي۟هِۦ بِـٔ​َايَـٟتِنَا

  • After a passage of time having annihilated the earlier civilizations Our Majesty appointed Revivalists Mūsā and Ha'roon [alai'his'slaam] as Messengers towards Fir'aoun (Pharaoh) and his Chieftains, equipped with Our unprecedented displays [miraculous]

  •  ان قوموں کی ہلاکت کے عرصہ بعد ہم جناب نے موسیٰ اور ھارون(علیہماالسلام)کو فرائض رسالت تفویض فرما کر فرعون اور اس کے سرداروں کی جانب مبعوث فرمایا عینی مشاہدہ  کے لئےہماری ایسی شہادتوں(آیات/معجزات ) کے ساتھ     جوان کےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے اس حقیقت کی جانب  واضح رہنمائی کرنے والی تھیں کہ من جانب اللہ  سند اور برھان ہیں۔۔۔

Root: م ل ء

فَٱسْتَكْـبَـرُوا۟ وَكَانُوا۟۟ قَوْمٙا مُّجْرِمِيـنَ .10:75٧٥

  • Thereat, they showed arrogance obsessed with pride of grandeur and superiority; and they were long been a defiant criminal nation.  [10:75]

  • ۔عینی مشاہدہ اور تجربہ ہو جانے کے باوجود غرور کا مظاہرہ کرتے ہوئے خود اپنی عظمت کے خواہش مند رہے؛اور ان کی  روش  بدستورمجرم قوم کی تھی۔

فَلَمَّا جَآءَهُـمُ ٱلْحَقُّ مِنْ عِندِنَا

  • Thereby, as soon on their asking the Infallible Truth in the form of unprecedented display was presented to them as evidence from Our Grace:

  • ۔ان کے مطالبہ پر جوں ہی  اس منفرد حقیقت کا اظہار ہو گیا جسےہم جناب   نے موسیٰ (علیہ السلام) کو دکھانے کے لئے عنایت کیا تھا:

قَالُوٓا۟ إِنَّ هَـٟذَا لَسِحْرٚ مُّبِيـنٚ .10:76٧٦

  • They (the confidants of Fir'aoun) said: "Indeed this display is certainly an evident illusion/hoax." [10:76]

  • ۔انہوں(فرعون کے قریبی رفقا)نے جھٹ سے کہا’’یہ تو درحقیقت صریح شعبدہ بازی کا مظاہرہ ہے‘‘۔

Root: س ح ر

قَالَ مُوسَـىٰٓ أَتقُولُونَ لِلْحَقِّ لَمَّا جَآءَكُمْۖ

  • Mūsā [alai'his'slaam] responded: "Do you say this about the evident undeniable fact when it has reached/perceived by you people?

  • موسیٰ(علیہ السلام)نے ان کو مخاطب کر کے کہا’’کیا تم لوگ یہ بات بدیہی حقیقت کے حوالے سے کہہ رہے ہو جوں ہی تم نے اس کو دیکھا۔

أَسِحْرٌ هَـٟذَا وَلَا يُفْلِحُ ٱلسَّٟحِرُونَ .10:77٧٧

  • Is this the presented unprecedented display an illusion/hoax? Be mindful, never ever the illusionists attain prosperous success at the end." [since illusion is short lived] [10:77]

  • ۔کیا یہ جو دیکھ رہے ہو شعبدہ ہے؟متنبہ رہو،شعبدہ باز آخرکار کبھی کامیاب نہیں ہوتے لوگوں کو فریب میں مبتلا رکھنے میں‘‘۔

Root: س ح ر; ف ل ح

قَالُوٓا۟ أَجِئْتَنَا لِتَلْفِتَنَا عَمَّا وَجَدْنَا عَلَيْهِ ءَابَآءَنَا

  • They (Confidant chieftains) said: "Have you come to us for turning us away from that on which we found our forefathers?

  • ۔انہوں(فرعون کے قریبی رفقاء)نے کہا’’کیا آپ ہمارے پاس اس لئے آئے ہیں کہ ہمیں اس التفات سے دور کر دیں جس پر ہم نے اپنے آباؤاجداد کو پایا تھا۔

Root: ل ف ت

وَتَكُونَ لَـكُـمَا ٱلْـكِـبْـرِيَآءُ فِـى ٱلۡأَرْضِ

  • And so that the superiority in the Land may become for both you.

  • ۔اور سلطنت میں عظمت و بڑائی آپ دونوں کے لئے ہو جائے۔

وَمَا نَـحْنُ لَـكُـمَا بِمُؤْمِنِيـنَ .10:78٧٨

  • Note it, we are not going to become believers for you two". [10:78]

  • ۔اور ہم  آپ دونوں کے لئے قطعاً ایمان  لانے والے نہیں ہیں‘‘۔

وَقَالَ فِرْعَوْنُ

  • And Fir'aoun (Pharaoh) ordered:

  • ۔اور فرعون نے اپنے قریبی رفقاء سے کہا:

ٱئْتُونِـى بِكُلِّ سَٟحِـرٛ عَلِيـمٛ .10:79٧٩

  • "You people (Confidant Chieftains) bring and come back to me with every knowledgeable magician/illusionist/displayer of illusory tricks." [10:79]

  • ’’ تمام کے تمام شعبدہ بازی کے علم میں ماہرین کو لے کر  میرے پاس آؤ"۔

Root: س ح ر

فَلَمَّا جَآءَ ٱلسَّحَرَةُ

  • Thereby, when the magicians-illusionists had arrived;

  • ۔چونکہ وہ الگ مشورہ کرنے چلے گئے تھے اس لئے جوں ہی شعبدہ باز واپس  آئےتو انہوں نے پہل کرنے کے متعلق استفسار کیا :

Root: س ح ر

قَالَ لَـهُـم مُّوسَـىٰٓ أَ لْقُوا۟ مَآ أَنتُـم مُّلْقُونَ .10:80٨٠

  • Mūsā [alai'his'slaam] said to them: "Display to people that which you perform as conjurers." [10:80]

  • ۔موسیٰ(علیہ السلام)نے ان سے کہا"آپ لوگ کرتب دکھائیں، سامنے زمین پر پھینکیں جو تم پھینک کر شعبدہ دکھاتے ہو"۔

فَلَمَّآ أَلْقَوا۟ قَالَ مُوسَـىٰ مَا جِئْتُـم بِهِ ٱلسِّحْرُۖ

  • Thereat, when they had thrown-displayed; Mūsā [alai'his'slaam] said: "What have you shown is the illusory trick/hoax

  • ۔چونکہ وہ یکے بعد دیگرے تسلسل سے پھینک رہے تھے اس لئے جب وہ تمام پھینک چکے تو موسیٰ(علیہ السلام)نے ان سے کہا’’وہ جو تم نے اس عمل سے پیش کیا ہے وہ منفرد شعبدہ ہے،مختصر وقت کے لئے فریب کی کیفیت ہے۔

Root: س ح ر

إِنَّ ٱللَّهَ سَيُبْطِلُهُۥٓۖ

  • Indeed Allah the Exalted will soon fade it away.

  • اس حقیقت کو جان لو؛اللہ تعالیٰ جلد اس کو باطل، پانی پر ابھرے جاگ کی مانند زائل کر دیں گے۔

إِنَّ ٱللَّهَ لَا يُصْلِحُ عَمَلَ ٱلْمُفْسِدِينَ .10:81٨١

  • The fact remains that Allah the Exalted does not rectify action of those who create turbulence, distortions, inequity, imbalances, mischievousness. [10:81]

  • ۔متنبہ رہو؛اللہ تعالیٰ ذہنی و فکری انتشار پھیلانے ،بگاڑ پیدا کرنے والوں کے عمل کو بحال نہیں رہنے دیتے‘‘۔

وَيُحِقُّ ٱللَّهُ ٱلْحَقَّ بِكَلِمَٟتِهِۦ

  • Be mindful; Allah the Exalted establishes the fact as proven truth manifested by His words/ promises

  • جان لو؛  اللہ تعالیٰ  حقیقت کو اپنے بیان کردہ کلمات کے ذریعے بدیہی حقیقت کے روپ  میں  بیان  فرماتے ہیں ۔

وَلَوْ كَرِهَ ٱلْمُجْرِمُونَ .10:82٨٢

  • Notwithstanding how aversive it was felt by the criminals." [10:82]

  • ۔اس سے قطع نظر کرتے ہوئے چاہے وہ مجرم قرار پائے لوگوں کوناگوار محسوس ہو۔

Root: ك ر ه

فَمَآ ءَامَنَ لِمُوسَـىٰٓ إِلَّا ذُرِّيَّةٚ مِّن قَوْمِهِۦ عَلَـىٰ خَوْفٛ مِّن فِرْعَوْنَ وَمَلَإِي۟ـهِـمْ أَن يَفْتِنَـهُـمْۚ

  • Sequel to threatening announcements, people believed not for Mūsā [alai'his'slaam], except young generation of his own nation, for fear of Fir'aoun (Pharaoh) and his Chieftains that he might put them in liquefying and disquieting trouble

  • ۔چونکہ ریاستی جبر سے لوگ دہشت زدہ تھے اس لئے حقیقت جان لینے کے باوجود سوائے ان(موسیٰ علیہ السلام)کی قوم کے جوانوں کے موسیٰ(علیہ السلام)پر ایمان نہیں لائے محض فرعون اور اس کے سرداروں کے خوف سے کہ وہ انہیں ہیجان اور تکلیف دہ ابتلا میں مبتلا کر دیں گے۔

Root: ذ ر ر;  م ل ء

وَإِنَّ فِرْعَوْنَ لَعَالٛ فِـى ٱلۡأَرْضِ

  • Knowing that Fir'aoun (Pharaoh) was certainly self-aggrandizer in the Land.

  • ان کا خوف بلاوجہ نہ تھا،یہ حقیقت ہے کہ فرعون نے سلطنت میں اپنی عظمت و بڑائی کے رعب و دہشت کا ماحول بنا رکھا تھا۔

       Fir'aoun - Pharaoh: a King with acute Narcissistic personality disorder

وَإِنَّهُۥ لَمِنَ ٱلْمُسْـرِفِيـنَ .10:83٨٣

  • And most certainly he was well known as an aggressive - oppressive ruler. [10:83]

  • ۔اور اس کے متعلق یہ حقیقت مشہور تھی کہ   ظلم و جبروت  کی تمام حدیں پھلانگ جانے والوں میں اس کا شمار ہے۔

Root: س ر ف


وَقَالَ مُوسَـىٰ يٟقَوْمِ إِن كُنتُـمْ ءَامَنتُـم بِٱللَّهِ فَعَلَيْهِ تَوَكَّلُوٓا۟

  • Know it, Mūsā [alai'his'slaam in Egypt] said: "O my nation! if you people were heartily believing in Allah the Exalted, thereby, have trust, confidence and reliance upon Him the Exalted;

  • ۔اس دور کی تاریخ کے متعلق مزید جان لو؛موسیٰ(علیہ السلام) نے کہا’’اے میری قوم!اگر تم لوگ اللہ تعالیٰ پر ایمان رکھتے ہو تو پختگی ایمان کے اظہار کے لئے بہتر وقت اور نتائج کے لئے ان پر بھروسہ اور اعتماد  رکھو۔

Root: و ك ل

إِن كُنتُـم مُّسْلِمِيـنَ .10:84٨٤

  • Retain it if you people were Muslims" [10:84]

  • ۔پر امید رہو اگر تم ضابطہ حیات اسلام پر کاربند ہو‘‘۔

فَقَالُوا۟ عَلَـىٰ ٱللَّهِ تَوَكَّلْنَا

  • Thereat they said: "Upon Allah the Exalted we have put trust and dependence"

  • رد عمل دیتے ہوئے انہوں نے کہا’’ہم عقل و خرد کے تقاضوں پر عمل پیرا ہوکر بہترین نتائج کے لئے اللہ تعالیٰ پر بھروسہ اور اعتماد رکھتے ہیں‘‘۔

رَبَّنَا لَا تَجْعَلْنَا فِتْنَةٙ لِّلْقَوْمِ ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .10:85٨٥

  • Thereat they said: "Upon Allah the Exalted we have put trust and dependence"

  • رد عمل دیتے ہوئے انہوں نے کہا’’ہم عقل و خرد کے تقاضوں پر عمل پیرا ہوکر بہترین نتائج کے لئے اللہ تعالیٰ پر بھروسہ اور اعتماد رکھتے ہیں‘‘۔

وَنَجِّنَا بِرَحْـمَتِكَ مِنَ ٱلْقَوْمِ ٱلْـكَـٟفِرِينَ .10:86٨٦

  • And with Your mercy rescue us from the nation of disbelievers." [10:86]

  • ۔اور آپ جناب ہمیں  اپنی رحمت  کے ساتھ رسول اللہ کا  انکار کرنے والی قوم کے ظلم و استحصال سے نجات دلائیں‘‘۔

وَأَوْحَيْنَآ إِلَـىٰ مُوسَـىٰ وَأَخِيهِ أَن تَبَوَّءَا لِقَوْمِكُـمَا بِمِصْرَ بُيُوتٙا

  • Know it; We had communicated to Mūsā [alai'his'slaam in Egypt] and his brother asking them that "you both may select and earmark houses for your nation within the city Misr: Egypt

  • ۔جان لو حالات کے پیش نظر ہم جناب نے موسیٰ (علیہ السلام)اور ان کے بھائی کو یہ پیغام بھیجا تھا کہ’’آپ دونوں شہر مصر میں اپنی قوم کے لئے موافق اور سازگارگھروں کی نشاندہی کریں۔

وَٱجْعَلُوا۟ بُيُوتَكُـمْ قِبْلَةٙ وَأَقِيمُوا۟ ٱلصَّلَوٰةَۗ

  • And you people declare your houses [in various localities respectively] as Confronting Focal Point [] and organize the Institution of As'salat: Time bound protocol of servitude and allegiance.

  • اور اپنے ان گھروں کو مختلف علاقوں میں  روبرو ہونے کا مقام قرار دے دو۔اور استقلال و استقامت ؍منظم طریقے سے تم لوگ صلوٰۃ کی ادا ئیگی کرتے رہو

وَبَشِّـرِ ٱلْمُؤْمِنِيـنَ .10:87٨٧

  • And guarantee-ensure the glad tidings to the heartily believing people." [10:87]

  • اورآپ (موسیٰ علیہ السلام)صدق قلب سےایمان لانے والوں کو کامیابی و کامرانی کی بشارت / ضمانت دیں۔

وَقَالَ مُوسَـىٰ رَبَّنَآ إِنَّكَ ءَاتَيْتَ فِرْعَوْنَ وَمَلَأَهُۥ زِينَةٙ وَأَمْوَٟلٙا فِـى ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَا

  • And Mūsā [alai'his'slaam in Egypt] prayed: "Our Sustainer Lord! Indeed You have given Fir'aoun/ Pharaoh and his chieftains splendour and riches in the worldly life.

  • ۔اور موسیٰ(علیہ السلام)نے کہا’’اے ہمارے رب! یہ حقیقت ہے کہ آپ جناب نے فرعون اور اس کے رفقاء سرداروں کوشان و شوکت اور مال و دولت سے حیات دنیا میں نوازا ہے۔

Root: م ل ء

رَبَّنَا لِيُضِلُّوا۟ عَن سَبِيلِكَۖ

  • Our Sustainer Lord! they are employing it for the purpose they might astray people from the Path prescribed by Your Majesty.

  • ۔اے ہمارے رب!مگر انہوں نے اس عنایت کو آپ جناب کے مقرر راستے سے لوگوں کو منحرف کر کے دور کر دینے کے لئے استعمال کیا ہے۔

رَبَّنَا ٱطْمِسْ عَلَـىٰٓ أَمْوَٟلِـهِـمْ وَٱشْدُدْ عَلَـىٰ قُلُوبِـهِـمْ

  • Our Sustainer Lord! You obliterate their riches and let their hearts remain hardened

  • ۔اے ہمارے رب!آپ ان کے مال و دولت پر خستگی طاری کر دیں۔اور ان کے دلوں پر سختی اور جمود کا اثر قائم رہنے دیں۔

فَلَا يُؤْمِنُوا۟ حَـتَّىٰ يَرَوُا۟ ٱلْعَذَابَ ٱلۡأَلِيـمَ .10:88٨٨

  • Whereby they might not believe until they see and face the painful chastisement." [10:88]

  • ۔چونکہ یہ غفلت اور لا پرواہی کا سبب ہیں اس لئے وہ ایمان نہیں لائیں تاوقتیکہ دردناک عذاب کو دیکھ لیں‘‘۔

قَالَ قَدْ أُجِيبَت دَّعْوَتُكُـمَا

  • He the Exalted: "The prayer of you both has been answered".

  • ۔ان جناب نے جواب دیا’’میں نے تم دونوں کی دعا کو شرف قبولیت دے دیا ہے(ایسا ہی ہوگا)‘‘۔

فَٱسْتَقِيمَا وَلَا تَتَّبِعَآنِّ سَبِيلَ ٱلَّذِينَ لَا يَعْلَمُونَ .10:89٨٩

  • Hence, till it happens you both diligently remain steadfast and composed; and in future too you both should not follow the course of those who seek and acquire not knowledge." [10:89]

  • ۔چونکہ ابھی مہلت کا کچھ وقت باقی ہے اس لئے آپ دونوں مطنئن رہتے ہوئے استقامت سے فرائض انجام دیتے رہیں،اور ان لوگوں کے اختیار کردہ راستے کی آئندہ بھی پیروی نہ کریں جو علم حاصل کرنے کے خواہشمند ہی نہیں‘‘۔


وَجَٟوَزْنَا بِبَنِىٓ إِسْرَٟٓءِيلَ ٱلْبَحْرَ

  • Know it; Our Majesty helped them safely cross over the [dried passage-fringing Reef] Gulf of Suez along with Bani Iesraa'eela

  • ۔اور ہم جناب نے انہیں بنی اسرائیل کی مصاحبت میں بحر سویز کو باحفاظت عبور کرنے میں مدد دی۔

Exodus

فَأَتْبَعَهُـمْ فِرْعَوْنُ وَجُنُودُهُۥ بَغْيٙا وَعَدْوٙاۖ

  • Thereat, encouraged by having seen Bani Iesraa'eel cross over safely to other side, Fir'aoun/ Pharaoh and his armed troops followed them in a mindset of rebellion and enmity 

  • ۔چونکہ انہوں نے سطح آب کے اوپر ابھرے خشک راستے سے بحافظت عبور ہوئے انہیں  دیکھ لیا اس لئے فرعون نے ان کے نقش قدم پر تعاقب کرنے کا فیصلہ کیا۔اور اس کی پیروی اس کے لشکروں نے کی۔ان کو پکڑنے کی شدید خواہش اورعداوت اس کے قلب و ذہن پر غالب تھی۔

حَتَّىٰٓ إِذَآ أَدْرَكَهُ ٱلْغَـرَقُ

  • Until when the imminent drowning had given him realization

  • وہ تعاقب کرتا رہا یہاں تک کہ جب خشک راستہ ٹوٹ کر بکھرنے اور اس پر آن پڑنے کے سبب جب ڈوبنا اس پر آشکارہ ہو گیا:

Root: د ر ك; غ ر ق

قَالَ ءَامَنتُ أَنَّهُ لَآ إِلِـٟهَ إِلَّا ٱلَّذِىٓ ءَامَنَتْ بِهِۦ بَنوٓا۟ إِسْرَٟٓءِيلَ

  • He (Pharaoh) said: "I have believed, indeed there is none at all iela'aha: godhead who is living and is sustainer lord except He in Whom have believed Bani Iesraa'eel  

  • ۔تو اس نے کہا’’میں اس حقیقت پر ایمان لے آیا ہوں کہ ان جناب کے علاوہ جن پر اسرائیل کے بیٹے ایمان لائے تھے کوئی ایک بھی جنہیں معبودان سمجھا جاتا ہے ذی حیات اور صاحب اقتدار نہیں۔

وَأَنَا۟ مِنَ ٱلْمُسْلِمِيـنَ .10:90٩٠

  • And I have now become part of the Muslims." [10:90]

  • ۔اور میں اب اپنے آپ کو اسلام پر کاربند لوگوں میں شامل اور شمار کرتا ہوں‘‘۔

ءَآلْـَٔـٟنَ وَقَدْ عَصَيْتَ قَبْلُ

  • He was snubbed: Now at this point in time you are believing! whereas you had just earlier refused to accept

  • ۔اسے جواب دیا گیا’’کیااب،اس وقت؛مگر اس سے قبل کے زمان میں ہمیشہ تو انکار کرتا رہا ہے۔

وَكُنتَ مِنَ ٱلْمُفْسِدِينَ .10:91٩١

  • And fact remains you have persistently been amongst the distorters and creators of imbalances, in-equilibrium. [10:91]

  • ۔اور تیرا شمار ان میں رہا جو حقیقت کے منافی ذہنی و فکری انتشار اور بگاڑ پیدا کرنے والے ہیں۔

فَٱلْيَوْمَ نُنَجِّيكَ بِبَدَنِكَ لِتَكُونَ لِمَنْ خَلْفَكَ ءَايَةٙۚ

  • Therefore, Our Majesty will today render you preserved along with your scale armour to make you a symbol for him who succeeds you".

  • ۔چونکہ تجھے سدھرنے کے بہت مواقع دئیے گئے مگر تونے گنوا دئیے اس لئے ہم جناب آج تجھے اپنے سینے پر پہنی زرہ بکتر سمیت اندر جاگزیں خوف اور بزدلی سے نجات دلا دیں گے۔اس طرح ہم تجھے ہر اس  شخص کے لئے  عبرت کا نشان بنا دیں جو تیرے جیسا طرز عمل اختیار کرے گا‘‘۔

وَإِنَّ كَثِيـرٙا مِّنَ ٱلنَّاسِ عَنْ ءَايَٟتِنَا لَغَٟفِلُونَ .10:92٩٢

  • However, fact remains that most of people are indeed neglectful and heedless of Our Aa'ya'at: eye opening existents. [10:92]

  • ۔متنبہ رہو؛یہ حقیقت ہے لوگوں میں اپنے آپ میں مگن کی اکثریت ہم جناب کی  جناب رہنمائی کرنے والی ہماری مظاہر فطرت کی نشانیوں سے غافل رہنے والے ہیں۔

Root: غ ف ل

وَلَقَدْ بَوَّأْنَا بَنِىٓ إِسْرَٟٓءِيلَ مُبَوَّأَ صِدْقٛ وَرَزَقْنَٟهُـم مِّنَ ٱلطَّيِّبَٟتِ

  • Know the history; Our Majesty had certainly settled Bani Iesraa'eel, a settlement fulfilling the promised word; and provided them sustenance comprising pleasant nourishing produce.

  • ۔تاریخ سے مطلع ہو؛ یہ حقیقت ہے کہ ہم جناب نے مصر سے خروج پربنی اسرائیل کو مقرر کردہ ٹھکانا دیا تھا،وعدہ کو سچ کر دکھانے کے انداز میں مقرر کیا ہوا مقام۔اورہم جناب نے انہیں مرغوب اور صحت افزا سامان زیست مہیا کیا تھا۔

فَمَا ٱخْتَلَفُوا۟ حَـتَّىٰ جَآءَهُـمُ ٱلْعِلْمُۚ

  • Thereat, they mutually differed not till such time the Knowledge came to them.

  • چونکہ  من گھڑت تاریخ  کو پہلے چیلنج نہیں کیا گیا تھا اس لئے انہوں نے  رسول کریم سے  اس وقت تک اختلاف نہیں کیا تاوقتیکہ مبنی بر حقیقت علم(قرءان مجید)ان  کو پہنچ گیا۔

إِنَّ رَبَّكَ يَقْضِي بَيْنَـهُـمْ يَوْمَ ٱلْقِيَٟمَةِ فِيـمَا كَانُوا۟۟ فِيهِ يَخْتَلِفُونَ .10:93٩٣

  • [ignore them] Indeed your Sustainer Lord will adjudge between them, on the Day of Rising Regarding the issue about which they kept differing/opposing (read with 2:113; and 34:17). [10:93]

  • (رہنے دو انہیں ان تخیلاتی خوش فہمی میں)یہ حقیقت ہے کہ آپ(ﷺ) کے رب  روز قیامت  ان کے مابین فیصلہ فرمائیں گے اس حکم کے حوالے سے جس میں وہ باہمی طور پر اختلاف کرتے رہے۔

فَإِن كُنتَ فِـى شَكّٛ مِّمَّآ أَنزَلْنَآ إِلَيْكَ فَسْـَٔلِ ٱلَّذِينَ يَقْرَءُونَ ٱلْـكِـتَٟبَ مِن قَبْلِكَۚ

  • Therefore, if in the past life you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] had responded sceptically regarding their ambiguous, unconfirmed assertions, about which Our Majesty have since compositely sent to you therefore, subsequent to this communication, question-confront [with the revealed information] those who read the Book which was given to them earlier to you.

  • ۔چونکہ اہل کتاب   متضاد اختلافی باتیں  کرتے ہیں اِس لئے اگرآپ ماضی میں  ان   موضوعات  پرعدم ثبوت باتوں پر شک کا اظہار کرتے تھےجن کے متعلق مبنی بر حقیقت معلومات ہم آپ پر مجتمع انداز میں نازل فرما چکے ہیں تو اپنے اظہار شک کے متعلق ان سے  سوال پوچھیں/انہیں سامنا کرائیں جو  منفرد  کتاب  کو پڑھ رہے ہیں جس کو آپ (ﷺ) سے قبل  انہیں عنایت کیا تھا۔۔

Root: ش ك ك 

لَقَدْ جَآءَكَ ٱلْحَقُّ مِن رَّبِّكَ

  • Indeed the Infallible Doctrine-Discourse of Reality-Profitability and substance of permanence (Qur´ān) has since arrived to you, revealed and rendered in easy to comprehend composition from the Sustainer Lord of you the Messenger. (they know it-6:114)

  • ۔یقینا بیان حقیقت: قرء ان مجیدآپ (ﷺ) کے رب کی جانب سے آپ کوآسان فہم تدوین میں پہنچ چکا ہے۔ (جسے وہ جانتے ہیں الانعام۔۱۱۴)

فَلَا تَكُونَنَّ مِنَ ٱلْمُمْتَـرِينَ .10:94٩٤

  • Therefore, you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] should not henceforth remain worrywart for such people of Book. [10:94]

  • ۔چونکہ وہ حقیقت کو جاننے کے باوجود لیت و لعل کرتے ہیں اِس لئے آپ (ﷺ)کو چاہئے کہ اُن اہل کتاب کے لئے آج کے بعد زیادہ متردد/فکر مند انداز میں نہ رہیں۔

وَلَا تَكُونَنَّ مِنَ ٱلَّذِينَ كَذَّبُوا۟ بِـٔ​َايَـٟتِ ٱللَّهِ

  • And nor you should henceforth be worrywart for them who have publicly contradicted the Aa'ya'at: Verbal passages of the Book of Allah the Exalted

  • ۔اور نہ آئندہ آپ (ﷺ)ان لوگوں کے لئے       زیادہ  متردد اور فکرمند ہو کر  وقت دیں     جن  کا      تعلق ان سے ہے جنہوں نے اللہ  تعالیٰ کے کلام پر مبنی آیات کو برملا جھٹلایا ہے۔

Root: ء ى ى

فَتَكُونَ مِنَ ٱلْخَٟسِـرِينَ .10:95٩٥

  • Since your time is precious and they are more deserving who feel awe of their Sustainer Lord, therefore, thereby, by working on them it will be loss of time. [10:95]

  • ۔چونکہ آپ کا وقت قیمتی اور اسکے زیادہ حق دار اپنے رب سے بن دیکھے مرعوب اور سہمے رہتے ہیں اس لئے ایسا  کر کے وقت      کا نقصان کرنے والے بن جائیں گے۔

Root: خ س ر

إِنَّ ٱلَّذِينَ حَقَّتْ عَلَيْـهِـمْ كَلِمَتُ رَبِّكَ لَا يُؤْمِنُونَ .10:96٩٦

  • Remain cognizant of the fact; those upon whom the Word of your Sustainer Lord is established  they will not accept/believe; [10:96]

  • آپ (ﷺ)یہ حقیقت یاد رکھیں کہ      وہ لوگ جن پر  آپ(ﷺ)کے رب کا بیان   حقیقت بن چکا ہے وہ ایمان نہیں لائیں گے۔

وَلَوْ جَآءَتْـهُـمْ كُلُّ ءَايَةٛ

  • They will not submit to belief despite if every unprecedented display (miracle) has come and observed by them

  • ۔وہ ایمان نہیں لائیں گے چاہے تمام قسم کی شہادتوں (آیات /معجزات)کا عینی مشاہدہ کر بھی لیں  جوان کےتصور،تجربہ، سائنسی توجیح سے ماورائے اِدراک  ہوتے ہوئے  اللہ تعالیٰ کی جانب سے سند اور برھان ہونے کا درجہ رکھتی ہوں تب بھی  ان کو وہ تسلیم نہیں کریں گے (اور کہہ دیں گے یہ طلسماتی شعبدہ بازی ہے)

حَـتَّىٰ يَرَوُا۟ ٱلْعَذَابَ ٱلۡأَلِيـمَ .10:97٩٧

  • They will believe only when they would see the painful chastisement.  [10:97]

  • ۔وہ تب ایمان لائیں گے جب المناک عذاب دیکھ لیں گے۔

فَلَوْلَا كَانَتْ قَرْيَةٌ ءَامَنَتْ فَنَفَعَهَآ إِيمَٟنُـهَآ إِلَّا قَوْمَ يُونُسَ

  • Despite having seen the unprecedented displays why were there not a town-people who believed whereby its believing would have benefited them; except nation of Yunus [alai'his'slaam]

  • ۔باوجود بار بار تنبیہ کئے جانے کے کیوں ایسا نہیں ہوا کہ کوئی بستی ہوتی جو ایمان لے آتی تو حسب وعدہ رسول ان کا ایمان لانا اسے موجب نفع ہوتا، سوائے یونس(علیہ السلام) کی قوم کے۔

لَمَّآ ءَامَنُوا۟ كَشَفْنَا عَنْـهُـمْ عَذَابَ ٱلخِزْىِ فِـى ٱلْحَـيَوٰةِ ٱلدُّنْيَا

  • As soon when they believed Our Majesty had averted away from them the chastisement of disgrace in the worldly life

  • ۔جون ہی وہ ایمان لے آئے ہم جناب نے حیات دنیا میں رسوا کن عذاب کو ان سے دور کر دیا۔

; Root: خ ز ى: ك ش ف

وَمَتَّعْنَٟهُـمْ إِلَـىٰ حِيـنٛ .10:98٩٨

  • And Our Majesty granted them the worldly comforts and resources for a term. [10:98]

  • ۔اور ہم جناب نےایک مدت کے لئے انہیں  خوشحالی اور سامان زیست سے نواز دیا۔

وَلَوْ شَآءَ رَبُّكَ لَءَامَنَ مَن فِـى ٱلۡأَرْضِ كُلُّهُـمْ جَـمِيعٙاۚ

  • [You remain relaxed on their non acceptance and contradiction of Grand Qur´ān] Since, had your Sustainer Lord so willed, everyone who exists in the Earth would have undoubtedly accepted/believed, all of them collectively.

  • مطلع رہیں۔یہ حقیقت اپنی جگہ ہے کہ اگر آپ(ﷺ) کے رب کا ارادہ اور منشاء یہ ہوتا تو   ان تمام میں سےہر کوئی جو زمین  میں موجود  ہے آپ (ﷺ) اور الہدی/قرءان مجید پر  ایمان لے آتا(ان کو عطا کردہ حریت سلب کر کے)، اجتماعی انداز میں۔

أَفَأَنتَ تُكْرِهُ ٱلنَّاسَ حَـتَّىٰ يَكُونُوا۟ مُؤْمِنِيـنَ .10:99٩٩

  • Therefore, would you continue exerting for people against their wilful disliking, for the purpose they they might become believers [to get relieved of grief you have for them]? [10:99]

  • ۔کیا اس کے باوجود آپ(ﷺ)اپنی توانائیاں  خرچ کر کے اور زیادہ وقت  دے کر لوگوں کو مجبور کر سکیں گے یہاں تک وہ ایمان والے بن جائیں۔

Root: ك ر ه

وَمَا كَانَ لِنَفْسٛ أَن تُؤْمِنَ إِلَّا بِإِذْنِ ٱللَّهِۚ

  • Know it; It is not possible for a person that he might proclaim belief except with the explicit permission of Allah the Exalted. [since He transmits data from brain to chest to enable someone utter words]

  • ۔اس لئے اس حقیقت کو پیش نظر رکھیں کہ ایمان لانے کا اعلان کرنا بھی کسی شخص کے لئے ممکن نہیں سوائے اس کے کہ اللہ تعالیٰ کا اذن ساتھ ہو(انسان زبان سے بولتا کیسے ہے وہ مطالعہ کریں)۔

وَيَجْعَلُ ٱلـرِّجْسَ عَلَـى ٱلَّذِينَ لَا يَعْقِلُونَ .10:100١٠٠

  • And He the Exalted renders the confusion, skepticism, bias, prejudice as inhibition upon those who do not ponder and apply intellect to differentiate [conjecture from the truth]. [10:100]

  • اور وہ جناب  ان کے ہٹ دھرم منحرف طرز عمل کوایسے لوگوں پر چسپاں التباس و اضطراب کی آلودگی کا درجہ   دے دیتے     ہیں جو  حقیقت اور باطل کے مابین فرق جانچنے کے لئے عقل استعمال نہیں کرتے۔

قُلِ ٱنظُرُوا۟ مَاذَا فِـى ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضِۚ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "You people watch giving thought to that which is manifest in the Skies and the Earth.

  • ۔آپ(ﷺ)لوگوں کو  کہیں’’تم لوگ ان مظاہر فطرت  کو دیکھو اور غور کرو جو آسمانوں اور زمین میں نمایاں ہیں ۔

وَمَا تُغْنِى ٱلْءَايَٟتُ وَٱلنُّذُرُ عَن قَوْمٛ لَّا يُؤْمِنُونَ .10:101١٠١

  • The fact remains; the visible signs and the awakeners, admonishers avail not benefit to people who deliberately and persistently believe not. [10:101]

  • ۔مگر یہ حقیقت ہے کہ مطلق حقیقت کی جانب رہنمائی کرنے والی مظاہر فطرت کی نشانیاں اورمتعدد انتباہ ایسے لوگوں کوفائدہ دینے کا محرک نہیں بنتیں جو رسول کریم اور قرءان مجید پر ایمان مہیں لاتے۔

فَهَلْ يَنتَظِرُونَ إِلَّا مِثْلَ أَيَّامِ ٱلَّذِينَ خَلَوْا۟ مِن قَبْلِـهِـمْۚ

  • Thereby, are they waiting to see but the like of the days of those who passed before them?

  • ۔چونکہ وہ ٹس سے مس نہیں ہو رہے تو کیا وہ اس صورتحال کے مثل وقوع پذیر ہونے کے منتظر ہیں جیسا ان لوگوں کے آخری دنوں میں پیش آیا تھا جو ان سے قبل اس طرز عمل پر کاربند رہے تھے۔

Root: خ ل و

قُلْ فَٱنتَظِرُوٓا۟ إِ نِّـى مَعَكُـم مِّنَ ٱلْمُنتَظِرِينَ .10:102١٠٢

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] tell them: "Therefore, wait for the promised thing to happen. I am indeed staying with you people awaiting patiently." [10:102]

  • ۔آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں’’چونکہ تم لوگ اس باطل نظرئیے پرقائم رہنے پر بضد ہو تو نتائج کا انتظار کرو، میں تمہارے ساتھ منتظر ہوں"۔

ثُـمَّ نُنَجِّـى رُسُلَنَا وَٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ۚ

  • Afterwards, on completion of respite period of those nations Our Majesty was rescuing Our Messengers and those who had heartily believed;

  • ۔انتظار کا وقت ختم ہونے کے بعد ازاں ہم جناب اپنے رسولوں اور ان لوگوں کو بحافظت  نجات دلاتے رہے ہیں جو اپنے زمان و مکان میں رسول اللہ پر ایمان لائے تھے

كَذَٟلِكَ حَقّٙا عَلَيْنَا نُنجِ ٱلْمُؤْمِنِيـنَ .10:103١٠٣

  • This was self imposed obligation upon Our Majesty that We deliver-rescue the believers. [10:103]

  • اس  طرح  دل کی شاد سے ایمان لانے والوں کی مدد کرنا ہم جناب پر ہمارے اپنے وعدہ کے مطابق ان کا استحقاق تھا۔(اس لئے ہم نے انہیں رسول اللہ کی معیت میں بچا لیا)


قُلْ يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلنَّاسُ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce, "O you the people! listen;

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں:’’اے لوگو!دھیان سے سنو

إِن كُنتُـمْ فِـى شَكّٛ مِّن دِينِى

  • If you people were in skepticism regarding divine origin of my code and way of life

  • ۔اگر تم لوگ ابتدا سے میرے طرز حیات کی حقانیت کو قبول کرنے میں عدم یقین کی کیفیت میں رہے ہو۔

Root: ش ك ك

فَلَآ أَعْبُدُ ٱلَّذِينَ تَعْبُدُونَ مِن دُونِ ٱللَّهِ

  • Since I have now been assigned the responsibility to warn people against polytheism, get convinced that I will never endorse allegiance to those whom you people worship besides Allah the Exalted

  • ۔چونکہ اب مجھے انتباہ کے فرائض سونپ دئیے گئے ہیں اس لئے اب یقین کی کیفیت میں ہو جاؤ، اللہ تعالیٰ کے علاوہ  میں ان کے لئے   کبھی بندگی کا اظہار نہیں کروں گا جن کی تم ان کے علاوہ پرستش کرتے ہو۔

وَلَـٟكِنْ أَعْبُدُ ٱللَّهَ ٱلَّذِى يَتَوَفَّىٰكُـمْۖ

  • Instead I am perpetually allegiant solely and exclusively to the One Who renders you people segregated-alienated from the company of others [on death as well as on Day of Resurrection]

  • ۔مگر میں اللہ تعالیٰ کی بااظہار بندگی کرتا رہوں گا، وہ جناب ہیں جو تم  کو لوگوں سے الگ  حالت میں کر دیں گے(موت پر اور پھر یوم قیامت)۔

Root: و ف ى

وَأُمِرْتُ أَنْ أَكُونَ مِنَ ٱلْمُؤْمِنِيـنَ .10:104١٠٤

  • And it was commanded at the time of revelation that among the monotheist believers I be the first who accepted it (Qur’ān) [10:104]

  • ۔اور مجھے (نزول قرءان پر) یہ حکم دیا گیا  کہ اس (قرءان مجید) کو  مومنوں میں  اول تسلیم کرنے والا بنوں۔

وَأَنْ أَقِمْ وَجْهَكَ لِلدِّينِ حَنِيفٙا

  • And that keep maintaining focus of your attention for the Prescribed System-Code, perpetually a staunch monotheist

  • ۔اوریہ کہ اپنی  توجہ اور انہماک کو اللہ تعالیٰ کے متعین کردہ دستور اور طرز حیات کے لئے مرکوز اور کوشاں رکھوں۔ہمیشہ التزام و دوام سے فلسفہ توحید پر کاربند مسلم۔(سورۃ الرون کی آیت۔۳۰ اور ۴۳ ساتھ پڑھیں)

Root: ح ن ف

وَلَا تَكُونَنَّ مِنَ ٱلْمُشْـرِكِيـنَ .10:105١٠٥

  • And like the past in future also you should not identify to be belonging to those who ascribe sculpted idols as associates of Allah the Exalted [10:105]

  • ۔اورمجھےمنع کیا گیا ہے کہ آئندہ کسی ایسے شخص سے  دنیاوی تعلق اور نسبت  رکھوں  جو فلسفہ اشتراک پر کاربند   لوگوں میں سے ہے۔

وَلَا تَدْعُ مِن دُونِ ٱللَّهِ مَا لَا يَنفَعُكَ وَلَا يَضُـرُّكَۖ

  • And you should not call anyone other than Allah the Exalted that neither causes you any benefit nor that could cause you any harm.

  • ۔اور   یہ کہ اللہ تعالیٰ کے علاوہ اس کو نہیں پکارنا چاہئے جو نہ آپ کو  کبھی نفع پہنچا سکتا ہے اور نہ کبھی ضرر پہنچا سکتا ہے۔

فَإِن فَعَلْتَ فَإِنَّكَ إِذٙا مِّنَ ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .10:106١٠٦

  • Since divine command has reached, therefore, if you did it once-first time, then certainly you would instantly be deemed amongst the distorters. [10:106]

  • ۔چونکہ  انتباہ کر دیا ہے اس لئے اگر اب  اول بار اس کا ارتکاب کرو گے توچونکہ یہ خبردار کئے جانے کے باوجود ہو گا اس لئے ایسا کرنے پر فوراً آپ اس میں شمار ہوں گے جو حقیقت کے منافی باطل طرز عمل اپناتے ہیں۔

وَإِن يَـمْسَسْكَ ٱللَّهُ بِضُرّٛ فَلَا كَاشِفَ لَهُۥٓ إِلَّا هُوَۖ

  • And if Allah the Exalted inflicts upon you distress; thereat for reason of He being absolutely dominant, there is none capable for removing that distress except Him the Exalted

  • ۔اور اگر اللہ تعالیٰ تم کو کسی تکلیف  دہ مشکل سے دوچار کر دیں     تو قطعاً  کوئی تکلیف سے آزاد کروانے والا نہیں  جو اس سے چھٹکارا دلا سکےسوائے خود ان جناب کے۔

Root: ك ش ف

وَإِن يُرِدْكَ بِخَيْـرٛ فَلَا رَآدَّ لِفَضْلِهِۦۚ

  • And if He intends betterment for you, thereby, there is none at all who could revert His bounty

  • اور اگر وہ جناب آپ کو بہتری سے فیض یاب کرنے کا ارادہ فرماتے ہیں  تو چونکہ ان کا ہر ارادہ تکمیل شدہ کی مانند ہے اس لئے  ان کے عنایت کردہ فضل کو مستفیض سے دور کر نے والا قطعاً کوئی نہیں ہے۔

يُصَيبُ بِهِۦ مَن يَشَآءُ مِنْ عِبَادِهِۦۚ

  • He the Exalted causes this bounty to reach him whom He likes amongst His created subjects.

  • ۔وہ جناب اپنے بندوں میں سے جس کے متعلق فیصلہ کرتے ہیں اس کو اس فضل سے فیض یاب کر دیتے ہیں۔

وَهُوَ ٱلْغَفُورُ ٱلرَّحِـيـمُ .10:107١٠٧

  • Remain aware;  He the Exalted is repeatedly Forgiving/Overlooking and the Fountain of Infinite Mercy." [10:107]

  • اور وہ جناب   درگزر اور پردہ پوشی کرنے اور معاف فرمانے والے ہیں، منبع رحمت ہیں‘‘۔

قُلْ يَـٰٓأَيُّـهَا ٱلنَّاسُ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] pronounce: "O you the Mankind! Listen;

  • آپ(ﷺ)ارشاد فرمائیں!اے لوگو!دھیان سے سنو

قَدْ جَآءَكُمُ ٱلْحَقُّ مِن رَّبِّكُـمْۖ

  • The Infallible Doctrine-Discourse (Qur’ān) has since reached to you people, rendered easy to comprehend, from your Sustainer Lord

  • بیانِ حقیقت (قرء انِ مجید)یقیناآپ لوگوں تک پہنچ گیا ہے،یہ آپ لوگوں کے رب کی جانب سے آسان فہم انداز میں مرتب فرمایا گیا ہے۔

فَمَنِ ٱهْتَدَىٰ فَإِنَّمَا يَـهْتَدِى لِنَفْسِهِۦۖ

  • Thereby, whoever in response (the Qur’ān having reached) endeavoured getting aright guided, thereat, he is guiding-leading on the way only for his own self.

  • اِس لئے لوگوں میں سے جس کسی نے(قرآنِ مجید پہنچنے پر) از خودخلوص سے صحیح سمت کی رہنمائی کوحاصل کیا درحقیقت اس نے محنت و خلوص سے خود اپنی ذات کے فائدے کے لئے ہدایت یافتہ بنایا۔

وَمَن ضَلَّ فَإِنَّمَا يَضِلُّ عَلَيْـهَاۖ

  • Similarly, whoever remained neglectful-indifferent (towards Qur’ān having reached him), thereby the consequential fact is that his strays-neglect has effect upon his self.

  •  اور جوکوئی(قرآنِ مجید سے) غافل/منحرف ہوا تواُس کی گمراہی کا ذمہ خود اُس پر ہے۔

وَمَآ أَنَا۟ عَلَيْكُـم بِوَكِيلٛ .10:108١٠٨

  • Remain aware that I-Muhammad [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] am not assigned the responsibility to act as disposer of affairs and caretaker upon you people." [10:108]

  • ( اورمیں آپ لوگوں کا وکیل/ ذمہ دار نہیں ہوں۔“(سورۃ یونس۔۸

وَٱتَّبِــعْ مَا يُوحَـىٰٓ إِلَيْكَ

  • And you the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] follow in practice, in letter and spirit, that (Grand Qur’ān) which has been verbally communicated to you.

  • اورآپ (ﷺ) خلوص اور تن دہی  سےفقط اس  کی پیروی میں عمل پیرا  ہوں  جو آپ کو  کتاب میں سے آسان فہم تدوین میں  کلام بھیجا جا رہا ہے ۔

وَٱصْبِـرْ حَـتَّىٰ يَحْكُـمَ ٱللَّهُۚ

  • And be coolly perseverant until Allah the Exalted decides/decrees/adjudges.

  • ۔اور آپ(ﷺ)دھیرج رکھیں ان  نامعقول باتوں کو سن کر جو انکار کرنے والے عمائدین کرتے رہتے ہیں  جب تک اللہ تعالیٰ فیصلے کا فرمان جاری  فرما دیں۔

وَهُوَ خَيْـرُ ٱلْحَٟكِمِيـنَ .10:109١٠٩

  • Be mindful, He the Exalted is the best of the Judges. [10:109]

  • ۔اور (آپ جانتے ہیں)وہ جناب بہترین اور اعلیٰ ترین فیصلہ فرمانے والے ہیں

011- سُوۡرَةُ هود


الٓرۚ

  • Aleph: a letter; Laam: a Consonant with prolongation sign/glyph; Ra: a Consonant conjoined with preceding consonant.

  • عربی زبان کے حروف الف،لام بمع آواز کی طوالت کانشان اور منسلک حرف ر

كِتَٟبٌ أُحْكِمَتْ ءَايَٟتُهُۥ

  • (You the Messenger pronounce) This is a book. Its characteristic is that its Aa'ya'at: miscellany of Unitary Verbal Passages have been perpetuated, permanently established containing inviolate, indissoluble and clenching commands, directions, injunctions, decisions, and writ.

  •   ۔یہ کتاب جو آپ کے زیر مطالعہ ہے اس کا وصف یہ ہے کہ اس  میں درج انفرادی بیانات(آیات) مستحکم،ناقابل تردید،پائدار فرمان کی حیثیت کی حامل بنا دی گئی ہیں۔

ثُـمَّ فُصِّلَتْ مِن لَّدُنْ حَكِيـمٛ خَبِيـرٛ .11:01١

  • Afterwards their intermittent communication over a span of time, these (Aa'ya'at) have been compacted-placed in enclave [Surat], separated-distinguished-isolated-made distinct and crystal clear by the Infinitely Just Supreme Administrator of the created realms Who is eternally aware. [11:01]

  • ۔بعد ازاں وقفے وقفے سے ان آیات کی ترسیل کے انہیں ان جناب کے حکم سے جدا جدا موضوعات کے فریم/فصل میں  اس کتاب میں مدون   کر دیا گیا ہے جو مطلق فرمانروا ہیں اور مطلق باخبر ہیں۔

Root: ل د ن

أَلَّا تَعْبُدُوٓا۟ إِلَّا ٱللَّهَۚ

  • You the Messenger pronounce primary command is that you people submit not to subjection, subservience and allegiance but to Allah the Exalted.

  • آپ(ﷺ)بتائیں کہ بنیادی فرمان یہ ہے کہ "تم لوگ اللہ تعالیٰ کے سوائے کسی کی بندگی اور عبادت نہیں کرو۔

إِنَّنِى لَـكُـم مِّنْهُ نَذِيرٚ وَبَشِيـرٚ .11:02٢

  • I am indeed appointed and assigned the responsibility by Him the Exalted to act as the Awakener and Admonisher and Guarantor of glad tidings for you all the people [11:02]

  • ۔میرے متعلق حقیقت یہ ہے کہ میں  کفر و نافرمانیوں کے نتائج و انجام سے پیشگی خبردار اور خوش کن نتائج کی بشارت اور ضمانت دینے والا ہوں۔میں  تم لوگوں کے لئے اپنی یہ حیثیت ان  جناب کی جانب سے اذن دئیے جانے پر بیان کر رہا ہوں۔  

وَأَنِ ٱسْتَغْفِرُوا۟ رَبَّكُـمْ ثُـمَّ تُوبُوٓا۟ إِلَيْهِ

  • And to advise you that: you people sincerely seek forgiveness from your Sustainer Lord; afterwards turn to Him perfecting sincerity and conduct.

  • ۔اور ان کا یہ فرمان بتانے کے لئے کہ تم لوگ اپنے رب سے پردہ پوشی اور بخشش کے خواہش مند بنو،بعد ازاں ان کی جانب ندامت کے احساس اور اصلاح کے ارادے سے پلٹو۔

يُمَتِّعْكُـم مَّتَٟعٙا حَسَنٙا إِلَـىٰٓ أَجَلٛ مُّسَمّٙى

  • He the Exalted would provide you excellent provision of transitory life-a tranquil life in times approaching the appointed moment of termination.

  • ۔وہ جناب تم لوگوں کو مناسب اور خوشگوار سامان زیست متعین مدت کی مقررہ ساعت تک فیض یاب رکھیں گے۔

وَيُؤْتِ كُلَّ ذِى فَضْلٛ فَضْلَـهُۥۖ

  • And He will ensure continued provision of His bounty to every person of grace [since He does not withdraw the granted grace unless people avert].

  • ۔اور ہر ایک صاحب فضل کو اپنے فضل سے عنایت فرمائے گا۔

وَإِن تَوَلَّوْا۟ فَإِ نِّـىٓ أَخَافُ عَلَيْكُـمْ عَذَابَ يَوْمٛ كَبِيـرٛ .11:03٣

  • Take note, if you people about-faced refraining this command, then I am indeed afraid and apprehensive of infliction of punishment of a big day upon you. [11:03]

  • ۔مگر اگر تم لوگ ان بشارتوں کے باوجود از خود پلٹ کر چلے گئے تو مجھے چونکہ اس کے نتائج کا علم ہے اس لئے مجھے بڑے دن کے عذاب کا تم لوگوں پر آن پڑنے کا خوف لاحق ہے۔

إِلَـى ٱللَّهِ مَرْجِعُكُـمْۖ

  • The return of you people will be directed for accountability towards Allah the Exalted.

  • تم لوگوں کو آخرکاراللہ تعالیٰ کی جانب احتساب کے لئے پیش کیا جائے گا۔

وَهُوَ عَلَـىٰ كُلِّ شَـىْءٛ قَدِيرٌ .11:04٤

  • Remain cognizant, He the Exalted is eternally the Causality Determiner upon entire physical realm." [11:04]

  • خبردار رہو،وہ جناب ہر ایک ایک شئے اور معاملے کو پیمانوں میں مقید کرنے پر ہمیشہ سے قادر ہیں" ۔

أَ لَآ إِنَّـهُـمْ يَثْنُونَ صُدُورَهُـمْ لِيَسْتَخْفُوا۟ مِنْهُۚ

  • Look at them! They fold their chests thinking that they might hide their duality from Him the Exalted.

  • ۔مگر ان کا  بے وقوفانہ بھولا پن تو دیکھو؛وہ اپنے سینوں کو اس خیال سے سکیڑتے ہیں کہ ان جناب سے اپنے دہرے پن کو مخفی رکھ لیں گے۔

أَلَا حِيـنَ يَسْتَغْشُونَ ثِيَابَـهُـمْ يَعْلَمُ مَا يُسِـرُّونَ وَمَا يُعْلِنُونَۚ

  • The fact is that when they veil by their clothing; He the Exalted knows what they conceal and what they project.

  • ۔اور اس بات کو بھی یاد رکھو کہ جب وہ اپنے کپڑے پہننے کی خواہش کرتے ہیں تو وہ جناب جانتے ہیں اسے جو وہ ظاہر کرتے ہیں اور اسے جو وہ چھپاتے ہیں۔

Root: س ر ر; ع ل ن;  غ ش ى

إِنَّهُۥ عَلِيـمُۢ بِذَاتِ ٱلصُّدُورِ .11:05٥

  • Remain mindful;  He the Exalted is absolutely aware of what is possessed inside the chests. [11:05]

  • ۔یہ حقیقت ہے کہ وہ جناب اس کا بھی مکمل علم رکھتے ہیں جوسینوں نے اپنے اندر چسپاں رکھا ہوا ہے۔


وَمَا مِن دَآبَّةٛ فِـى ٱلۡأَرْضِ إِلَّا عَلَـى ٱللَّهِ رِزْقُهَا

  • Take note; there is not a single moving creature in the Earth but provision of their life maintaining sustenance is dependent upon Allah the Exalted

  • مشاہدہ کرو؛زمین میں تمام کے تمام جانوروں کی اقسام میں  کوئی ایسا موجود نہیں سوائے اس کے جس کے رزق کی ذمہ داری اللہ تعالیٰ پر ہے۔

Root: د ب ب

وَيَعْلَمُ مُسْتَقَرَّهَا وَمُسْتَوْدَعَهَاۚ

  • And He the Exalted knows the staying place and departing place of all of them.

  • اور وہ جناب ان کی دلپسند جائے قرار اور میل ملاپ اور سونپے جانے کے مقام کو بخوبی جانتے ہیں۔

Root: ق ر ر

كُلّٚ فِـى كِتَٟبٛ مُّبِيـنٛ .11:06٦

  • Every one of them is recorded in a book; its characteristic is that it is explicitly explicativeconveyor of information in succinct, individuated, distinct and crystallized manner. [11:06]

  • جانوروں کی دنیا کے متعلق ہر ایک بات ایک ایسی کتاب (ام الکتاب)میں مندرج ہے  جس کی خصوصیت یہ ہے  کہ اس میں ہر شئے کی الگ زمرہ بندی ہے۔(سورۃ ھودؐ۔۶)

وَهُوَ ٱلَّذِى خَلَق ٱلسَّمَٟوَٟتِ وَٱلۡأَرْضَ فِـى سِتَّةِ أَيَّامٛ

  • Moreover, He the Exalted is the One Who created the Skies and the Earth in a time duration of six days [time reckoned in outside this/your universe].

  • اوروہی جناب  ہیں جنہوں نے  سات آسمانوں اور زمین کو تخلیق فرمایا ہے،اس کائنات کے باہر کے وقت کے شمار سے چھ دنوں میں۔

   Man and the Universe - Why is the Universe the way it is?

وَكَانَ عَـرْشُهُۥ عَلَـى ٱلْمَآءِ

  • -- And His Throne, the Seat of Supreme Sovereignty, is ever located above the Water --.

  • ۔۔اور ان جناب کا عرش/یکتا تخت اقتدارپانی کے ذخیرہ سے اوپر کے مقام پر ہے۔۔

Root: ع ر ش

لِيَبْلُوَكُمْ أَيُّكُـمْ أَحْسَنُ عَمَلٙاۗ

  • The purpose and consideration of this creative activity was that He the Exalted might expose, by subjecting to a test, as to who amongst you people is more appropriate-balanced-beautiful-moderate with regard to conduct, behaviour and actions.

  • اس تخلیق کا مقصد یہ ہے کہ وہ جناب تم لوگوں کو آزمائش میں مبتلا کر کے یہ ظاہر کر دیں کہ تم لوگوں میں سے کون بہترحسن و اعتدال کا حامل ہے ،بہترحسن عمل کے حوالے سے۔

وَلَئِن قُلْتَ إِنَّكُـم مَّبْعُوثُونَ مِنۢ بَعْدِ ٱلْمَوْتِ

  • And would you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] tell them: "It is a fact that you people will be resurrected after the death"

  • اور اگر آپ (ﷺ)نے کہا"یہ حقیقت ہے کہ تم لوگوں کو تمہاری موت کے بعد یقیناً از سر نو حیات دے کر اٹھایا جائے گا"

لَيَقُولَنَّ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوٓا۟ إِنْ هَـٟذَآ إِلَّا سِحْرٚ مُّبِيـنٚ .11:07٧

  • Those who have refused to believe in Allah the Exalted and Hereafter would certainly say: "This proposition is not but evidently illusory perception-hoax." [11:07]

  • تو وہ لوگ جنہوں نے اللہ تعالیٰ اور آخرت کو ماننے سے انکار کر دیا ہے  یقیناً کہیں گے "یہ تو  کچھ نہیں سوائے صریحاً فریب نظر/جھوٹےجھانسے کے"

Root: س ح ر

وَلَئِنْ أَخَّرْنَا عَنْـهُـمُ ٱلْعَذَابَ إِلَـىٰٓ أُمَّةٛ مَّعْدُودَةٛ لَّيَقُولُنَّ مَا يَحْبِسُهُۥٓۗ

  • Take note; if Our Majesty delayed the infliction of punishment from them towards a determined/counted period (respite period) they would certainly say: "What detains that infliction?"

أَ لَا يَوْمَ يَأْتِيـهِـمْ لَيْسَ مَصْرُوفٙا عَنْـهُـمْ

  • The fact is that the Day it comes to them it will not be averted from them.

وَحَاقَ بِـهِـم مَّا كَانُوا۟۟ بِهِۦ يَسْتَـهْزِءُونَ .11:08٨

  • And that hemmed them about which they consciously adopted a non serious jesting attitude keeping themselves playful with. [11:08]

وَلَئِنْ أَذَقْنَا ٱلْإِنسَٟنَ مِنَّا رَحْـمَةٙ ثُـمَّ نَزَعْنَٟهَا مِنْهُ

  • And once Our Majesty blessed the man to enjoy mercy from Our Grace; afterwards We wrested it away from him:

إِنَّهُۥ لَيَـُٔوسٚ كَفُورٚ .11:09٩

  • It is fact that he is certainly despairing and intensely ungrateful. [11:09]

وَلَئِنْ أَذَقْنَٟهُ نَعْمَآءَ بَعْدَ ضَرَّآءَ مَسَّتْهُ لَيَقُولَنَّ ذَهَبَ ٱلسَّيِّـَٔاتُ عَنِّىٓۚ

  • And if We would have let him taste affluence and pleasantness after the affliction which had affected him, he will certainly say: "Bad fortunes and afflictions have gone away from me".

إِنَّهُۥ لَفَرِحٚ فَخُورٌ .11:10١٠

  • Indeed he is surely an exulted boisterous boaster. [11:10]

إِلَّا ٱلَّذِينَ صَبَـرُوا۟ وَعَمِلُوا۟ ٱلصَّٟلِحَـٟتِ

  • The above mentioned psyche in divergent situations is generally of human beings, except those who remained coolly perseverant and performed deeds of righteousness [in affliction and affluence].

أُو۟لَـٟٓئِكَ لَـهُـم مَّغْفِـرَةٚ وَأَجْرٚ كَبِيـرٚ .11:11١١

  • They are the people [who qualified the test exposing their purity/sincerity]: forgiveness and magnificent reward is promised and is in wait for them. [11:11]

فَلَعَلَّكَ تَارِكُۢ بَعْضَ مَا يُوحَـىٰٓ إِلَيْكَ

  • Thereby, because of information about human psyche that in affluence he falls into exultation and pride [11:9-11], you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] might anticipate him as abandoner of some content of revelation which is verbally communicated to you.

وَضَآئِقُۢ بِهِۦ صَدْرُكَ

  • Take note, [We are aware] your chest feels constricted by the idea:

أَن يَقُولُوا۟ لَوْلَآ أُنزِلَ عَلَيْهِ كَنزٌ

  • That they the affluent elite might say to people: "Why treasures have not been sent to him;

أَوْ جَآءَ مَعَهُۥ مَلَكٌ

  • Or why an Angel has not come accompanying him [to act along with him as admonisher]".

إِنَّمَآ أَنتَ نَذِيرٚۚ

  • These propositions are not worth worrying since you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] have only the assignment to inform, awaken and alert people to become cautious, aware and alarmed

وَٱللَّهُ عَلَـىٰ كُلِّ شَـىْءٛ وَكِيلٌ .11:12١٢

  • And Allah the Exalted is upon every matter the Guardian, Protector, and Disposer. [11:12]

أَمْ يَقُولُونَ ٱفْتَـرَىٰهُۖ

  • O you the Messenger! Do they keep saying to people, "He: Muhammad [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] has drafted, compiled it (Qur’ān) with his own effort, perception, knowledge, understanding?"

قُلْ فَأْتُوا۟ بِعَشْـرِ سُوَرٛ مِّثْلِهِ مُفْتَـرَيَٟتٛ

  • You the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] ask them: "If you really suspect that it (Qur’ān) is personally authored by me, thereby, the best course to prove it is that you bring ten Suras: Segments/Chapters personally authored in semblance of it (Qur’ān).

وَٱدْعُوا۟ مَنِۦ ٱسْتَطَعْتُـم مِّن دُونِ ٱللَّهِ

  • And for the needful, you invite-get help of all your friends-helpers-lawyers you have access to other than Allah the Exalted

إِن كُنتُـمْ صَٟدِقِيـنَ .11:13١٣

  • Try it, if you were truthful in your assertion about its (Qur’ān) authorship." [11:13]

فَإِلَّمْ يَسْتَجِيبُوا۟ لَـكُـمْ

  • Thereat, if they have failed responding to you people

فَٱعْلَمُوٓا۟

  • Thereby, you people convincingly realize-understand:  

أَنَّمَآ أُنزِلَ بِعِلْمِ ٱللَّهِ

  • That it has compositely been sent with the knowledge of Allah the Exalted

وَأَن لَّآ إِلَـٟهَ إِلَّا هُوَۖ

  • And that realize it about miscellany of iela'aha: deities that are uncritically admired, adorned and worshipped; none of them is alive; none of them organizes, administers or sustains others except He the Alone Sustainer Lord.

فَهَلْ أَنتُـم مُّسْلِمُونَ .11:14١٤

  • Then, for this reason, do you people surrender to it?" [11:14]


مَن كَانَ يُرِيدُ ٱلْحَـيَوٰةَ ٱلدُّنْيَا وَزِينَتَـهَا

  • Whoever decisively seeks the worldly gains - treasures and its attractions:

نُوَفِّ إِلَيْـهِـمْ أَعْمَٟلَـهُـمْ فِيـهَا

  • Our Majesty would pay them fully for their actions therein (worldly life)

وَهُـمْ فِيـهَا لَا يُبْخَسُونَ .11:15١٥

  • Without letting them meet diminutive result of their effort therein. [11:15]

أُو۟لَـٟٓئِكَ ٱلَّذِينَ لَيْسَ لَـهُـمْ فِـى ٱلۡءَاخِـرَةِ إِلَّا ٱلنَّارُۖ

  • These are the people: Except the scorching Hell-Prison as their upshot in the Hereafter, nothing else is due for them.

وَحَبِطَ مَا صَنَعُوا۟ فِيـهَا

  • And that has become voided, weightless froth, destructive what they artfully fabricated therein (worldly life).

وَبَٟطِلٚ مَّا كَانُوا۟۟ يَعْمَلُونَ .11:16١٦

  • And it is void like the froth that fades away what they people kept doing.". [11:16]

أَفَمَن كَانَ عَلَـىٰ بَيِّنَةٛ مِّن رَّبِّهِۦ

  • Is then he who has been pursuing the lucid course revealed in the Book from his Sustainer Lord; [like the one who follows his own lusts and conjectures-47:14]

وَيَتْلُوهُ شَاهِدٚ مِّنْهُ

  • And the Witness-Messenger deputed by Him the Exalted recites from it (Qur’ān) word by word;

وَمِن قَبْلِهِۦ كِتَٟبُ مُوسَـىٰٓ إِمَامٙا وَرَحْـمَةٙۚ

  • And the Book of Mūsā [alai'his'slaam] was delivered in times before it (Qur’ān); that served as a guide and blessing for the posterity of Iesraa'eel [alai'his'slaam].

أُو۟لَـٟٓئِكَ يُؤْمِنُونَ بِهِۦۚ

  • Such people who have been pursuing the lucid course revealed in the Book from their Sustainer Lord believe in it (Qur’ān).

وَمَن يَكْـفُـرْ بِهِۦ مِنَ ٱلْأَحْزَابِ فَٱلنَّارُ مَوْعِدُهُۥۚ

  • And should a person, presently associating with any of the variously identified groups of people, refuses to accept and believe in it (Qur’ān), thereby, scorching hell-prison is the promised abode for him.

فَلَا تَكُ فِـى مِرْيَةٛ مِّنْهُۚ

  • Therefore, you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] should not render yourself worrywart by reading worrying content from it [you will not be questioned/held responsible for residents of Hell].

إِنَّهُ ٱلْحَقُّ مِن رَّبِّكَ

  • Indeed it (Qur’ān) is the Infallible Doctrine-Discourse to serve as admonition in easy to comprehend composition from the Sustainer Lord of you the Messenger [Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam]

وَلَـٟكِنَّ أَكْثَرَ ٱلنَّاسِ لَا يُؤْمِنُونَ .11:17١٧

  • However, fact remains that most of the people do not accept and believe in it. [11:17]

وَمَنْ أَظْلَمُ مِمَّنِ ٱفْتَـرَىٰ عَلَـى ٱللَّهِ كَذِبٙاۚ

  • Therefore, reflect who could be a greater evil monger-a distorter-creator of imbalances, disorder-over stepping than him who artfully conjectured a falsehood attributing to Allah the Exalted

أُو۟لَـٟٓئِكَ يُعْـرَضُونَ عَلَـىٰ رَبِّـهِـمْ

  • These fabricators of falsity are the people who will be presented before their Sustainer Lord

وَيَقُولُ ٱلْأَشْهَٟدُ هَٟٓـؤُلَآءِ ٱلَّذِينَ كَذَبُوا۟ عَلَـىٰ رَبِّـهِـمْۚ

  • And the witnesses would testify about them saying: "These are the people who conjectured false assertions attributing to their Sustainer Lord"

أَ لَا لَعْنَةُ ٱللَّهِ عَلَـى ٱلظَّـٟلِمِيـنَ .11:18١٨

  • Be mindful; the curse and condemnation of Allah the Exalted is incumbent upon the unjust evil mongers, distorters of facts: [11:18]

ٱلَّذِينَ يَصُدُّونَ عَن سَبِيلِ ٱللَّهِ وَيَبْغُونَـهَا عِوَجٙا

  • Who hinder and divert people off the High road of Allah the Exalted; and vehemently attempt to render it distracted and misaligned for people [by distortions with conjectural myths]

وَهُـم بِٱلۡۡۡءَا خِـرَةِ هُـمْ كَٟفِرُونَ .11:19١٩

  • And they in the heart of their heart are the rejecters of the Hereafter. [11:19]

أُو۟لَـٟٓئِكَ لَمْ يَكُونُوا۟ مُعْجِزِينَ فِـى ٱلۡأَرْضِ

  • These people [authors of false conjectures] did not become thwarters of the Book of Allah the Exalted in the Earth.

وَمَا كَانَ لَـهُـم مِّن دُونِ ٱللَّهِ مِنْ أَوْلِيَآءَۘ

  • Take note; And none of protectors is there for them other than Allah the Exalted.

يُضَٟعَفُ لَـهُـمُ ٱلْعَذَابُۚ

  • The punishment will be doubled for them.

مَا كَانُوا۟۟ يَسْتَطِيعُونَ ٱلسَّمْعَ

  • These people were not aspiring using the faculty of listening

وَمَا كَانُوا۟۟ يُبْصِرُونَ .11:20٢٠

  • And nor were they in habit of using the faculty of vision [11:20]

أُو۟لَـٟٓئِكَ ٱلَّذِينَ خَسِـرُوٓا۟ أَنفُسَهُـمْ

  • These are truly the people who have made their selves to suffer loss

وَضَلَّ عَنْـهُـم مَّا كَانُوا۟۟ يَفْـتَـرُونَ .11:21٢١

  • And that lost and vanished from them what they used to artfully fabricate. [11:21]

لَا جَرَمَ

  • There is absolutely no doubt

أَنَّـهُـمْ فِـى ٱلۡءَاخِـرَةِ هُـمُ ٱلۡأَخْسَـرُونَ .11:22٢٢

  • That they are who will certainly be the worst losers perishing in the Hereafter. [11:22]

إِنَّ ٱلَّذِينَ ءَامَنُوا۟ وَعَمِلُوا۟ ٱلصَّٟلِحَـٟتِ

  • Know the fact about those who have heartily believed in the Messenger [Muhammad Sal'lallaa'hoalaih'wa'salam] and Qur’ān and performed moderate righteous deeds

وَأَخْبَتُوٓا۟ إِلَـىٰ رَبِّـهِـمْ

  • And they surrendered, their freedom and will, affectionately before their Sustainer Lord

أُو۟لَـٟٓئِكَ أَصْحَـٟـبُ ٱلجَنَّةِۖ

  • They are the people who will be the residents-inmates of the Paradise.

هُـمْ فِيـهَا خَٟلِدُونَ .11:23٢٣

  • They will abide therein permanently. [11:23]

مَثَلُ ٱلْفَرِيقَيْـنِ كَٱلْأَعْمَىٰ وَٱلْأَصَـمِّ وَٱلْبَصِيـرِ وَٱلسَّمِيعِۚ

  • Example of two groups; one like the blind and the deaf; and the other of vision and the listener

هَلْ يَسْتَوِيَانِ مَثَلٙاۚ

  • Are they both render identical in public eye?

أَفَلَا تَذَكَّرُونَ .11:24٢٤

  • Why you answer not; Is it for reason that you people are not in habit of self reflecting? [11:24]


وَلَقَدْ أَرْسَلْنَا نُوحٙا إِلَـىٰ قَوْمِهِۦٓ

  • Know the history; Our Majesty had indeed deputed Noah [alai'his'slaam] as the Messenger towards his nation.

  • ۔قدیم تاریخ سے واقف ہو جاؤ؛ہم جناب نے نوح(علیہ السلام)کو ان کی  قوم کی جانب اپنا رسول بنایا تھا۔

إِنَّـى لَـكُـمْ نَذِيرٚ مُّبِيـنٌ .11:25٢٥

  • [He said, O my nation] "I am an Awakener, Admonisher, Warner manifesting for you people: [11:25]

أَن لَّا تَعْبُدُوٓا۟ إِلَّا ٱللَّهَۖ

  • That you people should not submit in subjection, subservience and allegiance but to Allah the Exalted.

  • کہ بنیادی فرمان یہ ہے  "تم لوگ اللہ تعالیٰ کے سوائے کسی کی بندگی اور عبادت نہیں کرو۔

إِ نِّـىٓ أَخَافُ عَلَيْكُـمْ عَذَابَ يَوْمٛ أَلِيـمٛ .11:26٢٦

  • I am apprehensive of punishment of a day of grievous hardship that might befall upon you people." [11:26]

  • ۔یہ حقیقت ہے کہ میں سراسیمہ اور فکرمند ہوں تم لوگوں پر ایک اندوہناک دن میں عذاب مسلط ہونے کے متعلق"۔

فَقَالَ ٱلْمَلَأُ ٱلَّذِينَ كَفَـرُوا۟ مِن قِوْمِهِۦ

  • Thereat, those of the ruling elite-chieftains of his nation who had refused to believe, responded:

  • ۔ان کی قوم میں سے  زیادہ اثر و رسوخ  رکھنے والے ان سرداروں نے  جنہوں نے انہیں رسول ماننے سے انکار کر دیا تھا جواب دیا:۔

Root: م ل ء

مَا نَرَىٰكَ إِلَّا بَشَـرٙا مِّثْلَنَا

  • "We do not see and acknowledge you but a human being equal of us

  • ۔ہم آپ کو ماسوائے ہمارے جیسا ہی ایک بشر ہونے کے کسی اور اہمیت کا حامل نہیں دیکھتے۔

وَمَا نَرَىٰكَ ٱتَّبَعَكَ إِلَّا ٱلَّذِينَ هُـمْ أَرَاذِلُنَا بَادِىَ ٱلرَّأْىِ

  • And we see you not that people have followed you except those who are our vilest-menials-riffraff, they are the men of superficial understanding

  • ۔اور ہم آپ کو نہیں دیکھتے سوائے اس حال میں ان لوگوں کے علاوہ کوئی آپ کے پیچھے شوق سے پیروی کرنے والا ہے سوائے ان کے جو بادی النظر میں ہمارے پست ترین طبقے سے تعلق رکھتے ہیں۔

Root: ر ذ ل

وَمَا نَرَىٰ لَـكُـمْ عَلَيْنَا مِن فَضْلِۭ بَلْ نَظُنُّكُـمْ كَـٟذِبِيـنَ .11:27٢٧

  • And we see not that you people have any distinction upon us, rather we consider you people as liars." [11:27]

  • ۔اور نہ ہم آپ کے لئے کسی منفرد عنایت کو دیکھتے ہیں جو ہم پر برتری اور محترم ہونے کا اظہار ہو۔ایسا کچھہ نہیں ہے بلکہ در حقیقت ہم تم لوگوں کو جھوٹا گمان کرتے ہیں"۔

قَالَ يٟقَوْمِ أَرَءَيْتُـمْ إِن كُنتُ عَلَـىٰ بَيِّنَةٛ مِّن رَّبِّـى

  • He (Noah [alai'his'slaam]) said, "O my nation! Have you given a thought that if I am on the standpoint of rational and logical reason-explicit fact [Aa'ya'at] revealed by my Sustainer Lord

  • انہوں(نوح علیہ السلام)نے کہا"اے میری قوم!کیا تم لوگوں نے یہ دیکھا ہے کہ اگر میں اپنے رب کی جانب سے عنایت کردہ صریحاً واضح اور متبین تصور پر کاربند ہوں۔

وَءَاتَىٰنِى رَحْـمَةٙ مِّنْ عِندِهِۦ

  • And He the Exalted has given me Blessing from His Grace

  • ۔اور انہوں نے مجھے رحمت سے نوازا ہے جو ان جناب کی جانب سے قلب کو منور کر دینے والی ہے۔

فَعُمِّيَتْ عَلَيْكُـمْ

  • Thereby, for reason of attention deficit disorder/not applying intellect under influence of vested interest, it has become obscured upon you.

  • ۔مگر چونکہ تم لوگ مفادات کو پیش نظر کرعدم توجہ سے دیکھ رہے ہو اس لئے وہ (رحمت)تم پر دھندلا گئی ہے۔

Root: ع م ى

أَنُلْزِمُكُـمُوهَا وَأَنتُـمْ لَـهَا كَٟرِهُونَ .11:28٢٨

  • Could we force its entry into brain/paste upon you people while you people are aversively reluctant for that? [11:28]

  • ۔کیا ہم اس درخشاں رحمت کو تمہارے قلب و ذہن پر بزور ڈاخل کر سکتے ہیں اس حال  میں کہ تم لوگ اس کے لئے کراہت محسوس کر رہے ہو۔

Root: ك ر ه;  ل ز م

وَيٟقَوْمِ لَآ أَسْـٔ​َلُـكُـمْ عَلَيْـهِ مَالٙاۖ

  • And, O my nation, I do not ask you for remuneration in kind upon it

  • ۔اور اے میری قوم!اس پر غور کرو میں اس (کتاب اللہ)کے اشاعت، تبلیغ اور تعلیم دینے کے لئے تم سے مال دینے کا سوال نہیں کرتا۔

إِنْ أَجْرِىَ إِلَّا عَلَـى ٱللَّهِۚ

  • Indeed my reward-remuneration is due upon none except Allah the Exalted

  • ۔اس لئے کہ میرا ان خدمات کا اجر صرف اور صرف اللہ تعالیٰ پر واجب الادا ہے۔

وَمَآ أَنَا۟ بِطَارِدِ ٱلَّذِينَ ءَامَنُوٓا۟

  • And neither I am going to drive away/abandon those who have since accepted/believed

  • ۔اور نہ میں ان لوگوں کو اپنے سے کسی بھی لمحے دور کروں گا جو دل کی شاد سے اللہ تعالیٰ کے ہدایت نامہ پر ایمان لے آئے ہیں۔

Root: ط ر د

إِنَّـهُـم مُّلَٟقُوا۟ رَبِّـهِـمْ

  • Indeed they feel as if they are at every moment in the Presence of their Sustainer Lord

  • یقیناً یہ لوگ سمجھتے ہیں کہ ہر لمحے اپنے رب کے حضور پیش  ہیں۔

وَلَـٟكِنِّىٓ أَرَىٰكُـمْ قَوْمٙا تَجْهَلُونَ .11:29٢٩

  • But the fact is that I f